உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سی اے پی ایف بھرتی میں Agniveers کو ملے گی ترجیح ، جانئے Agnipath Scheme کے بارے میں سب کچھ 

    Agneepath Scheme in Army: وزارت نے کہا ہے کہ سینٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایفCAPF)) اور آسام رائفلز میں ہونے والی بھرتی میں چار سال کی سروس مکمل کر چلے ان اگنی ویروں Agniveers کو ترجیح دی جائے گی۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں تفصیلی منصوبہ بندی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔

    Agneepath Scheme in Army: وزارت نے کہا ہے کہ سینٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایفCAPF)) اور آسام رائفلز میں ہونے والی بھرتی میں چار سال کی سروس مکمل کر چلے ان اگنی ویروں Agniveers کو ترجیح دی جائے گی۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں تفصیلی منصوبہ بندی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔

    Agneepath Scheme in Army: وزارت نے کہا ہے کہ سینٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایفCAPF)) اور آسام رائفلز میں ہونے والی بھرتی میں چار سال کی سروس مکمل کر چلے ان اگنی ویروں Agniveers کو ترجیح دی جائے گی۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں تفصیلی منصوبہ بندی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔

    • Share this:
      Agnipath Scheme 2022 : مرکزی حکومت نے ہندوستان کی تینوں فوجوں میں بھرتی کے لیے اگنی پتھ اسکیم Agnipath Scheme کا اعلان کیا ہے۔ اس کے تحت نوجوانوں کو چار سال کے لیے ہندوستانی فوج میں بھرتی کیا جائے گا۔ اس حوالے سے لوگوں کے ذہنوں میں کئی سوالات ہیں۔ اس میں سب سے بڑا سوال یہ ہے کہ جوان چار سال تک خدمت کرنے کے بعد کیا کریں گے؟ مرکزی وزارت داخلہ نے اس حوالے سے ایک اہم اعلان کیا ہے۔ وزارت نے کہا ہے کہ سینٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایفCAPF)) اور آسام رائفلز میں ہونے والی بھرتی میں چار سال کی سروس مکمل کر چلے ان اگنی ویروں Agniveers کو ترجیح دی جائے گی۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں تفصیلی منصوبہ بندی کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔

      مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے ایک کے بعد ایک ٹویٹ کرکے یہ جانکاری دی ہے۔ انہوں نے اگنی پتھ اسکیم کو وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف سے لیا گیا ایک وژنری اور خوش آئند فیصلہ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ وزارت داخلہ نے سی اے پی ایف ایفCAPF اور آسام رائفلز کی بھرتی میں اگنی ویروں کو ترجیح دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ آئیے اگنی پتھ اسکیم کے بارے میں کچھ اہم سوالات کے جوابات جانتے ہیں۔

      Agnipath Scheme: چار سال کی نوکری، 30-40 ہزار روپے تنخواہ، اگنیوروں کو ملیں گی یہ سہولیات


      اگنی پتھ اسکیم کیا ہے؟
      تینوں سروسز میں فوجیوں کی تقرری چار سال کے لیے ہوگی۔
      اس کے تحت فوج میں سپاہی، بحریہ میں ملاح اور فضائیہ میں ائیر مین کی بھرتی ہوگی۔
      4 سال کی سروس کے بعد 25 فیصد فوجیوں کو مستقل تقرری ملے گی۔ آپ کو اس کے لیے درخواست دینا ہوگی۔

      اگنی پتھ اسکیم کن پوسٹوں پر بھرتی کی جائے گی؟
      اگنی پتھ اسکیم صرف افسر رینک سے نیچے کے لیے ہے۔
      افسران کی بھرتی اسی طرح کی جائے گی جس طرح چل رہی ہے۔
      شارٹ سروس کمیشن میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگی۔

      اگنی پتھ اسکیم کے لیے کیا اہلیت ہوگی؟
      اگنی پتھ اسکیم کے تحت، 17.5 سے 21 سال کے درمیان کے نوجوان درخواست دے سکیں گے۔
      تینوں افواج میں سپاہی کی سطح پر بھرتی کے قوانین پرانے ہی رہیں گے۔

      Agnipath Scheme Protest: نوادہ میں نوجوان طلبا کے مشتعل ہجوم نے BJP دفتر میں لگائی آگ

      اگنی ویروں کو کتنی ملے گی تنخواہ؟
      بھرتی کے پہلے سال 30 ہزار روپے ماہانہ ملیں گے۔
      دوسرے سال تنخواہ 33 ہزار اور تیسرے سال 36.5 ہزار ہوگی۔
      اگنی ویر کی تنخواہ سے 30 فیصد کاٹ کر اگنی ویر کور فنڈ میں جمع کرایا جائے گا۔ حکومت بھی اتنی ہی رقم جمع کرائے گی۔
      مطلب 30 ہزار تنخواہ ہے تو 21 ہزار ہاتھ آئیں گے۔
      اگنی ویروں جو چار سال کے بعد ڈیوٹی فری ہیں انہیں 11.71 لاکھ روپے کا سروس فنڈ پیکیج دیا جائے گا۔ یہ ٹیکس فری ہوگا۔
      ڈیوٹی سے فارغ ہونے والے اگنیوروں کو سکل سرٹیفکیٹ اور بینک لون کے ذریعے دوسری نوکری شروع کرنے میں مدد کی جائے گی۔

      Agneepath Scheme: بہارکے نوادہ۔جہان آباد طلبا کا ہنگامہ، غصے میں ٹرینوں کو بنایا نشانہ اور

      اگنی پتھ اسکیم کے لیے کب، کہاں اور کیسے درخواست دی جائے گی؟
      اگنی پتھ اسکیم کے تحت اگلے 90 دنوں میں 46000 بھرتیاں نکالیجائیں گی۔
      آرمی میں 40 ہزار، ایئرفورس میں 3500 اور نیوی میں 2500 اہلکار ہوں گے۔
      بھرتی کی معلومات فوج کی ویب سائٹ joinindianarmy.nic.in, joinindiannavy.gov.in, Careerindianairforce.cdac.in پر دستیاب ہوگی۔
      آل انڈیا تمام کلاس پر مبنی بھرتیاں ہوں گی۔
      بھرتیاں بھی بھرتی ریلیوں کے تحت کی جائیں گی۔
      اندراج enrollment کے لیے ایک آن لائن سینٹر نظام تیار کیا جائے گا۔
      تسلیم شدہ تکنیکی اداروں سے کیمپس انٹرویو کے ذریعے بھی بھرتیاں ہوں گی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: