اترپردیش: لکھنئو پہنچی نیک کی خصوصی ٹیم، انٹیگرل یونیورسٹی میں تحقیق و معائنہ شروع 

اترپردیش: لکھنئو پہنچی نیک کی خصوصی ٹیم، انٹیگرل یونیورسٹی میں تحقیق و معائنہ شروع 

اترپردیش: لکھنئو پہنچی نیک کی خصوصی ٹیم، انٹیگرل یونیورسٹی میں تحقیق و معائنہ شروع 

Uttar Pradesh News: نیک کی سات رکنی ٹیم نوابوں کے شہر لکھنئو میں انٹیگرل یونیورسٹی کی تشخیص و معائنے کے لئے لکھنئو پہنچی ہے جہاں یہ ٹیم پیر سے بدھ تک تحقیق تشخیص کے بعد یونیورسٹی کے معیار کے مطابق گریڈ فراہم کرے گی ۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Uttar Pradesh | Lucknow
  • Share this:
لکھنو : یہ ایک ناقابل فراموش حقیت ہے کہ گزشتہ چند برسوں کے دوران انٹیگرل یونیورسٹی کےتعلیمی معیار و وقار میں مسلسل اور غیر معمولی  اضافہ ہوا ہے  ۔ تعلیم اور  دیگر تعلیمی مشاغل و عوامل کے حوالے سے قومی اور بین الاقوامی سطح کے اہم اداروں میں انٹیگرل یونیورسٹی بھی اپنی ممتاز شناخت رکھتی ہے ، یہ امر باعث غور ہے کہ ( نیک )  NATIONAL ASSESSMENT AND ACCREDITATION COUNCILکی سات رکنی ٹیم نوابوں کے شہر لکھنئو میں انٹیگرل یونیورسٹی کی تشخیص و معائنے کے لئے لکھنئو پہنچی ہے، جہاں  یہ ٹیم پیر سے بدھ تک تحقیق تشخیص کے بعد یونیورسٹی کے معیار کے مطابق  گریڈ عطا کرے گی ۔ آٹھ مئی کو انٹیگرل یونیورسٹی پہنچی اس ٹیم میں پروفیسر سرمن سنگھ، پروفیسر یدھ ویر سنگھ، پروفیسر پرکاش کمار ہوتا،پروفیسر انوپم چٹرجی،پروفیسر اکّا مہا دیوی پی، پروفیسر انِل کمار پونیا اور پروفیسر ویشالی موہتے کے نام شامل ہیں ۔ اس ٹیم کی قیادت پروفیسر سرمن سنگھ کر  رہے ہیں ۔

یونیورسٹی کا بنیادی ڈھانچہ ، مختلف شعبوں کا نصاب ، تعلیم و تحقیق کے لئے اعلیٰ پیمانے کے بند وبست ، طلبا طالبات  کے تعاون و ترقی کے پیش نظر بنیادی تعلیمی وسائل کی فراہمی، جدید تعلیمی تقاضوں کو پورے کرنے والے  اپریٹس  ، آلات اور ساز و سامان ، بہترین طرزِ تعلیم، تعلیم کی فراہمی میں جدت و اخترائیت ، قابل اساتذہ اور ماہرین ُکی تقرری اور تعین کے اصول و ضوابط و انتظامی امور ، محمکمہ جاتی نظم و ضبط ، اخلاقیات و  تعلیمی ماحول  و تحفظ ، طلبا و طالبات ، ان کے والدین ، اور اساتذہ سے بات چیت کرنے سمیت ایسے بہت سے گوشے اور نکات ہیں جن کے بنیادی جائزے کے بعد انٹیگرل یونیورسٹی کو  ، خصوصی ٹیم کی جانب سے گریڈ دیا جائے گا ۔

گریڈ کے بارے میں ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے لیکن نیوز 18 کے نمائندے کے ذاتی تجزیے اور لکھنئو کے تعلیم سے جڑے کئی اہم اشخاص کے خیال و اظہار کی روشنی میں یہ توقع کی جا رہی ہے کہ تعلیمی اعتبار سے مسلسل ترقی کی طرف گامزن اس یونیورسٹی کو بہترین گریڈ دیا جاسکتا ہے ۔ نیک کے قابل و لائق تعظیم ممبران اپنے سنجیدہ تجزیے اور تحقیق و معائنے کے بعد یونیورسٹی کے تعلق سے کیا خیال رکھتے ہیں یہ تو ان کی رپورٹ کے بعد ہی واضح ہوسکے گا ۔

تاہم اتنا ضرور ہے کہ گزشتہ چند برسوں میں انٹیگرل  یونیورسٹی نے جو معیار و وقار قائم کیا ہے وہ کسی سے پوشیدہ نہیں ،جو لوگ اعلیٰ اور معیاری تعلیم کی فراہمی میں یقین رکھتے ہوئے نئی نسل کو تعلیمی اعتبار سے بلندیوں پر دیکھنا چاہتے وہ جانتے ہیں اور بارہا اعتراف بھی کرتے رہے ہیں کہ تعلیم و تربیت کی فراہمی میں پوری ریاست میں انٹیگرل یونیورسٹی کا ثانی نہیں ہے  ۔

یہ بھی پڑھئے: منی پور تشدد: اترپردیش کے طلبہ نے بیان کیا درد، کہا: نہ کھانا ہی ملا اور نہ پانی


یہ بھی پڑھئے: مدھیہ پردیش: حج کرایہ میں بے تحاشہ اضافہ عازمین حج کے خلاف بڑی سازش: عارف مسعود



یونیورسٹی کے بانی و چانسلر پروفیسر  سید وسیم اختر نے  کہا کہ ہم نے ابتدا سے ابتک تعلیمی معیار و وقار سے سمجھوتہ نہیں کیا ہے ساتھ ہی تعلیم کے ساتھ  طلبا وطالبات  کی تربیت پر بھی خصوصی توجہ دی ہے جس سے آنے والی نسل تعلیم یافتہ ہونے کے ساتھ ساتھ بہترین شہری بھی بن سکے اور ملک کی ترقی و کامرانی میں اہم کردار ادا کر سکے ۔۔
Published by:Imtiyaz Saqibe
First published: