உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تعلیمی قرض میں کونسے اخراجات ہیں شامل؟ کیا اس کے لیے بھی الگ سے قرض ملے گا؟

    سی آئی ایم اے اور سی پی اے کے ذریعے کرائے گئے کورسزبھی اس مںی شامل ہیں۔ shutterstock

    سی آئی ایم اے اور سی پی اے کے ذریعے کرائے گئے کورسزبھی اس مںی شامل ہیں۔ shutterstock

    تعلیمی قرض کے لیے کون سے کورسز اہل ہیں اس کا فیصلہ قرض دہندہ کرے گا۔ آپ نرسری سے شروع ہونے والی تعلیم کے لیے تعلیمی قرض حاصل کر سکتے ہیں۔ اعلیٰ تعلیم کے لیے بھی آپ کو تعلیمی قرض مل سکتا ہے۔ جس میں ان اخراجات کے لیے بھی رقم شامل ہے۔

    • Share this:
      تعلیمی قرض: طلبا کو ان کے تعلیمی خوابوں کو پورا کرنے کے لیے ہندوستان میں سرکردہ بینکوں کی طرف سے تعلیمی قرض کی پیشکش کی جاتی ہے۔ تعلیمی قرض کی شرح سود 6.75 فیصد سالانہ سے شروع ہوتی ہے۔ 15 سال تک کے قرض کی مدت کے ساتھ۔ ہندوستان اور بیرون ملک اعلیٰ تعلیم کے لیے تعلیمی قرضے پیش کیے جاتے ہیں۔

      تعلیمی قرض کے لیے کون سے کورسز اہل ہیں اس کا فیصلہ قرض دہندہ کرے گا۔ آپ نرسری سے شروع ہونے والی تعلیم کے لیے تعلیمی قرض حاصل کر سکتے ہیں۔ اعلیٰ تعلیم کے لیے بھی آپ کو تعلیمی قرض مل سکتا ہے۔

      بیرون ملک تعلیم حاصل کرنے والے طلبا کے لیے سفری اخراجات کی رقم گزر جاتی ہے۔
      بیرون ملک تعلیم حاصل کرنے والے طلبا کے لیے سفری اخراجات کی رقم گزر جاتی ہے۔


      تعلیمی قرض میں شامل اخراجات کی فہرست

      تعلیمی قرض میں شامل اخراجات کی فہرست میں ان اخراجات کو بھی شامل کیا گیا ہے:

      ٹیوشن فیس

      ہاسٹل فیس

      بیرون ملک تعلیم حاصل کرنے والے طلبا کے لیے سفری اخراجات کی رقم گزر جاتی ہے۔

      انشورنس پریمیم

      کتابیں/سامان/آلات/یونیفارم کی قیمت

      امتحان/لیبارٹری/لائبریری کی فیس

      کورس کی تکمیل کے لیے درکار کمپیوٹر/لیپ ٹاپ کی لاگت

      احتیاطی ڈپازٹ، بلڈنگ فنڈ/ریفنڈ ایبل ڈپازٹ جو ادارے کے بلوں/رسیدوں کے ذریعے تعاون یافتہ ہے۔

      کورس کو مکمل کرنے کے لیے درکار دیگر اخراجات جیسے کہ مطالعاتی دورے/مقالہ/پروجیکٹ ورک
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: