உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amrapali Dubey Song:امراپالی دوبے کے اس بھوجپوری گانے کو سن کر آپ کو بھی آئے گی اپنے پیا کی یاد

    بھوجپوری فلموں کی کوئن ہیں امرپالی دوبے۔

    بھوجپوری فلموں کی کوئن ہیں امرپالی دوبے۔

    6 سال بعد بھی یہ گانا یوٹیوب پر بہت سنا جاتا ہے۔ عالم یہ ہے کہ امرپالی دوبے کے اس سوپر ہٹ گانے پر اب تک 58 ملین ویوز آ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ 1 لاکھ سے زیادہ لوگوں نے اسے لائیک بھی کیا ہے۔

    • Share this:
      Amrapali Dubey Nirahua Bhojpuri Song:امرپالی دوبے بھوجپوری انڈسٹری کی سب سے کامیاب ایکٹریس میں سے ایک ہیں۔ اپنی فلموں اور گانوں کو لے کر اکثر امراپالی دوبے لائم لائٹ کا حصہ بھی بنی رہتی ہیں۔ ایسے میں امرپالی دوبے کا ایک بھوجپوری گانا ان دنوں سوشل میڈیا پر جم کر دھوم مچا رہا ہے۔ اس گانے میں آپ کو امرپالی کے ساتھ دنیش لال یادو نرہووا بھی نظر آئیں گے۔

      پیار بھرا گیت ہے امراپالی دوبے کا یہ بھوجپوری گانا
      غورطلب ہے کہ امرپالی دوبے ان چند بھوجپوری سوپر اسٹارز میں سے ایک ہیں جو کسی بھی فلم یا گانے کو خود ہی ہٹ بنانے کی طاقت رکھتے ہیں۔ اس طرح امرپالی دوبے کا ’بولے جیا پیا پیا ہو‘ بھوجپوری گانا بھی سوشل میڈیا پر دھوم مچا رہا ہے۔ یہ گانا امرپالی دوبے اور دنیش لال یادو نرہوا کی فلم راجہ بابو کا ہے۔ اس گانے میں آپ دیکھ سکتے ہیں کہ امرپالی دوبے اپنی پیار کے جذبات کا اظہار کر رہی ہیں۔ اس کے ساتھ گاؤں کے میلے کے انداز میں امرپالی دوبے کا روپ بھی بہت شاندار لگ رہا ہے۔ تو وہیں نرہوا کے ساتھ ان کی کیمسٹری بھی بہت اچھی لگ رہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      2017میں مسلم شخص کو زندہ جلانے والے کو پہنایاگیاتھاہاراوراب۔۔۔اُدئے پورقتل پرسوارابھاسکر



      یہ بھی پڑھیں:
      Rashami Desai Video:گلابی ساڑی میں رشمی دیسائی نے کیاڈانس،ویڈیومیں لگ رہی ہیں بیحدخوبصورت

      آج بھی سوپر ہٹ ہے بولے جیا پیا پیا ہو
      بھوجپوری گانا بولے جیا پیا پیا ہو انڈسٹری کے بہترین رومانوی گانوں میں سے ایک ہے۔ امرپالی دوبے اور نرہوا کے اس بھوجپوری گانے کو لوگوں نے بہت پیار دیا ہے۔ جس کی بنیاد پر 6 سال بعد بھی یہ گانا یوٹیوب پر بہت سنا جاتا ہے۔ عالم یہ ہے کہ امرپالی دوبے کے اس سوپر ہٹ گانے پر اب تک 58 ملین ویوز آ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ 1 لاکھ سے زیادہ لوگوں نے اسے لائیک بھی کیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: