بہارکےسابق وزیرکامیشور پاسوان نہیں رہے، وزیراعلیٰ نتیش کمار نے کیاافسوس کا اظہار

بہار کے سابق وزیر اور سابق رکن پارلیمان کامیشور پاسوان کا آج صبح طویل علالت کے بعدانتقال ہوگیا۔ پاسوان نے حال ہی میں دہلی سے علاج کے بعد پٹنہ واپس آئے تھے۔ ان کے کا خاندان میں ان کی بیوی، ایک بیٹا اور دو بیٹیاں ہیں۔

May 28, 2018 04:06 PM IST | Updated on: May 28, 2018 04:07 PM IST
بہارکےسابق وزیرکامیشور پاسوان نہیں رہے، وزیراعلیٰ نتیش کمار نے کیاافسوس کا اظہار

پٹنہ: بہار کے سابق وزیر اور سابق رکن پارلیمان کامیشور پاسوان کا آج صبح طویل علالت کے بعدانتقال ہوگیا۔  پاسوان نے حال ہی میں دہلی سے علاج کے بعد پٹنہ واپس آئے تھے۔ ان کے کا خاندان میں ان کی بیوی، ایک بیٹا اور دو بیٹیاں ہیں۔ان کی آخری رسم آج شام خواجے کلاں گھاٹ پر مکمل ریاستی اعزاز کے ساتھ ادا کی جائے گی ۔

زندگی کے آخری وقت تک بھارتیہ جنتا پارٹی سے منسلک رہنے والے کامیشور پاسوان 1972 میں صرف 31 سال کی عمر میں پہلی بار بھارتیہ جن سنگھ کے ٹکٹ پر فتوحہ (محفوظ) سیٹ سے جیت کر بہار اسمبلی پہنچے تھے۔ اس کے بعد وہ سال 1977 میں دوسری بار جنتا پارٹی کے ٹکٹ پر اسمبلی پہنچے اور سال 1979 تک بہار حکومت میں وزیر محنت رہے۔ بعد میں وہ 1990 سے 1996 تک راجیہ سبھا کا رکن رہے ۔ راجیہ سبھا کی مدت مکمل ہونے پر وہ نوادہ سے 1996 میں لوک سبھا کا انتخاب لڑے اور جیت درج کی۔ وہ شیڈول کاسٹ شیڈول ٹرائب( ایس ٹی۔ایس سی) کمیشن کے قومی نائب صدر تھے۔

بہارکےوزیراعلی نتیش کمارنےسابق وزیرکامیشورپاسوان کےانتقال پرگہرےرنج وغم کااظہارکیاہے۔ نتیش کمارنےآج اپنےتعزیتی پیغام میں کہاکہ مسٹرپاسوان ایک مشہورومعروف سیاستداں اورسماجی خدمت گارتھے۔ان کےانتقال سےسیاسی اورسماجی حلقوں میں ناقابل تلافی نقصان ہواہے۔

Loading...

وزیراعلی نےان کےبیٹےسےفون پربات کران کےساتھ اظہارہمدردی کیا۔ آنجہانی کامیشورپاسوان کی آخری رسومات سرکاری اعزازکےساتھ کی جائیں گی۔

وزیراعلی نےخداسےان کی روح کی سلامتی اور ان کےخاندانوں کودکھ و غم کی گھڑی میں صبر کرنے کے لئےہمت وحوصلہ کی دعاکی۔

Loading...