آدھی رات گرلس ہاسٹل میں گھسے بدمعاش، طالبات کے ساتھ کی یہ حرکت

ہاسٹل میں انتظامیہ کے ذریعے سکیورٹی کے پختہ انتظام کے دعوؤں کی پول کھلی جب آدھی رات کو ہاسٹل میں کچھ شخص گھسنے کی کوشش کرنے لگے۔

Jul 31, 2019 04:26 PM IST | Updated on: Jul 31, 2019 04:26 PM IST
آدھی رات گرلس ہاسٹل میں گھسے بدمعاش، طالبات کے ساتھ کی یہ حرکت

علامتی تصویر

چھتیس گڑھ کے کانکیر ضلع میں قبائلی بہبود ڈپارٹمینٹ میں طالبات کی سکیورٹی کو لیکر سوال کھڑے ہورہے ہیں۔ ہاسٹل  میں انتظامیہ کے ذریعے سکیورٹی کے پختہ انتظام کے دعوؤں کی پول کھلی جب آدھی رات کو ہاسٹل میں کچھ شخص گھسنے کی کوشش کرنے لگے۔ ان شخص نے طالبات کے سارھ چھیڑ چھاڑ کی کوشش کی۔ اس پر طالبا ت نے شور مچایا۔ تب جاکر وہ بھاگے۔

معاملہ کانکیر کا ہے جہیاں نصف درجن شخص آفھی رات کو شہر کے بیچوں ۔بیچ بنے گرلس ہاسٹل کیمپس میں گھس گئے اور کھڑکی کا پلہ توڑ دیا۔ لوگوں نے اندر آنے کی کوشش کی لوگوں نے کھڑکی سےاپنے ہاتھ ڈال دئے تھے۔ طالبات نے انہیں دیکھ کر شور مچایا جس کے بعد وہ لوگ بھاگ گئے۔ اسدوران ان بدمعاشوں نے طالبات سے چھیڑ چھاڑ کی بھی کوشش کرتے رہے۔

Loading...

واقعے کی شکایت  قبائلی بہبود ڈپارٹمینٹ  نے پولیس سے کی ہے۔ اس کے بع پولیس جانچ میں مصروف ہوکر معاملے کی جانچ کر رہی ہے۔ ہاسٹل سپرنٹنڈنٹ سلیشا نشاد کا کہنا ہے کہ ہاسٹل میں سکیورٹی کیلئے صرف ایک گارڈ موجود رہتا ہے۔ ہاسٹل کی باؤنڈری دیواردو تین جگہ سے ٹوٹ گئی۔ ہاسٹل میں سی سی ٹی وی بھی نہیں لگے ہیں۔ اس کی جانکاری پہلے بھی افسران کو دی گئی ہے لیکن کوئی ٹھوس قدم اب تک نہیں اٹھایا گیا ہے۔ ایسے میں آئے دن اس طرح کے لوگ ہاسٹل کے پاس آتے رہتے ہیں۔

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com