உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jobs in Telangana: تلنگانہ میں ضلعی واری سطح پر کہاں کہاں ہیں خالی آسامیاں؟ جانیے مکمل تفصیلات

    Youtube Video

    تلنگانہ بجٹ 2022 کی پیشگی کے دوران بتایا گیا کہ 80,039 آسامیوں کو پُر کرنے اور 11,103 کنٹریکٹ پر کام کرنے والے اہلکاروں کو مستقل کرنے کا مالی اثر ریاستی حکومت پر سالانہ 7,300 کروڑ روپے ہوگا۔ تلنگانہ میں ضلعی واری سطح پر خالی آسامیوں کی تفصیلات یہ ہیں:

    • Share this:
      بے روزگار نوجوانوں کو ملازمت کی فراہمی کے لیے تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ (K Chandrashekhar Rao) نے آج یعنی 9 مارچ 2022 کو بڑے پیمانے پر سرکاری ملازمتوں کا اعلان کیا ہے۔ ان بے روزگار نوجوانوں کے لیے ریاستی قانون ساز اسمبلی میں بجٹ اجلاس 23-2022 کے دوارن ایک اہم اعلان کیا گیا۔ اس کا انکشاف انہوں نے منگل کو واناپارتھی میں ایک جلسہ عام میں کیا تھا۔

      تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے قوم کو تقسیم کرنے والی قوتوں کے خلاف اپنی لڑائی میں لوگوں سے تعاون بھی طلب کیا اور ملک میں امن، ہم آہنگی اور بھائی چارے کے تحفظ کے لیے اپنی جان بھی قربان کرنے کا عزم کیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے بیٹے کے طور پر میں نے ان تفرقہ انگیز طاقتوں کے خلاف لڑائی شروع کی ہے۔ ہمیں اس کینسر کو ریاست میں پھیلنے کی اجازت نہیں دینی چاہیے جو مختلف محاذوں پر تیار ہوئی ہے۔

      تلنگانہ میں ضلعی واری سطح پر خالی آسامیوں کی تفصیلات



















































































































































































      سلسلہ واری نمبر


      ضلع 

      خالی اسامیوں پر بھرتیوں کا اعلان 


      1حیدرآباد5,268
      2نظام آباد1,976
      3میڈچل ملکاجگری1,769
      4رنگاریڈی1,561
      5کریم نگر1,465
      6نالگنڈہ1,398
      7کاماریڈی1,340
      8کھمم1,340
      9گوتھ گوڑم1,316
      10ناگرکرنول1,257
      11سنگاریڈی1,243
      12محبوب نگر1,213
      13عادل آباد1,193
      14سدی پیٹ1,178
      15محبوب آباد1,172
      16ہنمکنڈہ1,157
      17میدک1,149
      18جگتیال1,063
      19منچریال1,025
      20یادگیری1,010
      21جیاشنکربھوپال پلی918
      22نرمل876
      23ورنگل842
      24آصف آباد825
      25پیدا پلی800
      26جنگاؤں760
      27نارائین پیٹ741
      28وقارآباد738
      29سوریہ پیٹ719
      30ملگ696
      31جوگولامباگدوال662
      32راجنا سرسلہ601
      33ونانپرتی556
       جملہ39,829

       

      وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ریاستی اسمبلی میں مختلف قبائل کے تحفظات کو 10 فیصد تک بڑھانے اور والیمیکی بویا برادری کو بھی ریاست میں درج فہرست قبائل میں شامل کرنے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرنے کے باوجود وزیر اعظم نریندر مودی نے قراردادوں کو زیر التوا رکھا ہے۔

      Jobs in Telangana: تلنگانہ میں 80,039 ملازمتوں کے لیے ہوگی بہت جلد بھرتیاں، جانیے مکمل تفصیلات



      تلنگانہ بجٹ 2022 کی پیشگی کے دوران بتایا گیا کہ 80,039 آسامیوں کو پُر کرنے اور 11,103 کنٹریکٹ پر کام کرنے والے اہلکاروں کو مستقل کرنے کا مالی اثر ریاستی حکومت پر سالانہ 7,300 کروڑ روپے ہوگا۔ بدھ کو اسمبلی میں کے ہنگامے کے درمیان ایک اعلان کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ براہ راست بھرتی کے لیے عمر کی حتمی حد میں 10 سال کی نرمی کی جائے گی، تاکہ زیادہ سے زیادہ بے روزگار افراد مجوزہ بھرتی میں مقابلہ کرنے کے اہل بن سکیں۔

      Table 1 : Group wise vacancies
































      Sl. No


      Groups

      Direct Recruitment Vacancies



      1.


      Group I

      503



      2.


      Group II

      582



      3.


      Group III

      1,373


      4.Group IV

      9,168



       

      Table 2 : Cadre wise vacancies
































      Sl. No


      Local Cadre

      Direct Recruitment Vacancies



      1.


      District

      39,829



      2.


      Zonal

      18,866



      3.


      Multi Zonal

      13,170



      4.


      Secretariat, HoDs, Universities

      8,174



      تلنگانہ کے وزیر اعلی کے سی آر نے اپنے خطبے میں کہا کہ تلنگانہ کے مقامی امیدواران کے ضلع منطقہ اور ہمہ منطقہ میں 95 فیصد تحفظات کے علاوہ کسی دیگر ضلع منطقہ اور محمد منطقہ میں 5 فیصد کھلے کوٹے کے لئے بھی مسابقت کر سکتے ہیں۔ مقامی امیدواران کے ضلع میں ضلعی کیڈر جائیدادوں اور ان کے مطلقے میں منطقہ واری گیندر پائیداروں کے لئے اہمیت کے حامل ہوں گے۔



      انھوں نے خطبے میں کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ جائیدادوں کے لئے بے روز گار نو جوانوں کی مسابقت کی بابت سابقہ نظام سے تقابل کیا جائے تو مواقع میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے۔ نہ منطقہ واری اور 33 ضلع واری کیڈری میں تقررات شروع کرنے کے سبب الوعہ جائیدادوں اور ریاست کے دور دراز علاقوں میں عملہ کے فقدان کے مسائل حل ہو جائیں گے۔

      ’نئی ریاست کی تکمیل ایسا عمل ہے جس میں علاقوں کی تقسیم کے ساتھ ساتھ ملازمین اور اثاثہ جات کی تقسیم بھی شامل ہے ۔ اس میں سرکاری اداروں کے علاوہ مختلف پیشہ وارانہ اداروں اور قانون تنظیم جدید آندھرا پردیش کے لو میں اور دسویں ٹیموں میں حوالہ دیئے گئے سرکاری کنٹرول کے دیگر اداروں کے الائوں اور ملازمین کی تقسیم بھی شامل ہے۔ اس عمل میں مرکزی حکومت کا رول شامل ہے‘ ۔

      کے سی آر نے کہا کہ ریاست آندھراپردیش کی یا اس سے پیدا کردہ غیر ضروری تنازعات اور مرکزی حکومت کی ہے ملی اور لاپرواہی سے مکمل تعطل کا شکار ہوا۔ تلنگانہ حکومت کی تشکیل کے بعد ہم نے تلنگانہ مرکوز منصوبہ اور پالیسیاں وضع کی ہیں۔ جنگانہ کے تقاضوں کے مطابق ہم نے کل انتظامی اصلاحات لائے مختلف محکمہ جات کی تنظیم نو اور احکام کے اقدامات کئے ۔ ہم نے آبپاشی زراعت تعلیم، صحت والیایت و یکی سر برای آپ پنچایت راج جیسے اہم ملالہ جات کو محکمہ جات کی تلکات کے تناظر میں صورت گری کیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: