ہوم » نیوز » تعلیم و روزگار

یو پی بورڈ امتحانات : ساڑھے چار لاکھ بچوں نے چھوڑا امتحان: جانئے کیوں۔۔

اتنی بڑی تعداد میں امتحان چھوڑنے پر ماہرین تعلیم نے اپنی سخت تشویش کا اظہار کیا

  • Share this:
یو پی بورڈ امتحانات : ساڑھے چار لاکھ بچوں نے چھوڑا امتحان: جانئے کیوں۔۔
اتنی بڑی تعداد میں امتحان چھوڑنے پر ماہرین تعلیم نے اپنی سخت تشویش کا اظہار کیا

مشتاق عامر الہ آباد ۔ کورونا وائرس کے خطرات کے درمیان ہی ملک کے سب سے بڑے تعلیمی بورڈ ’’ یو پی مادھک شکچھا پریشد ‘‘ نے ہائی اسکول اور انٹر میڈیٹ کے امتحانات کے نتائج ۲۷؍ جون کو جاری کرنے کا اعلان کر دیا ہے ۔اس سال ہائی اسکول اور انٹر میڈیٹ کے لئے ۵۶؍ لاکھ سات ہزار ۱۱۸؍ طلبا ء اور طالبات نے امتحانات کے لئے اپنا رجسٹریشن کرایا تھا لیکن نقل کے خلاف یوگی حکومت کی غیر معمولی سختی کے چلتے چار لاکھ ۷۰؍ ہزار طلبا ء و طالبات نے امتحان درمیان میں ہی چھوڑ دیا تھا۔

اتنی بڑی تعداد میں امتحان چھوڑنے پر ماہرین تعلیم نے اپنی سخت تشویش کا اظہار کیا تھا۔یو پی بورڈ کے ذرائع کے مطابق آئندہ ۲۷؍ جون کو ریاست کے نائب وزیر اعلیٰ اور وزیر تعلیم ڈاکٹر دنیش سنگھ ویڈیوں کانفرنسنگ کے ذرریعے لکھنؤ سے نتایج کا اعلان کریں۔ ویڈیو کانفرنسنگ میں الہ آباد سے یو پی بورڈ کی سکریٹری نینا سری واستو اور بورڈ کے اعلیٰ افسران بھی موجود ہوں گے ۔ واضح رہے کہ لاک ڈاؤن کے چلتے یو پی بورڈ کی کاپیوں کے ویلوایشن کا م دو بارمعطل کرنا پڑا ۔لیکن دوسرے مرحلے میں جون کے پہلے ہفتے میں کاپی ویلو ایشن کا م مکمل کر لیا گیا تھا۔



یو پی بورڈ کے امتحانات ۱۸؍ فروری سے لیکر ۶؍ مارچ کے درمیان منعقد کئے گئے تھے ۔اس بار امتحانات میں نقل پر لگام لگانے کے لئے یوگی حکومت کی طرف سے سخت انتظامات کئے گئےتھے ۔امتحان کے دوران نقل کرتے پکڑے جانے پر ایف آئی آر درج کرنے اور نقل مافیاؤں کے خلاف پولیس کی کار روائی کو لازمی قرار دیا گیا تھا ۔حکومت کی طرف سے نقل نویسی کے خلاف سختی کے چلتے ہی ساڑھے چار لاکھ سے زیادہ طلبا و طالبات نے درمیان میں ہی امتحان چھوڑ دیا تھا ۔ یو پی بورڈ کے امتحان میں اتنا بڑا ڈراپ آوٹ سامنے آنے پر بعض ماہرین تعلیم نے اپنی سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔


ماہر تعلیم عزادار حسین کا کہنا ہے کہ بچوں کے اندر نقل کا خوف پیدا کرکے امتحان چھڑوا دینے میں کوئی دانشمندی نہیں ہے ۔ان کا کہنا ہے کہ ہائی اسکول اور انٹر میڈیٹ سطح کے اداروں میں تعلیم کا معیار بلند کرنے اور بچوں میں اعتماد پیدا کرکے ڈراپ آوٹ کو آسانی سے روکا جا سکتا ہے ۔
First published: Jun 16, 2020 05:36 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading