ترنمول کانگریس کے وزیر نے پاک رپورٹر کو کولکتہ میں دکھایا 'منی پاکستان’، ہنگامہ

کولکتہ۔ بنگال حکومت کے وزیر فرہاد حکیم کا ایک بیان تنازعات کی زد میں آ گیا ہے۔

Apr 30, 2016 01:02 PM IST | Updated on: Apr 30, 2016 01:03 PM IST
ترنمول کانگریس کے وزیر نے پاک رپورٹر کو کولکتہ میں دکھایا 'منی پاکستان’، ہنگامہ

کولکتہ۔ بنگال حکومت کے وزیر فرہاد حکیم کا ایک بیان تنازعات کی زد میں آ گیا ہے۔ انہوں نے پاکستانی اخبار 'دی ڈان' سے بات چیت میں 24 پرگنہ ضلع کے اسمبلی حلقہ گارڈن ریچ کو 'منی پاکستان' کہہ ڈالا۔ ان کا یہ بیان اب سیاسی طوفان مچا رہا ہے۔

حکیم نے دی ڈان کی رپورٹر مليحہ حامد صدیقی سے گارڈن ریچ علاقے میں ریلی کے دوران کہا کہ آپ ہمارے ساتھ آئیے۔ ہم آپ کو کولکتہ کے منی پاکستان میں لے چلتے ہیں۔

Loading...

بعد میں اپنی صفائی میں حکیم نے کہا کہ آپ فرقہ وارانہ کشیدگی میں اضافہ کرنے کی کوشش نہ کریں۔ میں اس مسئلے پر زیادہ نہیں بولوں گا۔ اگر پی ایم مودی چار بار پاکستان جا سکتے ہیں اور اگر میں کسی کو منی پاکستان کہہ دیتا ہوں تو اس سے کیا فرق پڑتا ہے؟

مغربی بنگال بی جے پی انچارج سدھارتھ ناتھ سنگھ نے کہا کہ حکیم کا یہ بیان انتہائی بدقسمتی کی بات ہے۔ یہاں انتخابات چل رہے ہیں اور پاک اخبار ڈان میں خبر آئی ہے کہ رپورٹر ملیحہ حامد صدیقی بابی حکیم کے ساتھ دورہ کر رہی تھیں تو انہوں نے کہا آئیے میں آپ کو منی پاکستان دکھاتا ہوں۔ایسے شخص کو ہندوستان کی عوام سزا دے۔ بنگال کے عوام کو اس کا فیصلہ کرنا ہے۔ ٹی ایم سی اور بابی حکیم کو سزا دینی چاہئے۔

Loading...