پوار سے ناراض طارق انور نے لوک سبھا اور پارٹی کی رکنیت سے دیا استعفیٰ

طارق انور نے رافیل ڈیل پر نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے صدر شرد پوار سے عدم اتفاق کے بعد پارٹی اور لوک سبھا کی رکنیت سے استفیٰ دے دیا ہے۔

Sep 28, 2018 12:03 PM IST | Updated on: Sep 28, 2018 12:16 PM IST
پوار سے ناراض طارق انور نے لوک سبھا اور پارٹی کی رکنیت سے دیا استعفیٰ

لوک سبھا کے رکن طارق انور

لوک سبھا کے رکن طارق انور نے پارلیمنٹ اور نیشنلسٹ کانگریس پارٹی سے استعفی دے دیا ہے۔ انہوں نے رافیل ڈیل پر نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے صدر شرد پوار سے عدم اتفاق کے بعد یہ فیصلہ کیا ہے۔

غور طلب ہے کہ گزشتہ روز شرد پوار نے رافیل ڈیل پر نریندر مودی کا دفاع کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی منشا پر شک نہیں کیا جا سکتا۔ اس سے حزب اختلاف کے اتحاد پر ایک گہرا سوال اٹھ گیا ہے۔ ایک طرح سے پوار کے اس بیان نے کانگریس صدر راہل گاندھی کے دعوووں کی بھی ہوا نکال دی ہے۔

Loading...

پوار ملک کے سابق وزیر دفاع ہیں اور حزب اختلاف کے اہم رہنما بھی ہیں۔ لہذا ان کا بیان بہت اہم ہے۔ انہوں نے ایک مراٹھی نیوز چینل کو دئیے ایک انٹرویو میں رافیل سودے کو لے کر کانگریس کی جانچ کی مانگ پر سوال اٹھائے تھے۔ انہوں نے کہا تھا کہ کانگریس کی جانب سے عوام کو تکنیکی معلومات فراہم کرانے کا مطالبہ ناقابل فہم ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ جنگی طیارہ رافیل کی قیمتوں کا انکشاف کرنے سے حکومت کو کوئی حرج نہیں ہے کیونکہ اس سے کوئی خطرہ نہیں ہوتا ہے۔

Loading...