ٹی 20 ورلڈ کپ : کوہلی کی شاندار نصف سنچری ، ٹیم انڈیا نے پاکستان کو چھ وکٹوں سے دی پٹخنی

کولکتہ ۔ ہندستانی کرکٹ ٹیم اب سے کچھ دیر بعد کولکاتہ کے ایڈن گارڈن اسٹیڈیم میں ٹی -20 ورلڈ کپ کے گروپ -2 مقابلے میں روایتی حریف پاکستان سے بھڑے گی۔

Mar 19, 2016 06:38 PM IST | Updated on: Mar 19, 2016 11:32 PM IST
ٹی 20 ورلڈ کپ :  کوہلی کی شاندار نصف سنچری ، ٹیم انڈیا نے پاکستان کو چھ وکٹوں سے دی پٹخنی

کولکتہ ۔ ٹی ٹوینٹی ورلڈ کے ایڈن گارڈن میں  کوہلی کی شاندار بلے بازی کی بدولت ٹیم انڈیا نے پاکستان کو چھ وکٹوں سے شکست دے کر ورلڈ کپ میں پاکستان کے خلاف اپنی جیت کا ریکارڈ برقرار رکھا ۔ ایک مرتبہ تو ٹیم انڈیا مشکل میں آگئی تھی جب جلدی جلدی اس کے تین وکٹ گرگئے تھے ، مگر اس کے بعد کوہلی اور یوراج نے شاندار بلے بازی کی اور پاکستان 61 رنوں کی ساجھیداری نبھا کر ٹیم انڈیا کو مشکل سے نکالا اور ساتھ ہی ساتھ ٹیم انڈیا کو جیت کے قریب لادیا ۔ یوراج تو آؤٹ ہوگئے ، مگر کوہلی نے اپنی شاندار بلے بازی کا مظاہرہ جاری رکھا اور ٹیم کو جیت دلاکر ہی پویلین لوٹے ۔کوہلی نے 37 گیندوں پر شاندار بلے بازی کرتے ہوئے 55 رن کی اننگز کھیلی۔

جیت کیلئے 119 رن کے ہدف کا تعاقب کرنے اتری ٹیم انڈیا کو جلد ہی پہلا جھٹکا لگ گیا اور  روہت شرما 10 رن بناکر عامر کا شکار بن گئے۔ اس کے بعد لگاتار دو وکٹ ٹیم انڈیا نے کھودئے۔ پہلے شیکھر دھون سمیع کی گیند پر آؤٹ ہوئے اور اس کی اگلی ہی گیند پر سریش رینا بھی پویلین لوٹ گئے اور اس طرح ٹیم انڈیا  مشکل میں آگئی۔ شیکھر نے چھ رن بنائے جبکہ رینا کھاتہ کھولے بغیر ہی پویلین لوٹ گئے۔

Loading...

اس کے بعد یوراج اور کوہلی نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 61 رن کی  ساجھیداری نبھا کر ٹیم کو بھنور سے نکالا اور مستحکم پوزیشن میں پہنچادیا ۔ تاہم اس کے بعد یوراج سنگھ بڑا شاٹ لگانے کی کوشش میں آؤٹ ہوگئے ۔ اس کے دھونی کریز پر آئے اور انہوں نے ٹیم انڈیا کی جیت کو یقینی بنایا ۔ دھونی نے نو گیندوں پر 13 رن بنائے ۔

پاکستان کی طرف سے سمیع نے دو جبکہ عامر اور وہاب ریاض نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا ۔

اس سے قبل پہلے بلے بازی کرنے اتری پاکستانی ٹیم کی شروعات کافی دھیمی رہی ، تاہم اس کے حق میں صرف یہ بات گئی کہ پاور پلے کے پانچ اوورس میں اس نے کوئی وکٹ نہیں کھویا۔ پاکستان نے پاور پلے کے پانچ اوورس میں 24 رن بنائے ہیں۔

تاہم 38 کے اسکور پر پاکستان کو پہلا جھٹکا لگا ۔ شرجیل خان جو شروع سے ہی کچھ اچھا نہیں کھیل پارہا ہے سریش رینا کے شکار بن گئے۔ شرجیل نے 24 گیندوں پر 17 رن بنائے۔ شرجیل کے بعد شاہد آفریدی کریز پر آئےہیں۔

پاکستان کو 46 رن کے مجموعی اسکور پر دوسرا جھٹکا ۔ 28 گیندوں پر 25 رن بناکر جسپریت بمبرہ کا شکار ہوگئے۔18اوورس کے میچ کے پہلے 10 اوورس میں پاکستان نے 51 رن بنائے۔ پاکستانی کھلاڑیوں ہندوستانی اسپن گیند بازوں کو کھیلنے میں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

پاکستان کو 60 کے مجموعی اسکور پر تیسرا جھٹکا لگا ، ہاردک پانڈیا نے بوم بوم آفریدی کو پویلین کی راہ دکھائی ۔ آفریدی نے 14 گیندوں پر محض 8 رن بنائے۔ اس کے بعد ملک اور اکمل نے ٹیم کو سنبھالنے کی کوشش کی اور کچھ اچھے شارٹ لگائے ۔ تاہم اکمل زیادہ دیر تک ٹک نہیں سکے اور وہ 22 رن بناکر جڈیجہ کا شکار بنے ۔اس کے بعد اچھی بلے بازی کررہے شعیب ملک بھی جلد ہی پویلین لوٹ گئے ۔ ملک نے 16 گیندوں پر 26 رن بنائے ۔

اس کے بعد حفیظ اور سرفراز نے پاکستانی پاکستانی اننگز کو اختتام تک پہنچایا ۔ حفیظ نے پانچ اور سرفراز نے آٹھ رن بنائے۔ اس طرح سے پاکستان نے پانچ  وکٹ پر مقررہ 18 اوورس میں 118 رن بنائے اور اس طرح سے ہندوستان کو جیت کیلئے 119 رنوں ہدف دیا ہے۔

ایڈن گارڈن پر میچ سے قبل پاکستان کا قومی ترانہ شفاقت امانت علی نے گایا۔ جبکہ ہندوستان کا قومی ترانہ بالی ووڈ کے مہانائک امیتابھ بچن نے گایا۔

بارش کی وجہ سے تاخیر سے میچ شروع ہونے کی وجہ سے میچ کو 18 ، 18 اوورس کا کردیا گیا ہے۔ اس میچ میں ٹیم انڈیا نے کوئی بھی تبدیلی نہیں کی ہے ۔ پچھلی میچ کی ٹیم کے ساتھ ہی میدان پر اتری ہے۔ پاکستان نے اپنی ٹیم میں ایک تبدیلی کی ہے اور محمد سمیع کو جگہ دی ہے۔

اس سے قبل آج شام ایڈن گارڈن میں سابق عظیم کھلاڑیوں کو اعزازات سے نوازا گیا۔ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے عظیم کھلاڑی سچن تیندولکر اور وریندر سہواگ کو اعزاز سے نوازا ۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے بالی ووڈ کے میگا اسٹار امیتابھ بچن کو بھی اعزاز کو سے نوازا۔

ہندستان کے لیے یہ میچ کرو یا مرو کا مقابلہ ہے لیکن خراب موسم نے اس کی مشکلیں بڑھا دی ہیں۔ کولکتہ میں صبح سے چھائے کالے بادل شام کو برس پڑے۔ شام سے یہاں رک رک کر بارش ہو رہی ہے۔ محکمہ موسمیات نے بارش کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔

اپنے پہلے میچ میں نیوزی لینڈ کے خلاف شکست کا سامنا کرنے کے بعد ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل کی دوڑ میں بنے رہنے کے لئے ہندستانی ٹیم ہر حال میں جیت چاہے گی۔ پاکستانی ٹیم بھی کچھ ایسا ہی چاہے گی اور اس لحاظ سے دونوں ٹیموں کے لئے بہت کچھ داؤں پر ہو گا۔

indvspak2

 

اگر ٹیم انڈیا یہ میچ ہار جاتی ہے تو اسے اگلے دونوں میچوں میں جیت درج کرنی ہوگی اور اس کے علاوہ دوسری ٹیموں کے نتائج پر اسے منحصر رہنا ہوگا۔

Loading...