آسام میں بی جے پی ایم ایل اے اور ان کے خاندان کو ملا ’’مشتبہ شہری ‘‘ ہونے کا نوٹس

آسام کے برکھولا اسمبلی علاقہ سے بی جے پی ایم ایل اے اور ان کےاہل وعیال کو غیر ملکی شہر یوں سے متعلق ٹریبونل نے نوٹس جاری کیا ہے ۔

May 19, 2018 09:59 AM IST | Updated on: May 19, 2018 10:29 AM IST
آسام میں بی جے پی ایم ایل اے اور ان کے خاندان کو ملا ’’مشتبہ شہری ‘‘ ہونے کا نوٹس

نوٹس کے مطابق کشور ناتھ اور ان کے خاندان کے ارکان سے کہا گیا ہے کہ وہ ٹربیونل جج کے سامنے شہریت ثابت کریں

آسام کے برکھولا اسمبلی علاقہ سے بی جے پی ایم ایل اے اور ان کےاہل وعیال کو غیر ملکی شہر یوں سے متعلق ٹریبونل نے نوٹس جاری کیا ہے ۔ ٹربیونل نے یہ نوٹس ’’ مشتبہ شہری ‘‘ ہونے کے شک کی بنیاد پر جاری کیا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ ٹریبونل نے بی جے پی ایم ایل اے کشور ناتھ، ان کی بیوی نیلم ناتھ ، ان کے چار بھائیوں اور ان کے ایک دیگر رشتہ دار کو نوٹس جاری کیا ہے ۔

نوٹس کے مطابق کشور ناتھ ان کے خاندان کے ارکان کو کہا گیا ہےکہ وہ ٹربیونل جج کے سامنے پیش ہو کر یہ ثابت کریں کہ وہ لوگ ہندوستان کے شہری ہیں۔ ایم ایل اے نے کہا کہ وہ اور ان کا خاندان ہندوستانی باشندہ ہیں اور وہ اپنے شہرییت ثابت کرنے کے لئے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے۔ زرایعہ کے مطابق ناتھ نے اسمبلی اسپیکر کو اس نوٹس سے واقف کرا دیا ہے ۔

Loading...

کشور نے کہا کہ وہ اور ان کا خاندان ہندوستانی شہری ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اہم کاغزات کے ساتھ کورٹ جائیں گے اور یہ ثابت کریں گے وہ ہندوستان کے شہری ہیں ۔ واضح رہے کہ انہوں نےکانگریس پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ کانگریس حکومت کے حکم پر ٹربیونل نے انہیں نوٹس بھجا ہے ۔

اس سے قبل ’’ شہری ترمیمی ایکٹ 2016 ‘‘  کے تحت کافی مخالفت ہو چکی ہے جس کے مطابق لوگوں کو لگتا ہے کہ یہ آسام سمجھوتے کے خلاف ہے جس میں تجویز کی گئی تھی کہ جو لوگ بھی 1971 کے بعد بانگلہ دیش سے ہندوستان آئیں ہیں انہیں واپس بھیج دیا جائے گا۔

 

Loading...