உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CBSE امتحان کے نتائج میں تاخیر کا امکان، دس تا 15 دنوں میں نتائج کی توقع

    ذرائع کے مطابق سی بی ایس ای اب آسام جیسی ریاستوں سے جوابی پرچے حاصل کر رہا ہے

    ذرائع کے مطابق سی بی ایس ای اب آسام جیسی ریاستوں سے جوابی پرچے حاصل کر رہا ہے

    سی بی ایس ای کے ایک سینئر اہلکار نے کہا کہ جانچ کا عمل تقریباً مکمل ہو چکا ہے، مارکس اور تصدیق ابھی باقی ہے۔ ہم امید کر رہے ہیں کہ اگلے 10 دنوں میں یہ عمل مکمل ہو جائے گا۔ جیسے ہی ہم اسے مکمل کر لیں گے، ہم نتائج کا اعلان کرنے کے لیے تیار ہو جائیں گے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: سی بی ایس ای بورڈ امتحان کے نتائج (CBSE Board exam results) کا انتظار مزید طویل ہو سکتا ہے کیونکہ بورڈ کے ذریعہ نتائج کو منظر عام پر لانے کا عمل ابھی مکمل ہونا باقی ہے، جس میں تمام مراکز سے جوابات کی جانچ پڑتال باقی ہے۔ ابتدائی منصوبوں کے مطابق نتائج کا اعلان 10 جولائی کے آس پاس ہونا تھا لیکن سی بی ایس ای کے ذرائع نے بتایا کہ کچھ تاخیر ہو سکتی ہے۔

      جب کہ 31 لاکھ سے زیادہ (دسویں اور بارہویں جماعت) بورڈ کے امتحانات کے امیدوار اپنے نتائج کا انتظار کر رہے ہیں، خاص طور پر بارہویں جماعت کے طلباء جو مختلف انڈر گریجویٹ پروگراموں میں داخلہ کے خواہاں ہیں، سی بی ایس ای کے اہلکار نتائج کے اعلان کے لیے کسی بھی تاریخ پر فی الحال غیر وابستگی سے کام لیتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ریسٹورنٹ میں اب نہیں دینا ہوگا جبراً سروس چارج، CCPAنے جاری کی گائیڈ لائنس

      سی بی ایس ای کے ایک سینئر اہلکار نے کہا کہ جانچ کا عمل تقریباً مکمل ہو چکا ہے، مارکس اور تصدیق ابھی باقی ہے۔ ہم امید کر رہے ہیں کہ اگلے 10 دنوں میں یہ عمل مکمل ہو جائے گا۔ جیسے ہی ہم اسے مکمل کر لیں گے، ہم نتائج کا اعلان کرنے کے لیے تیار ہو جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Part-time PhD courses: کام کرنےوالے پیشہ ورافرادکیلئےپارٹ ٹائم پی ایچ ڈی کورسز، جانیےتفصیل

      ذرائع کے مطابق سی بی ایس ای اب آسام جیسی ریاستوں سے جوابی پرچے حاصل کر رہا ہے، جو سیلاب کی زد میں ہے۔ شمال مشرق جیسے علاقوں سے خاص طور پر آسام جہاں سیلاب ہے، جانچ کرنا ایک مسئلہ رہا ہے اور ہم جوابی پرچے لانے کے لیے ہیلی کاپٹر استعمال کر رہے ہیں۔ لہذا ابھی تاریخ دینا مشکل ہے کیونکہ ہم کچھ غیر یقینی صورتحال کے اندر کام کر رہے ہیں۔ لیکن ہم اگلے 10 تا 15 دنوں میں نتائج کا اعلان کرنے کے عمل کو مکمل کرنے کے لیے پرامید ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: