உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    انٹرپرینورس اور اسٹارٹ اپ کے لیے Jamia Millia Islamia میں ای۔ سیل کا قیام                        

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے انٹرپرینورشپ ایکو سسٹم کی باریکیوں کی تفہیم  اور مستقبل میں انٹرپرینیور بننے خواہاں طلبا کے لیے انٹرپرینورشپ سیل (ای۔سیل)قائم کیا ہے۔ای۔سیل جامعہ ملیہ اسلامیہ کا دفتری ٹوئیٹر ہینڈل@ecelljmiہے جو لنکڈن اور انسٹا گرام پر دستیاب ہے اور سرچ انجن میں @ecelljmiٹائپ کرنے پر وہاں رسائی مل سکتی ہے۔اس سیل کو طلبا چلا رہے ہیں۔

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے انٹرپرینورشپ ایکو سسٹم کی باریکیوں کی تفہیم  اور مستقبل میں انٹرپرینیور بننے خواہاں طلبا کے لیے انٹرپرینورشپ سیل (ای۔سیل)قائم کیا ہے۔ای۔سیل جامعہ ملیہ اسلامیہ کا دفتری ٹوئیٹر ہینڈل@ecelljmiہے جو لنکڈن اور انسٹا گرام پر دستیاب ہے اور سرچ انجن میں @ecelljmiٹائپ کرنے پر وہاں رسائی مل سکتی ہے۔اس سیل کو طلبا چلا رہے ہیں۔

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے انٹرپرینورشپ ایکو سسٹم کی باریکیوں کی تفہیم  اور مستقبل میں انٹرپرینیور بننے خواہاں طلبا کے لیے انٹرپرینورشپ سیل (ای۔سیل)قائم کیا ہے۔ای۔سیل جامعہ ملیہ اسلامیہ کا دفتری ٹوئیٹر ہینڈل@ecelljmiہے جو لنکڈن اور انسٹا گرام پر دستیاب ہے اور سرچ انجن میں @ecelljmiٹائپ کرنے پر وہاں رسائی مل سکتی ہے۔اس سیل کو طلبا چلا رہے ہیں۔

    • Share this:
    سینٹر فارانوویشن اینڈ انٹرپرینورشپ (سی آئی ای)جامعہ ملیہ اسلامیہ نے انٹرپرینورشپ ایکو سسٹم کی باریکیوں کو تفہیم کے اور مستقبل میں انٹرپرینیور بننے خواہاں طلبا کے لیے انٹرپرینورشپ سیل (ای۔سیل)قائم کیا ہے۔ ای۔سیل جامعہ ملیہ اسلامیہ کا دفتری ٹوئیٹر ہینڈل@ ecelljmiہے جو لنکڈان اور انسٹا گرام پر دستیاب ہے اور سرچ انجن میں @ecelljmiٹائپ کرنے پر وہاں رسائی مل سکتی ہے۔ اس سیل کو جامعہ کے طلبا چلارہے ہیں جس کا مقصد انٹرپرینرشپ اور اسٹارٹ اپ کے میدان کے ممتاز و نمایاں ماہرین اورتجربہ کار لوگوں سے مختلف اجلاس،ورکشاپ اور خصوصی لیکچر منعقد کرانا ہے۔سیل کا مقصد یونیورسٹی کے طلبا اور المنائی کو ہر ممکن مدد فراہم کرنا ہے تاکہ وہ تصور سے آگے کی منزل اسے پروان چڑھانے اور پھر ایک باقاعدہ اسٹارٹ اپ پروگرام میں تبدیل کرنے سے متعلق انھیں مددمہیا کرانا۔اسی سیل کا یہ بھی کام ہے کہ وہ سرمایہ کاروں کا ایک پول تیار کرے اور سی آئی ای جامعہ ملیہ اسلامیہ کی مدد سے طلبا کو وسائل متعین کرانے میں مدد دینے کے لیے صنعتوں کے ماہرین اور مینٹرس سے بھی رابطہ کیا جائے۔

    ای۔سیل کے تحت مندرجہ ذیل کلب بھی قائم کیے گئے ہیں:
    ۱۔پروگرام کلب،۲۔روبوٹکس کلب،۳۔انیمیشن اینڈ ویب ڈولپمنٹ کلب،۴۔بایوٹیک کلب،۵۔انٹرپرینورشپ کلب،۶۔فینانس کلب اور ۷۔رسرچ کلب۔
    سیل مناسب انداز میں کام کرے اس کے لیے متعدد ٹیمیں بھی تشکیل دی گئی ہیں جو مندرجہ بالا کلبوں کے کاموں میں اپنا تعاون پیش کریں گی۔ٹیموں کے نام اس طرح ہیں:۱۔پروگرام منصوبہ بندی ٹیم،۲۔آؤٹ ریچ اوینڈ کارپوریٹ ریلیشنز ٹیم،۳۔گرافک ڈیزائننگ ٹیم، ۴۔سوشل میڈیاٹیم اور ۵۔ایچ آر ٹیم۔
    سیل کا کام کاج کور ٹیم سنبھالے گی جس کی بناوٹ اس طرح ہوگی؛صدر،آیوش کمار،نائب صدر مدیحہ صدیقی اورجملہ کلبوں اورٹیموں کے صدورجن کا ابھی ذکر کیا۔
    سیل کی طرف سے مختلف ہیکاتھونس،ٹوائی کیتھونس،کوڈنگ چیلیجنز،ربوٹکس چیلنجیز اور انٹرپرینورکے خصوصی لیکچر بھی منعقد کرائے جائیں گے۔اس کے علاوہ سیل کا مصوبہ ہے کہ تصور،انٹیلک چوئل پراپرٹی رائٹس، پیٹینٹس،ڈیزائین تھنکنگ،فنڈنگ پچ میکننگ اور بزنس کنواس ماڈل وغیرہ جیسے موضوعات پر انٹرپرینوراور سرمایہ کاروں وغیرہ کے خصوصی لیکچر منعقدکرائے۔سیل اسٹارٹ اپس، انکیوبیشن سینٹر کے ساتھ ساتھ دیگر متعلقہ انٹرپرینیورل ایکوسسٹم کے لیے متعدد فیلڈ ٹرپ بھی کرائے گا۔

    سی ای آئی،جامعہ ملیہ اسلامیہ انٹرپرینورشپ اور انوویشن ایکو سسٹم قائم کرنے اور اسٹارٹ اپ کلچر کو صرف یونیورسٹی میں نہیں اور طلبا کو اس میں منہمک کرنے میں نہیں بلکہ کیمپس کے آس پاس کے علاقوں میں بھی اسی انداز فکر کو فروغ دینے کے لیے مجاز ہے۔اس طرح کی تہذیب کو فروغ دینے کے لیے مختلف انٹرپرینورشپ ڈولپمنٹ پروگرام اور مختصر مدتی کورس چلانے کا بھی سی آئی ای کا خیال ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: