ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

اسکولوں کو لیکر سی ایم یوگی کا بڑا فیصلہ! کلاس 1 سے 12ویں تک کے سبھی اسکول 30  اپریل تک بند

کورونا وائرس (Corona Infection) کے مہلک حالات کے پیش نظر یوگی سرکار (Yogi Government) نے ایک بار پھر کلاس 1 سے 12 تک کے تعلیمی اداروں کو 30 اپریل تک ریاست بھر میں بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

  • Share this:
اسکولوں کو لیکر سی ایم یوگی کا بڑا فیصلہ! کلاس 1 سے 12ویں تک کے سبھی اسکول 30  اپریل تک بند
کورونا وائرس (Corona Infection) کے مہلک حالات کے پیش نظر یوگی سرکار (Yogi Government) نے ایک بار پھر کلاس 1 سے 12 تک کے تعلیمی اداروں کو 30 اپریل تک ریاست بھر میں بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

لکھنؤ۔ صوبے میں کورونا وائرس (Corona Infection) کے مہلک حالات کے پیش نظر یوگی سرکار (Yogi Government) نے ایک بار پھر کلاس 1 سے 12 تک کے تعلیمی اداروں کو 30 اپریل تک ریاست بھر میں بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کو اجازت دی جارہی ہے کہ وہ کورونا کے طے شدہ پروٹوکول پر عمل کرکے صرف ضرورت پڑنے پر ہی اسٹاف کو بلائے جانے اور پہلے سے طے امتحانات کو کرانے کی چھوٹ حکو،ت کی جانب سے دی جا رہی ہے۔ مگر طلبا کی آمد پر مکمل پابندی ہوگی۔


یوپی میں کووڈ (COVID-19 in UP) کے بڑھتے معاملوں کے پیش نظت یوگی حکومت کی جانب سے ، اپریل تک تمام کلاسز 1 سے 12 تک کے کوچنگ سینٹرز ، تعلیمی اداروں ، نجی ، نجی بورڈوں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ گزشتہ حکم 15 اپریل تک تھا جو اب 15 دن کے لئے بڑھایا جارہا ہے۔ محکمہ تعلیم کے اعلی عہدیداروں کے مطابق، وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی ایک میٹنگ میں اس سلسلے میں فیصلہ لیا گیا ہے جس میں اسکولوں اور کالجوں کو بند کرنے کیلئے تاریخ 30 اپریل کی گئی ہے۔


شام تک جاری ہوں گے احکام

یہ حکم شام کو حکومت کی جانب سے جاری کر دیا جائے گا۔ اعلی سطح کے تعلیمی اداروں کو کھولنے پر بھی غور کیا جارہا ہے لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ اس میں بھی سخت پروٹوکول نافذ کیے جائیں گے۔ صرف پریکٹیکل و امتحانات اور دیگر ضروری کاموں کے لئے چھوٹ دی جائے گی۔ سنیچر کی رات کے آخر میں ضلع مجسٹریٹ لکھنؤ ابھیشیک پرکاش نے راجدھانی لکھنؤ کے اسکولوں میں انتظامی کام کے لئے اسٹاف اور آن لائن کلاسوں کے انعقاد کے لئے اساتذہ کی آمد کی اجازت دے دی ہے جس کے بارے میں لکھنؤ کے ڈسٹرکٹ اسکول انسپکٹر نے اس سلسلے میں سوشل میڈیا پر معلومات دی تھی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 11, 2021 01:15 PM IST