உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Agnipath recruitment: اگنی پتھ بھرتی اسکیم کا اعلان، 3 سرویس چیف بتائیں گے تفصیلات، آخر کیا ہے یہ؟

    Big News: اب فوج میں تین سے پانچ سال کیلئے بھرتی ہوسکتے ہیں نوجوان، جلد ہوگا اعلان : ذرائع

    Big News: اب فوج میں تین سے پانچ سال کیلئے بھرتی ہوسکتے ہیں نوجوان، جلد ہوگا اعلان : ذرائع

    مسلح افواج کے ابتدائی حسابات میں تنخواہ، الاؤنسز اور پنشن میں ہزاروں کروڑ کی بچت کا تخمینہ لگایا گیا تھا اگر مستقل طور پر بڑے پیمانے پر کافی تعداد میں فوجیوں کو شامل کیا جائے، تو اس پر بڑے پیمانے پر خرچ بھی آئے گا۔

    • Share this:
      مرکز کی طرف سے دفاعی فورسز کے لیے اگنی پتھ بھرتی اسکیم کا اعلان کرنے کا امکان ہے جس کے تحت فوجیوں کو چار سال کی مدت کے لیے بھرتی کیا جائے گا۔ منصوبے کے مطابق تینوں افواج کے سربراہان اس اسکیم کی تفصیلات کا اعلان کرنے کے لیے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کریں گے۔

      تینوں سروسز کے سربراہوں نے دو ہفتے قبل وزیر اعظم نریندر مودی کو سپاہیوں کی بھرتی کے لیے اگنی پتھ اسکیم کے بارے میں آگاہ کیا تھا جو مختصر مدت کے لیے افواج میں فوجیوں کی شمولیت کی راہ ہموار کرے گی۔

      بھرتی کے لیے کیچمنٹ ایریاز کو بھی نمایاں طور پر بڑھایا جا سکتا ہے۔

      چار سال کے اختتام پر تقریباً 80 فیصد فوجی ڈیوٹی سے فارغ ہو جائیں گے اور انہیں مزید روزگار کے مواقع کے لیے مسلح افواج سے مدد ملے گی۔ کئی کارپوریشنوں کو ایسے تربیت یافتہ اور نظم و ضبط والے نوجوانوں کے لیے ملازمتیں محفوظ کرنے میں بھی دلچسپی ہوگی جنہوں نے اپنی قوم کی خدمت کی ہے۔

      مزید ٖپڑھیں: World Blood Donor Day: ورلڈ بلڈ ڈونر ڈے کی کیا ہے اہمیت و تاریخ؟ جانیے مکمل تفصیلات

      مسلح افواج کے ابتدائی حسابات میں تنخواہ، الاؤنسز اور پنشن میں ہزاروں کروڑ کی بچت کا تخمینہ لگایا گیا تھا اگر مستقل طور پر بڑے پیمانے پر کافی تعداد میں فوجیوں کو شامل کیا جائے، تو اس پر بڑے پیمانے پر خرچ بھی آئے گا۔

      مزید پڑھیں: آئندہ 1.5 سالوں میں 10لاکھ بھرتیاں کرے گی مرکزی حکومت، PM مودی نے سبھی محکموں کو دیا حکم

      بھرتی کیے گئے نوجوانوں میں سے بہترین افراد کو بھی اسامیاں دستیاب ہونے کی صورت میں اپنی سروس جاری رکھنے کا موقع مل سکتا ہے۔ ڈی ایم اے نے ہندوستانی ماڈل تیار کرنے سے پہلے آٹھ ممالک میں اسی طرح کی بھرتی کے ماڈلز کا مطالعہ کیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: