ایک حادثہ: خوف کے وہ 28 گھنٹے اور موت کو شکست دیکر باہر نکلی ثناء

بچی مٹی سے دبی نہیں اس کیلئے ہاریزینٹل شیپ میں کھدائی کی گئی۔بچی کی نگرانی سی سی ٹی وی کیمرے سے کی گئی تو اسے آکسیجن کی سپلائی پائپ سے کی گئی۔

Aug 02, 2018 08:04 AM IST | Updated on: Aug 02, 2018 09:37 AM IST
ایک حادثہ: خوف کے وہ 28 گھنٹے اور موت کو شکست دیکر باہر نکلی ثناء

خوف کے وہ 28 گھنٹے جس میں ثناء نے لڑی موت سے جنگ

بہار کے مونگیر میں 28گھنٹے سے زیادہ چلے ریسکیوآپریشن کے بعد تین سال کی معصوم بچی ثناء کوبچا لیا گیا ہے۔ ایس ڈی آر ایف کی ٹیم کی جی توڑ محنت اور لوگوں کی دعاؤں سے ثنا جب بورویل سے باہر آئی تو نظارہ کافی عجیب تھا کہ تین سال کی بچی موت سے لڑ کر بورویل سے باہر محفوظ نکل آئی۔

جائے حادثہ کے باہر ایمبولینس کو تعینات کیا تھا جس میں ڈاکٹروں کی ٹیم کے ساتھ ثناء کی ماں موجود تھیں۔ بچی کو بورویل کے نکلنے کے بعد فورا صدر اسپتال لے جایا گیا۔ جہاں اس کی جانچ کی گئی۔ بچی نے بسکٹ کھایا ہے۔

Loading...

ثنا کی محفوظ بر آمدگی کیلئے ایس ڈی آر ایف کی ٹیم نے جنگی سطح پر کام کیا اور 45 فٹ کی کھدائی کر کے اسے محفوظ نکالا۔ بچی مٹی سے دبی نہیں اس کیلئے ہاریزینٹل شیپ میں کھدائی کی گئی۔ بچی کی نگرانی سی سی ٹی وی کیمرے سے کی گئی تو اسے آکسیجن کی سپلائی پائپ سے کی گئی۔ پورے ریسکیو آپریشن کے دوران محلے کے لوگوں سے لیکر انتظامیہ کے افسران تک جائے حادثہ پر موجود رہے۔

Loading...