میگھالیہ کے لئے انتخابی جنگ :مودی ، راجناتھ مہم کی قیادت کرسکتے ہیں

تریپورہ میں عنقریب انتخابی مہم کا پردہ گرنے والا ہے جہاں اتوار کو پولنگ ہوگی۔ بی جے پی کے انتخابی حکمت ساز رات دن اس کوشش میں لگے ہیں کہ کانگریس کی حکمرانی والی ریاست میگھالیہ میں پارٹی اقتدار میں آسکے دوسری طرف کانگریس بھی پوری طاقت سے اپنا اقتدار برقرار رکھنے کے لئے کوشاں ہے۔

Feb 16, 2018 02:37 PM IST | Updated on: Feb 16, 2018 02:37 PM IST
میگھالیہ کے لئے انتخابی جنگ :مودی ، راجناتھ مہم کی قیادت کرسکتے ہیں

تریپورا میں وزیر اعظم نریندر مودی کی پہلی ریلی

تورا۔(میگھالیہ)  تریپورہ میں عنقریب انتخابی مہم کا پردہ گرنے والا ہے جہاں اتوار کو پولنگ ہوگی۔ بی جے پی کے انتخابی حکمت ساز رات دن اس کوشش میں لگے ہیں کہ کانگریس کی حکمرانی والی ریاست میگھالیہ میں پارٹی اقتدار میں آسکے دوسری طرف کانگریس بھی پوری طاقت سے اپنا اقتدار برقرار رکھنے کے لئے کوشاں ہے۔

وزیراعظم نریندر مودی 21 یا 22 فروری کو گارو پہاڑیوں کےپھول باڑی میں انتخابی مہم چلائیں گے ۔ پھول باڑی مغربی گارو ہلز ضلع کی سلسلہ تحصیل میں واقع ہے۔

Loading...

بی جے پی کے اعلی رہنماؤں میں مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ بھی اہم سیاسی حلقوں میں انتخابی مہم چلا سکتے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ 19 فروری کو پہنچ سکتے ہیں۔

جنوبی تورا اسمبلی حلقے کی اہم سیٹ کے لئے بی جے پی نے بی اے سنگما کو نامزد کیا ہے جن کا مقابلہ دیگر امیدواروں کے علاوہ سابق مرکزی وزیر اے سنگما (این پی پی) سے ہے۔

بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ میگھالیہ میں دو انتخابی جلسوں سے خطاب کریں گے۔ وہ آئندہ جمعہ کو راجدھانی شیلانگ میں جلسہ کرسکتے ہیں ان کا دوسرا جلسہ جینتیہ پہاڑی کے جوائی علاقے میں ہوگا۔ شیلانگ میں ان کا جلسہ مالکی گراؤنڈ میں رکھا گیا ہے۔

تریپورہ میں انتخابی مہم آج ختم ہورہی ہے۔ ناگالینڈ اور میگھالیہ میں 27 فروری کو ووٹ ڈالے جائیں گے۔ووٹوں کی گنتی ناگالینڈ، میگھالیہ اور تریپورہ یعنی تینوں ریاستوں میں 3 مارچ میں ایک ساتھ شروع ہوگی۔

Loading...