پرنسپل اور ٹیچر 9 مہینے تک کرتے رہے 5 ویں کلاس کی طالبہ کا ریپ، لیتے تھے سیلفیاں، حاملہ ہونے پر ہوا انکشاف

پولیس نے دونوں ملزمان کا جب موبائل فون کھنگالا تو دیکھ کر حیران رہ گئی۔ در اصل دونوں کے موبائل میں متاثرہ کے ساتھ ان کی کئی تصویریں اور سیلفیاں تھیں۔

Sep 20, 2018 01:03 PM IST | Updated on: Sep 20, 2018 03:14 PM IST
پرنسپل اور ٹیچر 9 مہینے تک کرتے رہے 5 ویں کلاس کی طالبہ کا ریپ، لیتے تھے سیلفیاں، حاملہ ہونے پر ہوا انکشاف

علامتی تصویر

پٹنہ کے ایک نجی اسکول میں پانچویں کلاس کی طالبہ سے ریپ کا ایک ایسا معاملہ سامنے آیا ہے جسے سن کر آپ کے ہوش اڑ جائیں گے ، بدن کانپنے لگے گا، آنکھیں نم ہو جائیں گی، زبان لرز اٹھے گی ، دل میں خوف طاری ہو جائے گا کیونکہ آپ کی بھی بچیاں ہوں گی۔ اور جب بات اسکول کے ٹیچر کی ہو کیونکہ ہر بچے کی پرورش اسکول سے شروع ہوتی ہے جسے ہم روک نہیں سکتے ، ہم اپنے بچوں کو اسکول جانے سے روک نہیں سکتے ۔ کیونکہ بچوں کا اسکول سے ماں باپ کے بعد دوسرا رشتہ ہوتا ہے۔ ماں کے بعد بچوں کی اولین تربیت گاہ اسکول ہی ہوتے ہیں۔ جب ایسی جگہ سے ایسی چیزیں سامنے آتی ہیں تو روح تو  کانپ اٹھےگی۔

آپ کو بتا دیں کہ ریپ کے اس سنسنی خیز معاملے کا انکشاف کیسے ہوا، پولیس نے اس معاملے میں کئے گئے دونوں ملزمان کے جب موبائل فون کو کھنگالا تو دیکھ کر حیران رہ گئی۔ در اصل دونوں ملزمان کے موبائل میں متاثرہ کے ساتھ ان کی کئی تصویریں اور سیلفیاں تھیں۔

Loading...

اس نجی اسکول میں 5 ویں کلاس میں پڑھنے والی طالبہ کے ساتھ 9 مہینے مسلسل ریپ کے اس واقعے سے بچوں میں خوف طاری ہو گیا ہے۔ پولیس نے ملزم پرنسپل اور ٹیچر کو گرفتار کر لیا ہے۔

معاملے کا انکشاف تب ہوا جب بچی کے جسم میں تبدیلی نظر آنے لگی۔ جب اس کےوالدین نے گھر میں ہی پریگنینسی کٹ سے جانچ کی تو اس کا ٹیسٹ پازیٹو نکلا۔ اس کے بعد متاثرہ کے والدین اسے ڈاکٹر کے پاس لیکر گئے جہاں انہیں بتایا گیا کہ بچی دو ماہ سے حاملہ ہے۔ اس کے بعد انہوں  نے پھلواری شریف تھانے میں کیس درج کروایا۔ اس معاملے میں پولیس سرکاری ڈاکٹر سے بچی کی میڈیکل جانچ کرانے کی تیاری میں ہے۔

یہ بھی پڑھیں : ہائی پروفائل جسم فروشی کے دھندے کا انکشاف ، وہاٹس ایپ پر ہوتی تھی کسٹمرس سے ڈیل

معاملے کی جانچ  میں مصروف سٹی ایس پی روندر کمار نے  کہا کہ ریپ کے اس معاملے میں تیز رفتار ٹرائل چلا کر ملزموں کو سزا دلائی جائے گی۔

متاثرہ کی ماں نے مہیلا تھانہ میں معاملہ درج کراتے ہوئے اسکول پرنسپل اور ایک ٹیچر کو نامزد ملزم بنایا ہے۔ پورے معاملے کی نگرانی پٹنہ ایس ایس پی کر رہے ہیں۔

ان پٹ سنجے کمار

Loading...