ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

ممبئی یونیورسٹی کے ایم اے اردو کورس میں اس سال سب سے زیادہ طلبہ و طالبات نے لیا داخلہ

تعلیمی سال 2020-21 میں ایم اے اردو میں داخلوں کا موازنہ انگریزی ، مراٹھی اور ہندی زبانوں کے شعبوں سے کیا جائے تو شعبہ اردو میں پی جی کورس میں انگریزی اور مراٹھی کے مقابلے تین گنا زیادہ ایڈمیشن ہوئے ہیں ۔

  • Share this:
ممبئی یونیورسٹی کے ایم اے اردو کورس میں اس سال سب سے زیادہ طلبہ و طالبات نے لیا داخلہ
ممبئی یونیورسٹی کے ایم اے اردو کورس میں اس سال سب سے زیادہ طلبہ و طالبات نے لیا داخلہ

ممبئی : اس سال ممبئی یونیورسٹی کے شعبہ اردو میں تمام لینگویج ڈپارٹمنٹ کے مقابلے سب سے زیادہ داخلہ کا ریکارڈ درج ہوا ہے ۔ کووڈ اور لاک ڈاون کے باوجود اردو ڈپارٹمنٹ نے قابل ستائش کارکردگی انجام دی ہے ۔ ممبئی یونیورسٹی کے تمام لینگویج ڈپارٹمنٹ میں ایم اے اردو کورس میں اس سال سب سے زیادہ داخلے ایم اے اردو میں ہوئے ہیں ۔ ممبئی یونیورسٹی کے شعبہ اردو کے صدر ڈاکٹر عبداللہ امتیاز نے نیوز 18 اردو نمائندے کوبتایا کہ شعبہ اردو ممبئی یونیورسٹی کے ریگولر ایم اے اردو کورس سال برائے 2020-21 میں سب سے زیادہ بلکہ ممبئی یونیورسٹی کے لینگویج ڈپارٹمنٹ میں سب سے زیادہ داخلے شعبۂ اردو میں ہوئے ہیں ۔ اس ڈپارٹمنٹ کے پاس 100 سیٹس ہیں ، لیکن اس سال 159 ایڈمیشن ہوئے ہیں ۔


واضح رہے کہ تعلیمی سال 2020-21 میں ایم اے اردو میں داخلوں کا موازنہ انگریزی ، مراٹھی اور ہندی زبانوں کے شعبوں سے کیا جائے تو شعبہ اردو میں پی جی کورس میں انگریزی اور مراٹھی کے مقابلے تین گنا زیادہ ایڈمیشن ہوئے ہیں ۔ جبکہ اس سال شعبہ ہندی میں پارٹ اول اور دوم کو ملاکر 93 ایڈمیشن کا اندراج عمل میں آیا ہے۔ جو کہ اردو کے مقابلے میں 65 سے بھی کم نششتوں پر مشتمل ہے۔ ممبئی یونیورسٹی کے لینگویج ڈپارٹمنٹ میں داخلوں کی یہ معلومات انٹرنل رپورٹ کی بنیاد پر ترتیب دی گئی ہے۔


ممبئی یونیورسٹی کے 14 لسانی شعبوں میں 83 پوسٹ کو منظوری ملی ہوئی ہے ، اس کے باوجود 60 فیصد آسامیاں خالی ہیں ۔ تین ڈپارٹمنٹ کے پاس مستقل فیکلٹی نہیں ہے۔ جبکہ ایم اے اردو میں سب سے زیادہ ایڈمیشن ہیں ۔ اس شعبہ میں بھی صرف ایک ہی مستقل فیکلٹی موجود ہے۔ شعبہ عربی و فارسی میں داخلوں کاریکارڈ بھی اطمینان بخش ہے ۔ اعداد و شمار کے لحاظ سے داخلوں کے معاملات میں ممبئی یونیورسٹی کے گجراتی اور سندھی لسانیاتی شعبوں کی حالت ابتر دکھائی دے رہی ہے۔  جبکہ اس کے برعکس عربی اور فارسی شعبوں نے بہتر مظاہرہ کیا ہے۔


شعبہ اردو کے صدر ڈاکٹر عبدالله امتیاز کی فعال کارکردگی اور ایم اے ، ایم فل اور پی ایچ ڈی کے رکے ہوئے نتائج کو جاری کرنے میں اہم کردار نبھانے کے سبب یونیورسٹی نے انہیں کو بورڈ آف اسٹڈیز اردو کا چیئرمن مقرر کیا ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 01, 2021 07:03 PM IST