உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    NEET UG Topper:نیٹ یوجی ٹاپر تنیشکا نے بتایا کامیابی کا راز،جے ای ای مین بھی کیا تھا ٹاپ، ہریانہ سے ہے ناطہ

    NEET UG 2022 Topper تنیشکا اپنی فیملی کےساتھ۔ (تصویر: سوشل میڈیا)

    NEET UG 2022 Topper تنیشکا اپنی فیملی کےساتھ۔ (تصویر: سوشل میڈیا)

    NEET UG Topper: تنیشکا نے اپنی کامیابی کا راز بتاتے ہوئے کہا کہ نیٹ کی تیاری کے دوران کبھی ٹسٹ میں نمبرات کم آتے تھے تو والدین حوصلہ افزائی کرتے تھے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Haryana, India
    • Share this:
      NEET UG Topper: نیشنل ٹیسٹنگ ایجنسی نے بدھ کی دیر رات ملک کی سب سے بڑی میڈیکل انٹرنس امتحان نیٹ-یوجی 2022 کے نتائج جاری کردئیے ہیںَ دن بھر کے انتظار کے بعد دیر رات کو جاری نتائج میں راجستھان کے کوٹہ شہر کی طالبہ تنیشکا نے آل انڈیا رینک-1 حاصل کیا ہے۔ نیٹ ٹاپر تنیشکا دلی ایمس سے ایم بی بی ایس کرنے کی خواہش مند ہے اور آگے جا کر وہ کارڈیو، نیورو یا آنکالوجی میں اسپیشلائزیشن کرنا چاہتی ہے۔

      تنیشکا اصل میں ہریانہ کی رہنے والی ہے اور دو سال کوٹہ میں رہنے کے بعد نیٹ یو جی کی تیاری کر رہی تھی۔ تنیشکا نے 720 میں سے 715 نمبر حاصل کیے ہیں۔ نیٹ یوجی 2022 کا امتحان 17 جولائی کو ہوا تھا، جس میں 18 لاکھ 72 ہزار 342 طلباء نے رجسٹریشن کروائی تھی۔ نیٹ میں شرکت کرنے والے طلباء کی یہ اب تک کی سب سے زیادہ تعداد ہے۔

      NEET UG Topper:بچپن سے ہی ہونہار ہے تنیشکا، جے ای ای میں بھی کیا تھا ٹاپ
      نیٹ یو جی 2022 میں آل انڈیا ٹاپر بننے والی طالبہ تنیشکا بچپن سے ہی ہونہار ہے۔ 14 ستمبر 2005 کو ہریانہ کے نارنول میں پیدا ہوئی تنشیکا نے حال ہی میں اختتام پذیر ہوئی انجینئرنگ انٹرنس امتحان جے ای ای مین میں بھی 99.50 فیصدی پرسنٹائل کے ساتھ ٹاپرس میں جگہ بنائی تھی۔ تنشیکا کے والد کرشنا کمار سرکاری اسکول میں ٹیچر ہیں اور ماں سریتا کماری بھی سرکاری اسکول میں ہیں۔ تنشیکا نے اسی سال کلاس 12ویں میں 98.6 فیصدی نمبرات کلاس 10ویں میں 96.4 فیصدی نمبرات حاصل کیے تھے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      NEET UG Result 2022 5 Step: نیٹ یوجی نتائج 5 اسٹیپ سے کریں چیک، یہاں ملے گی پوری تفصیل

      یہ بھی پڑھیں:
      NCERTکاانکشاف:امتحان و نتائج کی فکر سے دباؤمیں رہتے ہیں 33فیصدی طلبہ،3.79لاکھ بچوں پر سروے

      تنیشکا نے اپنی کامیابی کا راز بتاتے ہوئے کہا کہ نیٹ کی تیاری کے دوران کبھی ٹسٹ میں نمبرات کم آتے تھے تو والدین حوصلہ افزائی کرتے تھے۔ انہوں نے کبھی مارکس کے لئے دباو نہیں ڈالا اور پازیٹیویٹی کے ساتھ تیاری کرتے رہنے کے لئے حوصلہ افزائی کی۔ میں کوچنگ کے علاوہ روزانہ 6-7 گھنٹے سیلف اسٹڈی کرتی تھی۔ نیٹ اسٹوڈنٹس آخری وقت میں نہیں، بلکہ پہلے دن سے ہی ہدف کی تیاری کریں۔ کلاس روم میں جیسے جیسے کورس آگے بڑھتا ہے تو آپ کو پچھلا پڑھا ہوا بھی بار بار ریویژن کرنا ہوگا۔ ٹاپ کوئز چھوٹے چھوٹے نوٹس بناسکتے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: