ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

پہلے امتحان کے بعد ہی ہوگیا ماں کا انتقال، بیٹی نے لیا صبر تحمل سے کام، کردکھایا کچھ ایسا کہ آپ بھی ہوجائیں گے جذباتی

سی بی ایس ای کے نتائج میں کئی بیٹیوں اور بیٹوں نے اپنی محنت سے اپنے والدین اور قوم کا نام روشن کیا ہے۔ ایسی ہی ایک بیٹی کا نام ہباحیدر رضوی ہے جس نے زندگی کے بیحد ہی مشکل حالات میں بھی صبر کا دامن نہیں چھوڑا۔

  • Share this:
پہلے امتحان کے بعد ہی ہوگیا ماں کا انتقال، بیٹی نے لیا صبر تحمل سے کام، کردکھایا کچھ ایسا کہ آپ بھی ہوجائیں گے جذباتی
ہبا نے پیش کی خوبصورت مثال

نئی دہلی: سی بی ایس ای کے نتائج (CBSE Results )میں اس مرتبہ میرٹ لسٹ جاری نہیں کی گئی ہے لیکن کئی بیٹیوں اور بیٹوں نے اپنی محنت سے اپنے والدین اور قوم کا نام روشن کیا ہے۔ ایسی ہی ایک بیٹی کا نام ہباحیدر رضوی(Hiba Haider Rizwi )  ہے جس نے زندگی کے بیحد ہی مشکل حالات میں بھی صبر کا دامن نہیں چھوڑا اور خوب محنت کے ذریعہ 97فیصد نمبر ات حاصل کئے۔ بتادیں کہ ہبا حیدر رضوی دہلی کے اوکھلا علاقہ کے جوہری فارم میں رہتی ہیں اور سری نواس پوری کیمرج اسکول میں پڑھتی تھیں۔ فروری میں جب بارہویں کلاس کے امتحان شروع ہی ہوئے تھے ہبا کی والدہ رعنا شہاب کاانتقال ہوگیا۔

غور طلب ہے کہ ہباحیدر رضوی (Hiba Haider Rizwi )  نے سائیکلوجی میں99، انگریزی میں 94،سیاسیات میں 95،جغرافیہ میں 96، شوشلوجی میں 97نمبرحاصل کئے ہیں ۔ہبا کا کہنا ہے کہ مخالف حالات میں پڑوسیوں کی کافی مددملی۔

پہلے پرچہ کے بعد ہی ہوگیا تھا ماں کا انتقال

بارہویں کلاس کے امتحانات فروری کی 21تاریخ سے شروع ہوئے تھے ہبا حیدر رضوی نے اپنا پہلا پرچہ شوشلوجی مضمون کی صورت میں ہی دیا تھا لیکن دودن کے بعداچانک والدہ رعنا شہاب کو دل کا دورہ پڑا اور ان کا انتقال ہوگیا۔ ہبا بتاتی ہیں ان کے پڑوسیوں نے کافی زیادہ مدد کی ان کی مدد کے بغیر میں کچھ زیادہ نہیں کرپاتی۔ پہلے میں بہت زیادہ تعلیم کو لے کر سنجیدہ نہیں تھیں لیکن والد اور والدہ دونوں ہی مجھے پڑھائی پر توجہ دینے کی تلقین کرتے تھے۔ اب اتنا اچھا رزلٹ آیا ہے تو والدہ کی یاد زیادہ آتی ہے کہ اگر وہ ہوتیں تو کافی زیادہ خوش ہوتیں۔


ہبا بننا چاہتی ہیں لکچرار: کافی سنجیدہ نظر آنے والی ہبا کا کہنا ہے کہ ان کی والدہ چاہتی تھیں کہ وہ ٹیچر بنیں۔ والد حیدر رضوی بتاتے ہیں ہبا کو سائیکلوجی (physiology )  کافی زیادہ پسند ہے ۔اسی مضمون کو لے کر اعلی تعلیم حاصل کرنا چاہتی ہیں ۔ہبا کا کہنا ہے کہ وہ لکچرر بننا چاہتی ہیں کیونکہ والدہ کی یہی خواہش تھی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 14, 2020 03:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading