آرجے ڈی ممبرپارلیمنٹ کے میڈیکل کالج کے پراسپکٹس پرہندوستان کاغلط نقشہ شائع ہونے سے اٹھے سوال

کٹیہار میڈیکل کالج کے پراسپکٹس میں ہندوستان کا متنازعہ نقشہ شائع ہونے کے بعد معاملے کی جانچ شروع ہوگئی ہے جبکہ کالج انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ پرنٹنگ کی غلطی کی وجہ سے ہوگیا ہے۔

May 06, 2018 07:24 PM IST | Updated on: May 06, 2018 07:28 PM IST
آرجے ڈی ممبرپارلیمنٹ کے میڈیکل کالج کے پراسپکٹس پرہندوستان کاغلط نقشہ شائع ہونے سے اٹھے سوال

کٹیہار: بہار کے کٹیہار میڈیکل کالج کے پراسپکٹس میں ہندوستان کے نقشے میں چھیڑ چھاڑ کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ یہ کالج راشٹریہ جنتا دل (آرجے ڈی) کے ممبرپارلیمنٹ احمد اشفاق کریم کا ہے۔ معاملہ تیزی سے وائرل ہوتا ہوا دیکھ کراس کی جانچ کے لئے ایس ڈی او اور ایس ڈی پی او پوری ٹیم کے ساتھ میڈیکل کالج پہنچے۔ دراصل کٹیہار میڈیکل کالج انتظامیہ کی جانب سے طلبا وطالبات کو دیئے گئے پراسپکٹس میں کے صفحہ اول پر ہندوستان کا نقشہ ہے۔

اس میں پاک مقبوضہ کشمیر کا علاقہ نہیں دکھایا گیاہے۔ اس سے متعلق ایک ویڈیو وائرل ہوگیا ہے۔ اس معاملے میں کے ایم سی ایچ کے منتظم محمد پرویز شمس کا کہنا ہے کہ نئے سیشن کا کالج سے متعلق پراسپکٹس طلبا کورہنمائی کے لئے دیا گیا تھا۔ پراسپکٹس میں بھارت کا نقشہ بنایا گیا ہے۔

Loading...

انہوں نے کہاکہ پراسپکٹس تقسیم کے بعد انتظامیہ کو اطلاع ملی کہ پراسپکٹس میں شائع کیا گیا بھارت نقشہ کا صحیح نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ جب تک انتظامیہ کو غلطی کے بارے میں اطلاع ملی تھی، تب تک 8 پراسپکٹس طلبا کے درمیان تقسیم کئے جاچکے تھے۔ پرنٹنگ کی  غلطی کی وجہ سے ہندوستان کا غلط نقشہ شائع ہوگیاہے۔

اس معاملے کی اطلاع پر ضلع انتظامیہ کے حکم پر ایس ڈی او اور ایس ڈی پی او تقریباً ایک بجے کے ایم سی ایچ پہنچے اور کالج سے پوچھ تاچھ میں لگے ہوئے ہیں۔ ایس ڈی او نیرج کمار نے بتایا کہ معاملہ کی جانچ اور متعلقہ لوگوں سے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے اور پراسپکٹس کو ضبط کرلیا گیاہے۔

Loading...