ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی کا بڑا اعلان، 50 فیصد حاضری کے ساتھ 11ویں اور 12ویں کی کلاس شروع

اب پچیس جولائی سے گیارہویں اور بارہویں جماعت کی کلاسیس کا آغازہوگا۔لیکن اس دوران پچاس فیصد حاضری اور کورونا گائڈ لائن کو فالو کرنا ہوگا۔

  • Share this:

مدھیہ پردیش (madhya pradesh)  میں اسکول اور کالج کھولنے (school reopening) کو لیکر وزیر اعلی شیو راج سنگھ چوہان (Chief Minister Shivraj Singh Chouhan)  نے بڑا اعلان کیا ہے۔ اب پچیس جولائی سے گیارہویں اور بارہویں جماعت کی کلاسیس کا آغازہوگا۔لیکن اس دوران پچاس فیصد حاضری اور کورونا گائڈ لائن کو فالو کرنا ہوگا۔ اس دوران وزیر اعلی نہ اشارہ دیا کہ اگر حالات سازگار رہے تو جلد ہی دیگر کلاسیس کو شرو کرنے کی اجازت دی جاسکتی ہے۔


مدھیہ پردیش کے وزیر برائے اعلی تعلیم ڈاکٹر موہن یادو کہتے ہیں کہ تعلیمی سرگرمیوں کو بند نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ ہمیں تعلیمی اداروں کو کھولنا ہی ہوگا ۔ اس سلسلے میں وزیر اعلی شیوراج سنگھ کے ذریعہ تشکیل دی گئی وزرا کمیٹی نے اپنی رپورٹ سی ایم کے سامنے پیش کردی ہے ۔ یوجی اور پی جے کے امتحانات جون اور جولائی میں مکمل ہونے کے بعد اگست میں داخلہ کا سلسلہ مکمل کیا جائے گا اور ستمبر کے مہینے سے کووڈ ضابطہ کے بیچ تعلیمی سلسلہ شروع ہوگا ۔ کالجوں میں آف لائن ٹیچنگ شروع کرنے کے لئے کووڈ 19 کے ضابطہ کا پورا نفاذ ہوگا۔


انہوں نے بتایا کہ کالجوں میں پچاس فیصد طلبہ کو ہی داخلہ دیا جائے گا ۔ ساتھ ہی ساتھ ویکسین کے دونوں ڈوز لینے کے بعد ہی طلبہ کو داخل ہونے دیا جائے گا ۔ اسی کے ساتھ اساتذہ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کو بھی ویکسین لینے کے بعد ہی کالج کیمپس میں داخل ہونے کی اجازت ہوگی ۔ ہمارے لئے طلبہ کی زندگی بہت عزیز ہے اور کسی بھی طالب علم کی زندگی سے کھلواڑ نہیں ہونے دیں گے ۔


وہیں مدھیہ پردیش کے سینئر کانگریس لیڈر و سابق وزیر پی سی شرما کا کہنا ہے کہ مدھیہ پردیش کی آبادی کا ابھی پچیس فیصد افراد کو ہی ٹیکہ لگایا جاسکا ہے ۔ حکومت شور زیادہ مچاتی ہے کام کم کرتی ہے ۔ کمل ناتھ جی نے بھی ٹویٹ کر کے یہی سوال شیوراج سنگھ جی سے پوچھا ہے کہ ویکسینیشن کے مرحلے کو مکمل کئے بغیر کالجوں کو کھولنے کا فیصلہ کیسے کیا جاسکتا ہے ۔

مدھیہ پردیش میں کورونا شفایابی کی شرح 99 فیصد کو تجاوز کرگئی ہے ۔ کورونا انفیکشن کے معاملات میں مدھیہ پردیش ملک میں بتیسویں پائیدان پر پہنچ گیا ہے۔ ریاست میں کورونا ٹیکہ کاری مہم کو مزید فعال بنانے کے ساتھ حکومت نے اگست مہینے میں داخلے کے مرحلے کو مکمل کرنے کے ساتھ ستمبر ماہ میں کووڈ ضابطہ کے ساتھ کالجوں میں تعلیمی سلسلہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ وہیں ایم پی پی سی سی چیف و سابق سی ایم کمل ناتھ نے بغیر ویکسینیشن کے کالجوں کے کھولنے کے حکومت کے فیصلہ کو طلبہ کی زندگی کے ساتھ کھلواڑ سے تعبیر کیا ہے۔

 
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 14, 2021 08:36 PM IST