مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مجلس عاملہ جمیل منظر نے ایم جے اکبر کے بیان کی مذمت کی

کلکتہ۔ آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مجلس عاملہ جمیل منظر نے مسلم پرسنل لا کے سلسلے میں دئے گئے وزیر مملکت امور خارجہ ایم جے اکبر کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے دعوی کیا کہ بی جے پی کے لیڈران کی مسلمانوں کے خلاف زہر اگلنے کی پرانی عادت رہی ہے۔

Dec 26, 2016 09:31 AM IST | Updated on: Dec 26, 2016 09:31 AM IST
مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مجلس عاملہ جمیل منظر نے ایم جے اکبر کے بیان کی مذمت کی

کلکتہ۔  آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے رکن مجلس عاملہ جمیل منظر نے مسلم پرسنل لا کے سلسلے میں دئے گئے وزیر مملکت امور خارجہ ایم جے اکبر کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے دعوی کیا کہ بی جے پی کے لیڈران کی مسلمانوں کے خلاف زہر اگلنے کی پرانی عادت رہی ہے اور اس میں وہ بھی شامل ہوگئے ہیں۔ انہوں نے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے تعلق سے جو بیان دیا ہے اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ بی جے پی کے خیمے میں اجلاس کولکاتا کی زبردست کامیابی نے ہلچل مچا دی ہے اور انہیں اپنے پاؤں تلے زمین سرکتی نظر آرہی ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ مسلمانوں کے صبر کا امتحان لینے کی کوشش نہ کریں اور ان کے لئے ضروری ہے کہ وہ فی الفور اپنے اس متنازع فیہہ اور قابل مذمت بیان کوواپس لیں اور پوری امت مسلمہ سے غیر مشروط معافی مانگیں ۔

مسلم پرسنل لابورڈ کا قیام ان ہی جیسے عوامل سے نبرد آزما ہونے کے لئے وجود میں آیا ہے اورہم اسلامی شریعت میں کسی کی بھی بے جا دخل اندازی برداشت نہیں کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ شاید ایم جے اکبر کو معلوم نہیں کہ مسلم خواتین بھی بورڈ کے ساتھ ہیں اور ان کی پوری حمایت بورڈ کو حاصل ہے۔

واضح رہے کہ ایم جے اکبر نے مسلم پرسنل لا بورڈ کو مردوں کا بورڈ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’’ یہ بورڈ مردوں کی اجارہ داری میں تبدیل ہو چکا ہے جس کا مقصد خواتین کو دبانا ہے اور انہوں نے اس کے ساتھ ہی ساتھ طلاق ثلاثہ پر بھی اپنی زبان کھولی اور کہاکہ ۲۰ نومبر کو مسلم پرسنل لا بورڈ کے اجلاس کولکاتا میں جہاں لاکھوں لوگ شریک ہوئے تھے وہیں بورڈ نے طلاق ثلاثہ کی حمایت کی اور یہ بھی کہا کہ دنیا کی کوئی بھی طاقت اسلامی شریعت میں دخل اندازی کی ہمت نہیں کر سکتی ہے۔ ایم جے اکبر نے کہاکہ یہ خواتین کے ساتھ سراسر ظلم ہے ‘‘۔

Loading...

Loading...