بہارحکومت مدارس میں بھی مہیا کرائے گی بنیادی سہولیات، آرجے ڈی نے خیرمقدم کرتے ہوئے کہا عمل آوری ضروری

مدرسہ مستحکم منصوبہ کے تحت مدرسہ بورڈ سے منظور شدہ مدرسوں کو انفراسٹرکچرکی سہولت مہیا کی جائےگی۔

Aug 31, 2018 09:15 PM IST | Updated on: Aug 31, 2018 09:15 PM IST
بہارحکومت مدارس میں بھی مہیا کرائے گی بنیادی سہولیات، آرجے ڈی نے خیرمقدم کرتے ہوئے کہا عمل آوری ضروری

مدارس کے طالب علم: فائل فوٹو

بہار کی موجودہ حکومت مدرسوں کو بنیادی سہولت فراہم کرانے کے مقصد سے "مدرسہ مستحکم منصوبہ" کی شروعات کی ہے۔ اس منصوبہ کے تحت مدرسہ بورڈ سے منظور شدہ مدرسوں کو انفراسٹرکچرکی سہولت مہیا کی جائےگی۔

عمارت، ملٹی سیکٹرل ہال، ہاسٹل، لائبریری، باورچی خانہ اور بیت الخلا کی تعمیر کرائی جائےگی۔ مدرسہ اوراقلیتی اسکولوں کے معاملے پروزیرتعلیم کرشن نندن ورما نے نیوز 18 اردو سے بات چیت میں کہا کہ  حکومت مدرسوں میں کام کرنا چاہتی ہے، لیکن مدرسوں کی کمیٹی کے جھگڑے کے سبب کام میں رکاوٹ آجاتی ہے۔

Loading...

وزیر تعلیم کرشن نندن ورما نے بھروسہ دلاتے ہوئے کہا کہ  جلد ہی مدرسہ بورڈ کے چیئرمین کی تقرری کی جائے گی۔  مدرسہ بورڈ کو جلد ہی  مستقل چیرمین ملےگا۔ انہوں نے کہا کہ  اقلیتی اسکولوں کے اساتذہ کو وقت پرتنخواہ نیں ملنے کا ہمیں افسوس ہے۔ لیکن اب انہیں وقت پرتنخواہ ملنے کو ہم یقینی بنائیں گے۔

دوسری طرف مدارس میں بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے بیان کا آرجے ڈی کے سینئر لیڈرعبدالباری صدیقی نے خیرمقدم کیا ہے۔ صدیقی کے مطابق حکومت مدرسوں کے اساتذہ کو صرف تنخواہ دیتی ہے، باقی کام چندہ سے چلتا ہے۔

عبدالباری صدیقی نے کہا کہ  اب حکومت کو اس سلسلے میں سنجیدگی  سے کام کرنے کی ضرورت ہے۔ محض اعلان کرنے سے کام نہیں ہوگا۔ ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہا کہ  حکومت کو مدرسوں کے مسائل کو حل کرنے کی کوشش کرنی چاہئے۔

 

 محفوظ عالم کی رپورٹ

Loading...