உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اردوزبان وادب کوپرائمری سطح پررائج کیا جانا بے حد ضروری: ڈاکٹر شیخ عقیل احمد

    قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائریکٹر ڈاکٹر شیخ عقیل احمد: فائل فوٹو

    قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائریکٹر ڈاکٹر شیخ عقیل احمد: فائل فوٹو

    قومی اردو کونسل کے نئے ڈائریکٹر نے کہا کہ اردوکی تعلیم و تدریس کا معقول انتظام جب تک نہیں ہوجاتا، تب تک اردو کی ترقی نہیں ہوسکتی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی: ابتدائی سطح پراردوکے معیارِتعلیم کو بلند کرنے پرزوردیتے ہو ئے قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائرکٹرڈاکٹرشیخ عقیل احمد نے کہا کہ جب تک اردو کو پرائمری سطح پررائج نہیں کیا جاتا اوراس کی تعلیم و تدریس کا معقول انتظام نہیں ہوجاتا، تب تک اردو کی ترقی نہیں ہوسکتی۔ یہ بات انہوں نے ایک خصوصی انٹرویومیں کہی۔

      ڈاکٹر عقیل احمد نے اس بات پر افسو س کا اظہار کہاکہ پرائمری سطح پراردو کی تعلیم نہ ہونے کی وجہ سے اسکولوں سے اردوغائب ہوتی جارہی ہے، جس کے لئے کہیں نہ کہیں ہمارا اردو معاشرہ بھی ذمہ دار ہے۔ انہوں نے مزید وضاحت کرتے ہو ئے کہا کہ اردو کی تنظیمیں اور ادارے بھی اس سمت میں کوئی مثبت قدم اٹھانے میں ناکام ہیں اوراردواساتذہ بھی اس تعلق سے سنجیدہ نہیں ہیں۔

      انہوں نے کہاکہ اردو کی پرائمری تعلیم کے ڈھانچے کو مضبوط کرنا میری ترجیحات میں شامل ہے۔ کونسل کے اغراض و مقاصد میں جہاں اردو زبان کا فروغ، ترویج واشاعت، سائنس اورٹکنالوجی سے متعلق اردو زبان میں معلومات کی فراہمی شامل ہے، وہیں حکومت ہند کو اردوزبان اوراس کی تعلیم سے متعلق معاملات میں مشورے دینا بھی ہے اورمیں کونسل کے ان تمام اغراض ومقاصد کی تکمیل کے ساتھ اردو زبان اوراس کی تعلیم پرزیادہ توجہ دینا چاہوں گا کہ یہی وہ پہلو ہے، جس پرسب سے کم توجہ دی گئی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:   اردوکے فروغ کے ساتھ مسلمانوں کے ہاتھ میں قرآن اورکمپیوٹرکے خواب کو شرمندہ تعبیرکریں گے: ڈاکٹرعقیل احمد

      ڈاکٹر شیخ عقیل نے یو این آئی اردو سروس سے خصوصی انٹرویویہ بھی کہا کہ کونسل پر کسی خاص گروہ، جماعت، طبقہ یا علاقے کی اجارہ داری نہیں ہوگی۔ کونسل ہندوستان کے پورے عوام کی ہے۔ جو بھی اردو مشن اوراس کے کاز سے وابستہ ہوگا اسے قومی اردو کونسل سے جوڑنے کی کوشش کی جائے گی۔ اب اس ادارے سے صرف اردو کے پروفیسروں کو نہیں بلکہ عام آدمی کو بھی فیض پہنچے گا، خاص طور پر حاشیائی علاقوں، گاؤں، دیہات میں رہنے والے اردو کے سچے خدمت گزاروں اورجاں نثاروں کی خدمات کا نہ صرف اعتراف کیا جائے گا بلکہ اردوزبان کے فروغ کی راہ میں حائل دشواریوں کو بھی دور کرنے کی کوشش کی جائے گی اور ادارے کی طرف سے انھیں مکمل تعاون کیا جائے گا۔

      یہ بھی پڑھیں:      ڈاکٹر شیخ عقیل احمد نے قومی اردو کونسل کے ڈائریکٹر کا چارج سنبھالا ، کہا : میں اردو کی ترقی کیلئے پابند عہد ہوں

      ڈاکٹر شیخ عقیل احمد نے کہا کہ جب اردو کے اساتذہ ہی اپنے بچوں کو اردو نہیں پڑھا رہے ہیں تو ایسے میں اردو کا فروغ کیسے ممکن ہے۔ اس سوال کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا یقیناًیہ صورتِ حال افسوسناک ہے۔ میری کوشش ہوگی کہ انگلش میڈیم اسکولوں میں بھی قومی اردو کونسل کی طرف سے اردو کے اساتذہ رکھے جائیں تاکہ اردو سے دلچسپی رکھنے والے طلبا کو کوئی دشواری نہ ہو۔

      یہ بھی پڑھیں:         کوئی اور نہیں ہم خود اردو کے دشمن ہیں: پروفیسر ارتضی کریم

       
      First published: