உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اقلیتوں کے تعلیمی مسائل اور ہماری ذمہ داریاں، ان مسائل کو حل کرنے کیلئے اسٹیپ ان لائبریری کا قیام

    ماہر تعلیم اور معروف دانشور ایس احمد کہتے ہیں کہ اگر بچوں کو مطالعے کے لئے سازگار ماحول اور فضا فراہم کردی جائے تو ان کی تعلیمی نشو و نما بہتر اندا سے کی جاسکتی ہے اسی مقصد کے حصول کے لئے اسٹیپ ان لائبریری کے قیام کو یقینی بناتا جارہاہے

    ماہر تعلیم اور معروف دانشور ایس احمد کہتے ہیں کہ اگر بچوں کو مطالعے کے لئے سازگار ماحول اور فضا فراہم کردی جائے تو ان کی تعلیمی نشو و نما بہتر اندا سے کی جاسکتی ہے اسی مقصد کے حصول کے لئے اسٹیپ ان لائبریری کے قیام کو یقینی بناتا جارہاہے

    ماہر تعلیم اور معروف دانشور ایس احمد کہتے ہیں کہ اگر بچوں کو مطالعے کے لئے سازگار ماحول اور فضا فراہم کردی جائے تو ان کی تعلیمی نشو و نما بہتر اندا سے کی جاسکتی ہے اسی مقصد کے حصول کے لئے اسٹیپ ان لائبریری کے قیام کو یقینی بناتا جارہاہے

    • Share this:
    لکھنئو: بات جب تعلیمی اور معاشی مسائل کے حوالے سے کی جاتی ہے تو حساس طبیعت لوگ مایوس ہوجاتے ہیں اور جب ذکر اقلیتوں بالخصوص ملک کی سب سے بڑی اقلیت کے مسائل کا ہو تو یہ منظر نامہ  مایوس و افسردہ کرنے کے ساتھ ساتھ تشویش میں بھی مبتلا کردیتا ہے۔ یوں تو تعلیمی مسائل ملک کے ہر خطے ، ہر ریاست اور سبھی مقامات پر سر اٹھائے کھڑے ہیں لیکن زندگی اور مستقبل کی تلاش میں دیہات قصبات اور مضافات سے  کثیر آبادی والے بڑے شہروں کا رخ کرنے والے کوگوں نے ان شہروں میں بھی مسائل پیدا کردئے ہیں جو کبھی علم و ادب کی فراہمی جا مرکز تصور کیے جاتے تھے لکھنئو بھی ایسے ہی شہروں میں سے ایک شہر ہے، جہاں دوسری ریاستوں اور شہروں سے بے شمار طلباء و طالبات ہر سال حصولِ تعلیم کے لئے آتے ہیں ۔ بڑھتی مہنگائی اور کم ہوتے وسائل نے بچوں کے لئے دشواریاں پیدا کردی ہیں۔

    ان مسائل کو حل کرنے کے لئے سماج کے ذمہ دار لوگوں نے ایک خوبصورت  اور معنی خیز پیش رفت کی ہے “ اسٹیپ ان لائبریری “ کے نام سے مختلف کورسز کی کی تیاری اور کوچنگ کرنے والے بچوں کو اس لائبریری میں ایسا تعلیمی ماحول فراہم کیا جائے گا جو ان کے مطالعے اور مشاہدے کے ذوق کو جلا دے کر مستقبل کی راہیں ہموار کرنے میں معاون ثابت ہوسکے۔

    معروف دانشور اور ماہر تعلیم ایس احمد کہتے ہیں اسٹیپ ان لائبریری کی ضرورت کو شدت سے محسوس کیا جارہا تھا  کسی بھی ہدف کو حاصل کرنے کے لئے  دیگر وسائل کے ساتھ ماحول کی بڑی اہمیت ہے لہٰذا اب  لکھنئو کے حضرت گنج میں قائم کی جارہی اسٹیپ ان لائبریری سے اس ضمن میں اہم خدمات دی جاسکیں گی۔۔تعلیم اور کوچنگ کے میدان میں لمبا تجربہ رکھنے والے ڈاکٹر ایس احمد یہ بھی کہتے ہیں کہ یہاں بچوں کو پڑھائی کا ماحول تو ملے گا ہی ساتھ ہی ان کی بنیادی ضرورتوں کا بھی مکمل خیال رکھا جائے گا۔

    اسٹیپ ان لائبریری کے ڈائرکٹر  اطہر صدیقی عرف سنی کہتے ہیں طلبا و طالبات کو یہ سہولیات و مراعات بہت معمولی سی فیس کے عوض فراہم کی جائیں گی اور خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے والے طلباء اس سے بھی مستثنیٰ رہیں گے۔۔اگر مہا نگروں میں بچوں کو تعلیمی ماحول فراہم کردیا جائے اور تعلیم سے جڑی بنیادی ضروریات پوری کردی جائیں تو یقینی طور پر ان کے مستقبل کو بہتر بنایا جاسکتا ہے واضح رہے کہ ایس احمد گزشتہ کئی برس سے اقلیتی طبقے کے بچوں کو خاص طور سے NEET/IIT  کی تیاری کرنے والے طلبا و طالبات کو مفت کوچنگ فراہم کررہے ہیں اور مرکزی اقلیتی امور کی وزارت کے ذریعے ملنے والے وظائف و مراعات بھی ان تک پہنچا رہے ہیں ایس احمد کہتے ہیں کہ تعلیم کی فراہمی ہمارا مشن ہے اگر اسٹیپ ان لائبریری کے قیام کا تجربہ لکھنئو میں کامیاب ہوا تو دوسرے مہا نگروں اور کثیر اقلیتی آبادی والے اضلاع میں بھی آزمایا جائے گا۔اہم بات یہ ہے کہ پودے تب ہی سر سبز و شاداب ہوتے ہیں جب انہیں ان کی فطرت اور طبیعت کے مطابق ماحول اور فضا ملتی ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: