உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایم پی وقف بورڈ کمیٹی اوقاف عامہ اسکالرشپ کی شفافیت پر اٹھے سوال، حکومت سے جانچ کا مطالبہ

     مسلم سماجی تنظیموں نے وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ تقسیم کی جانے والی وقف اسکالرشپ کی شفافیت پر سوال اٹھاتے ہوئے وقف بورڈ کے ذمہ داران پر اسکالرشپ کی آڑمیں اپنوں اپنوں کو نوازنے کا الزام لگایا ہے ۔

    مسلم سماجی تنظیموں نے وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ تقسیم کی جانے والی وقف اسکالرشپ کی شفافیت پر سوال اٹھاتے ہوئے وقف بورڈ کے ذمہ داران پر اسکالرشپ کی آڑمیں اپنوں اپنوں کو نوازنے کا الزام لگایا ہے ۔

    مسلم سماجی تنظیموں نے وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ تقسیم کی جانے والی وقف اسکالرشپ کی شفافیت پر سوال اٹھاتے ہوئے وقف بورڈ کے ذمہ داران پر اسکالرشپ کی آڑمیں اپنوں اپنوں کو نوازنے کا الزام لگایا ہے ۔

    • Share this:
    مدھیہ پردیش وقف بورڈ کمیٹی (MP Waqf Board Committee) اوقاف عامہ کے ذریعہ دی جانے والی اسکالرشپ تنازعہ کا شکار ہوگئی ہے۔ مسلم سماجی تنظیموں نے وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ تقسیم کی جانے والی وقف اسکالرشپ کی شفافیت پر سوال اٹھاتے ہوئے وقف بورڈ کے ذمہ داران پر اسکالرشپ کی آڑمیں اپنوں اپنوں کو نوازنے کا الزام لگایا ہے ۔ سماجی تنظیموں کا الزام ہے کہ بورڈ کے ذریعہ بغیر نوٹیفکیشن کے اپنوں اپنوں کو اسکالرشپ کے نام پر فائدہ پہنچایا جا رہا ہے جبکہ بورڈ کا کہنا ہے کہ اس کے پاس اسکالرشپ کے لئےجو بھی طلبا درخواست کررہے ہیں انہیں اسکالرشپ دینے کا کام کیا جارہا ہے۔
    ایسا نہیں کہ ایم پی وقف بورڈ کی کارکردگی پہلی بار تنازعہ کا شکار ہوئی ہے بلکہ وقف بورڈ اور اس کی کمیٹیوں کا تنازعہ کے ساتھ چولی دامن کا ساتھ ہے۔نیا تنازعہ وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ طلبا کو دی جانے والی اسکالرشپ کا ہے ۔مائنارٹیز یونائیٹیڈ آرگنائزیشن مدھیہ پردیش کے سکریٹری عبدالنفیس کا کہنا ہے کہ وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ اسکالرشپ پہلے بھی دی جاتی رہی ہے لیکن یہ پہلا موقعہ ہے جب کمیٹی کے ذریعہ اسکالرشپ کو لیکر نہ تو اخبار میں کوئی اشتہار جاری کیا گیا ہے اور نہ ہی اس سلسلہ میں عوامی طور پر کوئی نوٹس جاری کیا گیاجس سے عوام کو معلوم ہو سکے کہ وقف بورڈ کی کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ اسکالرشپ دی جاری ہے۔کمیٹی اوقاف عامہ کے ذریعہ اتنی خاموش سے سب کچھ کیا جا رہا ہے کہ کسی کو کانوں کان خبر تک ہی نہیں ہے ۔اگر بورڈ انتظامیہ کی نیت ٹھیک تھی تو اسے اسکالرشپ کو لیکر عوامی پر سرکولر، اشتہار یا نوٹیفکیشن جاری کرنا چاہئے تھا مگر وقف بورڈ کی کمیٹی کے ذریعہ ایسا کچھ نہیں کیا گیا ہے۔وقف بورڈ کمیٹی اوقاف عامہ کی پوری کارکردگی شک کے گھیرے ہیں اور اس معاملے کولیکر ہم وزیر اقلیتی فلاح و بہبود سے ملاقات کرکے پورے معاملے کی جانچ کرانے کا مطالبہ کرینگے اور ایسے اگر جانچ نہیں ہوتی ہے تو اس معاملے کو لیکر عوام کی عدالت میں جائیں گے ۔ وقف بورڈ کی انکم پر غریب ،یتیم بچوں کا پہلا حق ہے ،ان کا حق امیروں میں پہچان کرکرکے تقسیم کیا جائے یہ برداشت نہیں کیا جا سکتا ہے ۔
    وہیں مدھیہ پردیش وقف بورڈ کے چیف ایکزئیٹوافسر محمد حشرالدین سماجی تنظیموں کے الزام کو سرے سے خارج کرتے ہیں وقف بورڈ سی ای او کا کہنا ہے کہ کمیٹی اپنے کسی کو نوازنے کا کام نہیں کرتی ہے لیکن جو بھی طلبا کمیٹی اوقاف عامہ کے پاس اسکالرشپ کے لئے درخواست دیتے ہیں انہیں اسکالرشپ جاری کی جاری ہے۔وقف بورڈ کے ذریعہ کورونا قہر میں پابندی کے ساتھ بیواؤں کو بھی پینشن جاری کی جاری ہے۔

    یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ دوہزار اٹھارہ سے مدھیہ پردیش وقف بورڈ کی تشکیل نہیں کی گئی ہے ۔ کمل ناتھ حکومت کے پندرہ ماہ میں بھی وقف بورڈ میں کمیٹی کی تشکیل نہیں کی گئی اور شیوراج سنگھ حکومت کے انیس ماہ میں بھی وقف بورڈ کی جانب کوئی توجہ نہیں دی گئی ہے ۔ بورڈ کے سارے کام سرکار افسران کے بھروسے ہیں اور افسران وہی کرتے ہیں جیسا ان کے آقا ان سے کہتے ہیں۔سماجی تنظیموں کے ذمہ داران بورڈ کی کارکردگی سے خوش نہیں ہیں اور وقف اسکالرشپ میں وہ بڑی بد عنوانی کی بات کر رہے ہیں ۔آنے والے دنوں میں یہ معاملہ مزید طول پکڑتا دکھائی دے رہا ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: