உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

     دسویں اور بارہویں کے نتائج جاری ہونے سے ٹھیک پہلے CBSE Board کا بڑا فیصلہ، 95 فیصد سے زیادہ نمبر نہیں دے پائیں گے اسکول۔۔۔

    CBSE Board Result 2021: نتائج جاری ہونے سے ٹھیک پہلے سی بی ایس ای بورڈ نے ایک بڑا فیصلہ لیا ہے۔

    CBSE Board Result 2021: نتائج جاری ہونے سے ٹھیک پہلے سی بی ایس ای بورڈ نے ایک بڑا فیصلہ لیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی. سی بی ایس ای (سنٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن) اس ہفتے میں کسی بھی وقت دسویں اور بارہویں کے نتائج جاری کرسکتا ہے لیکن نتائج جاری ہونے سے ٹھیک پہلے سی بی ایس ای بورڈ (CBSE Board Exam 2021) نے ایک بڑا فیصلہ لیتے ہوئے کہا ہے کہ سنٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کے تحت چلنے والا کوئی بھی اسکول من مانی طریقے سے دسویں اور بارہویں جماعت کے طلبا کو 95 فیصد سے زیادہ نمبر نہیں دے گا۔ اگر کوئی اسکول بورڈ کے اس اصول پر عمل نہیں کرتا ہے تو بورڈ خود ہی اس طرح کے طلبا کے نمبر کم کردے گا۔

      سی بی ایس ای CBSE کی نئی ہدایات کے مطابق بورڈ نے اسکولوں کی من مانی کو روکنے کے لئے یہ فیصلہ لیا ہے۔ سی بی ایس ای بورڈ CBSE Board نے کہا ہے کہ ریفرنس سال میں جن طلبا کی تعداد 95 فیصد سے زیادہ تھی اس سال بھی اتنے ہی طلبا اتنے نمبر مل سکتے ہیں۔ بتادیں کہ اگر ریفرنس سال reference year میں چار طلباء نے 95 فیصد سے زیادہ نمبر حاصل کیے تو اس سال بھی اسکول صرف چار طلباء کو ہی یہ نمبر دے سکتا ہے۔

      ان تین سالوں کو مانا جائے گا ریفرنس سال reference year:

      واضح ہو کہ 2020-21 سیشن کے لئے گزشتہ تین سالوں 2017-18, 18-19 اور 19-20 کو reference year مانا جائے گا۔ خاص بات یہ ہے کہ بورڈ کے ذریعہ ریفرنس سال کا قاعدہ صرف 96, 97, 98, 99 اور 100 نمبر دینے کے لئے valid ہوگا۔ اس کا 95 فیصد سے کم فیصد طلبا پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ ذرائع کے مطابق سی بی ایس ای بورڈ اس ہفتے 10 ویں اور 12 ویں کے نتائج جاری کرسکتا ہے۔ در اصل، کئی اسکولوں نے غلط طریقے سے 95 فیصد سے زیادہ نمبر دیئے تھے جس کی وجہ سے نتائج میں تاخیر ہورہی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: