ایم جے اکبر نے مسلم پرسنل لا بورڈ پر سادھا نشانہ، کہا پرسنل لا بورڈ بن گیا ہے میل پرسنل لا بورڈ

کولکتہ۔ 'تین طلاق' کے معاملے پر آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کو نشانہ بناتے ہوئے وزیر مملکت برائے امور خارجہ ایم جے. اکبر نے ہفتہ کو الزام لگایا کہ یہ بورڈ 'میل پرسنل لاء بورڈ' بن گیا ہے جو صرف عورتوں پر ظلم و ستم میں دلچسپی رکھتا ہے۔

Dec 24, 2016 11:11 PM IST | Updated on: Dec 24, 2016 11:11 PM IST
ایم جے اکبر نے مسلم پرسنل لا بورڈ پر سادھا نشانہ، کہا پرسنل لا بورڈ بن گیا ہے میل پرسنل لا بورڈ

فائل فوٹو

کولکتہ۔ 'تین طلاق' کے معاملے پر آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کو نشانہ بناتے ہوئے وزیر مملکت برائے امور خارجہ ایم جے. اکبر نے ہفتہ کو الزام لگایا کہ یہ بورڈ 'میل پرسنل لاء بورڈ' بن گیا ہے جو صرف عورتوں پر ظلم و ستم میں دلچسپی رکھتا ہے۔ ' اکبر نے یہاں ایک پروگرام میں کہا، 'اسلام میں صنفی مساوات کی بات ہے نہ کہ جنسی ہراسانی کا۔ اسلام نے کبھی بھی خواتین پر ظلم و ستم کی بات نہیں کی ہے۔ مسلم پرسنل لاء بورڈ میل پرسنل لاء بورڈ بن گیا ہے۔ '

گزشتہ ماہ بورڈ کی طرف سے 'تین طلاق' کی حمایت میں منعقد کانفرنس پر اکبر نے کہا، 'بڑی تعداد میں لوگوں کے متحد ہونے سے حقیقت نہیں جھلکتی۔' کانفرنس میں کافی تعداد میں لوگ متحد ہوئے تھے۔ 'تین طلاق' کو ہٹانے کی اپیل کرتے ہوئے اکبر نے کہا، 'کبھی کبھی شادی ٹھیک سے نہیں چلتی تو طلاق کا انتظام ہے، لیکن مسلم کمیونٹی میں شادی کرتے ہوئے آپ کو عورت سے اجازت کی ضرورت ہوتی ہے۔ تو پھر طلاق کے دوران مرد ہی کیوں شرط طے کرے۔'

Loading...

نو بھارت ٹائمس کے مطابق، اکبر نے کہا کہ اگر ملک کو آگے بڑھنا ہے اور معیشت کو آگے بڑھنا ہے تو ہمیں خواتین کو ساتھ لے کر چلنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا، 'ہندوستان اور اس کی معیشت کبھی آگے نہیں بڑھے گی اگر آپ عورتوں کو پیچھے رکھنا چاہتے ہیں۔ خواتین ہماری آبادی کا تقریبا 50 فیصد ہیں اور ہم سب کو مل کر آگے بڑھنا ہوگا۔'

Loading...