اپنا ضلع منتخب کریں۔

    پاڑوا پر انکیتا لوکھنڈے نے جیتا سسرال والوں کا دل، چھوئے شوہر وکی جین کے پیر

    انکیتا لوکھنڈے اپنے شوہر وکی جین کے ساتھ۔

    انکیتا لوکھنڈے اپنے شوہر وکی جین کے ساتھ۔

    تہواروں کے سیزن کے درمیان انکیتا لوکھنڈے کافی خوش نظرآرہی ہیں۔ اس درمیان اداکارہ نے اپنے سسرال والوں کو جم کر متاثر کرلیاہے۔ سوشل میڈیا پر انکیتا کی فیملی پوسٹ بھی فینس کو پسند آرہی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai, India
    • Share this:
      ٹی وی اداکارہ انکیتا لوکھنڈے نے اس سال کروا چوتھ سے لے کر دیوالی تک سسرال میں ایک سنسکاری بہو کا رول نبھایا ہے۔ اس مرتبہ اداکارہ نے اپنے بھرپور بااخلاق ہونے کا ثبوت دے دیا ہے۔ فی الحال 27 اکتوبر کو ’پویتر رشتہ‘ فیم اداکارہ نے گڑی پاڑوا اور بھائی دوج کا تہوار منایا اور اس کی کچھ جھلکیاں اپنے فینس کے ساتھ بھی شیئر کی۔ اتنا ہی نہیں گڑی پاڑوا پر انکیتا لوکھنڈے نے شوہر وکی جین کے پیر چھو کر گفٹ بھی لیا۔

      اس سے پہلے انکیتا اپنے پہلے کرواچوتھ پر وکی جین کے پیر چھوتے نظر آئی تھیں۔ حالانکہ اس مرتبہ انکیتا نے پاڑوا اور بھائی دوج کا تہوار منایا اور اس کا ایک ویڈیو انسٹاگرام پر شیئر کیا۔ ویڈیو شیئر کرتے ہوئے اداکارہ نے کیپشن لکھا،’ سبھی کو پاڑوا اور بھائید وج کی مبارکباد، میں اپنے سبھی پیارے بھائیوں کو یاد کررہی ہوں۔‘



      بھائی دوج کے موقع پر انکیتا نے لائٹ شیڈ پنک کلر کی ساڑی پہن کر اپنا عالیشان گھر دکھایا اور ٹہلتی ہوئی نظر اائیں۔ وہیں وکی جین میچنگ کرتا پائجامہ میں کافی جچ رہے ہیں۔ ہاتھ میں پوجا کی تھالی لے کر انکیتا بھائی دوج اور پاڑوا منا رہی ہیں۔ انکیتا پہلے وکی جین کی آرتی کرتی ہیں اور پھر ان کے پیر چھوتی ہیں۔ بدلے میں اداکارہ کو گفٹ ملتا ہے۔ اس کے بعد انکیتا بھائیوں کی آرتی اتارتی نظر آرہی ہیں۔ ایک بھائی کے لئے انکیتا ویڈیو کال پر بھی آرتی کرتی نظر آرہی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ’20دن کے لیے منفی15ڈگری کے فریزرمیں‘ جانیے جھانوی کپور کے لیے کتنا مشکل تھا ’ملی‘ کا رول

      یہ بھی پڑھیں:
      گندی لڑائی میں’مس انڈیا‘ٹیگ استعمال کرنے پر مانیا سنگھ ہوئی تھیں ٹرول، اب یوں کیا دفاع

      تہواروں کے سیزن کے درمیان انکیتا لوکھنڈے کافی خوش نظرآرہی ہیں۔ اس درمیان اداکارہ نے اپنے سسرال والوں کو جم کر متاثر کرلیاہے۔ سوشل میڈیا پر انکیتا کی فیملی پوسٹ بھی فینس کو پسند آرہی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: