ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سیکریڈ گیمس کی اداکارہ بولیں: انوراگ کشیپ نے بدل دئے تھے سیکس سین، مجھے میسیج کرکے کہی تھی یہ بڑی بات۔۔

اداکارہ نے کہا میرے غیر مطمئن ہونے پر انوراگ کشیپ سر نے مجھے میسج کیا تھا کہ تم ان سب سے باہر نکلو۔ دکھی مت ہو۔ میں یہ سب دیکھ لوں گا۔

  • Share this:
سیکریڈ گیمس کی اداکارہ بولیں: انوراگ کشیپ نے بدل دئے تھے سیکس سین، مجھے میسیج کرکے کہی تھی یہ بڑی بات۔۔
اداکارہ نے کہا میرے غیر مطمئن ہونے پر انوراگ کشیپ سر نے مجھے میسج کیا تھا کہ تم ان سب سے باہر نکلو۔ دکھی مت ہو۔ میں یہ سب دیکھ لوں گا۔

ممبئی: بالی ووڈ فلم ساز انوراگ کشیپ (Anurag Kashyap) کی مشکلات میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ ہمیشہ ہی تنازعات کو لے کر چرچا کا موضوع بنے رہنے والے انوراگ کشیپ پر اداکارہ پائل گھوش (Payal Ghosh) نے جنسی استحصال کا الزام عائد کیا ہے۔ وہیں، انوراگ کشیپ نے ان الزامات کو بے بنیاد بتایا ہے۔ اس درمیان تاپسی پنو (Taapsee Pannu) سمیت کئی اداکارہ نے فلمساز انوراگ کشیپ کی حمایت کی ہے۔ اب اداکارہ رادھیکا آپٹے (Radhika Apte) بھی انوراگ کشیپ کی حمایت میں آگئی ہیں۔ وہیں اب سیکریڈ گیمس کی اداکارہ راج شری دیش پانڈے کے بعد اسی سیریز میں کام کر چکیں ایلناز نوروجی نے بھی کھل کر انوراگ کشیپ کی حمایت کی ہے۔ انہوں نے اپنے ایک لمبے پوسٹ میں اپنی بات رکھی جس میں انہوں یہاں تک لکھا ہے کہ انوراگ بطور پروڈیوسر۔ڈائریکٹر سیکریڈ گیمس جیسا سیکس سین رکھنا چاہتے تھے، ویسا نہیں کر پائے تھے کیونہ ایکٹرس اس سے پہلے غیر مطمئن محسوس کر رہی تھیں۔ اس لئے فلم میں انوراگ نے اس سین کو بدل دیا تھا۔


اداکارہ نے کہا میرے غیر مطمئن ہونے پر انوراگ کشیپ سر نے مجھے میسج کیا تھا کہ تم ان سب سے باہر نکلو۔ دکھی مت ہو۔ میں یہ سب دیکھ لوں گا۔ مجھ پر بھروسہ رکھو۔ ایلناز کے مطابق، شوٹ کا دن آیا تو ان کی فکر بڑھی ہوئی تھی لیکن انوراگ نے سب کچھ اتنے بہتر طریقے سے مینیج کیا کہ ان کی آنکھ میں آنسو  آ گئے۔




 




View this post on Instagram




 

I remember I was ready to leave #SacredGames 2 because of a particular Sex scene that I wasn’t comfortable with doing. After much back and forth with the the production house and my team , @anuragkashyap10 sir messaged me and said : “Listen don’t worry I’ll figure it out, just trust me.” I had only shot one day with him for season 1 by then and I wasn’t familiar enough with him to know if I can trust him or no but I just agreed. The day we had to shoot that scene came and I had anxiety the entire time... I knew , now that I am on set they’ll somehow make me do the scene and I won’t be able to say no because I was already told that The Script won’t be changed... I had a feeling I’d have to do the scene even if I didn’t really want to... I was called on set and Anurag sir started briefing me as to how he will shoot it keeping in mind, what I had told him I’m not comfortable doing. I felt like crying , I felt like crying because I didn’t expect him to actually keep my concern in mind.. I didn’t expect him to actually shoot it in a way that I would be comfortable with...i didn’t expect him to make sure we shoot the scene with me keeping my clothes on even though it was written otherwise ... I felt like crying because he proved me wrong and kept his word! And once we shot the scene, I did cry in my vanity and I sent him a long message thanking him for being the kind of MAN that he is... we need more men/humans/directors like him in #Bollywood... hell not just Bollywood , but in the entire world! Thank you for allowing me to trust again and making me feel heard and safe on your Set 🙏🏼 #anuragkashyap


A post shared by Elnaaz Norouzi (@_iamelnaaz_) on





اس سے پہلے اداکارہ راج شری دیش پانڈے نے انوراگ کشیپ پر جنسی استحصال کا الزام لگانے والی پایل گھوش کو منگل کو ایک کھلا خط لکھا اور کہا کہ اگر انوراگ غلط ہیں تو انہیں قانون کے مطابق سزا دی جائے گی لیکن میٹو کی آر میں جھوت بولنے سے یہ مہم کو کمزور کردے گا۔
وہیں رادھیکا آپٹے نے سوشل میڈیا پر لکھا، ’انوراگ کشیپ آپ میرے سب سے قریبی دوستوں میں سے ایک رہے ہو۔ آپ نے مجھے ترغیب دی اور ہمیشہ میری حمایت کی ہے۔ آپ کی موجودگی میں ہمیشہ خود کو بے حد محفوظ محسوس کیا ہے۔ آپ ہمیشہ سے میرے بھروسے مند دوست رہے ہیں اور آگے بھی رہیں گے۔ آپ کو پیار’۔

واضح رہے کہ انوراگ کشیپ ان دنوں اداکارہ پائل گھوش کے ذریعہ عائد کئے گئے جنسی استحصال کے الزامات سے سرخیوں میں ہیں۔ اداکارہ نے گزشتہ 19 ستمبر کو انوراگ کشیپ پر ان کا جنسی استحصال کرنے کا الزام لگاکر سنسنی پھیلا دی۔ اداکارہ کے ان الزامات کے بعد 20 ستمبر کو ایک کے بعد ایک انوراگ کشیپ نے کئی ٹوئٹ کئے اور خود پر عائد ان سنگین الزامات پر ردعمل ظاہر کیا تھا۔ اس درمیان پائل گھوش ان کے خلاف پیر کو ایف آئی آر درج کراسکتی ہیں۔ پائل  گھوش کے وکیل نتن ستپتے نے اتوار کو یہ اطلاع دی۔




اداکارہ پائل گھوش (Payal Ghosh) نے انوراگ کشیپ (Anurag Kashyap) پر جنسی استحصال کا الزام لگانے کے ساتھ اس معاملے میں کئی اور اداکارہ کا نام لیا تھا۔ پائل گھوش نے ایک ٹی وی چینل کو دیئے گئے اپنے انٹرویو میں کہا کہ انوراگ کشیپ نے ان سے 200 سے زیادہ لڑکیوں سے تعلقات بنانے کی بات کہی ہے۔ ان میں رچا گڈھا (Richa Chadda) اور ہما قریشی (Huma Qureshi) بھی شامل ہیں۔ اب اس معاملے میں ہما قریشی نے انوراگ کشیپ کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان سب میں گھسیٹے جانے پر کافی غصہ آرہا ہے۔

ہما قریشی نے ٹوئٹ کرکے لکھا، ’میں نے انوراگ کشیپ نے 13-2012 میں ساتھ کام کیا تھا۔ وہ اچھے دوست اور ٹیلنٹیڈ ڈائریکٹر ہیں۔ میرے ذاتی تجربے اور میری جانکاری میں انہوں نے مجھ سے یا کسی اور کے ساتھ کبھی غلط برتاو نہیں کیا۔ حالانکہ جو بھی یہ دعویٰ کرتا ہے کہ اس کے ساتھ غلط ہوا اسے اتھارٹیز، پولیس اور عدالت میں رپورٹ کرنی چاہئے۔ میں نے اب تک کمنٹ (تبصرہ) نہیں کیا کیونکہ میں سوشل میڈیا کے جھگڑوں اور میڈیا ٹرائلس میں یقین نہیں رکھتی۔

 



اداکارہ ہما قریشی نے مزید کہا، ’مجھے ان سب میں گھسیٹے جانے پر واقعی غصہ آتا ہے۔ مجھے صرف اپنے لئے ہی نہیں بلکہ ہر اس عورت کے لئے غصہ آتا ہے، جسے سالوں کی محنت اور جدوجہد کے بعد ورک پلیس پر اتنے بے بنیاد اور گھٹیا الزامات میں گھسیٹا جاتا ہے۔ پلیز ان سب باتوں سے دور رہئے’۔

Published by: sana Naeem
First published: Sep 23, 2020 11:24 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading