உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آرین خان معاملہ: سمیر وانکھیڑے پر ڈیل کا الزام لگانے والے پنچ پر این سی بی نے عدالت کو دیا حلف نامہ

    آرین خان معاملہ: سمیر وانکھیڑے پر ڈیل کا الزام لگانے والے پنچ پر این سی بی نے عدالت کو دیا حلف نامہ

    آرین خان معاملہ: سمیر وانکھیڑے پر ڈیل کا الزام لگانے والے پنچ پر این سی بی نے عدالت کو دیا حلف نامہ

    Aryan Khan Case: این سی بی نے عدالت کو بتایا ہے کہ معاملے کی جانچ میں پنچوں کی جانکاری لیک ہو رہی ہے۔ حلف نامے میں این سی بی عدالت سے جلد ازجلد سماعت کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      ممبئی: آرین خان (Aryan Khan Case) معاملے میں این سی بی افسر سمیر وانکھیڑے (Sameer Wankhede) نے این ڈی پی ایس عدالت (NDPS Court) میں حلف نامہ جمع کیا ہے۔ جانچ ایجنسی نے عدالت کو بتایا ہے کہ معاملے میں گواہ اپنے بیان سے منحرف ہوگیا ہے اور وٹنیس ہوسٹائل کی صورتحال بنی ہوئی ہے۔ وہیں معاملے میں پربھاکر سیل (Prabhakar Sail) کا این سی بی (NCB) میں پنچ کے طور پر بیان لیا گیا ہے۔ ایجنسی نے اتوار کو پربھاکر سیل کے ذریعہ لگائے گئے الزامات کی جانکاری بھی عدالت کو دی ہے۔ اس کے علاوہ این سی بی نے عدالت کو بتایا ہے کہ معاملے کی جانچ میں پنچوں کی جانکاری لیک ہورہی ہے۔

      حلف نامہ میں معاملے کی حساسیت کو دیکھتے ہوئے این سی بی عدالت سے جلد از جلد سماعت کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ وہیں کروز ڈرگس معاملے میں پنچ پربھاکر پیر کو ممبئی پولیس کے افسران سے بھی ملنے پہنچے۔ اطلاع کے مطابق، پربھاکر سیل نے حلف نامہ دے کر انکشاف کیا ہے کہ کے پی گوساوی پیسوں کے لین دین کی بات کر رہا تھا اور اس نے سنا ہے کہ 8 کروڑ سمیر وانکھیڑے کو دینے ہیں۔ مانا جا رہا ہے کہ ممبئی سی پی سے مل کر پربھاکر سیل سیکورٹی کا مطالبہ کرسکتا ہے۔

      آرین خان کو رہا کرنے کے لئے 25 کروڑ روپئے کا مطالبہ

      واضح رہے کہ ممبئی کے ساحلی علاقے میں کروز شپ سے نشیلی اشیا ضبط کئے جانے کے معاملے میں آزاد گواہ نے اتوار کو دعویٰ کیا کہ این سی بی کے افسر اور کچھ دیگر افراد نے بالی ووڈ سپر اسٹار شاہ رخ خان سے معاملے میں گرفتار بیٹے آرین خان کو رہا کرنے کے لئے 25 کروڑ روپئے کا مطالبہ کیا۔ معاملے میں گواہ پربھاکر سیل نے میڈیا کو بتایا کہ این سی بی افسران نے ان سے 9 سے 10 سادہ کاغذ پر دستخط کرنے کے لئے بھی کہا۔ حالانکہ این سی بی افسر نے الزامات سے انکار کرتے ہوئے اسے ’پوری طرح سے جھوٹا اور بدقسمتی والا‘ بتایا ہے۔

      این سی بی کے زونل ڈائریکٹر سمیر وانکھیڑے

      این سی بی کے زونل ڈائریکٹر سمیر وانکھیڑے کی قیادت میں اس ماہ کے آغاز میں ایجنسی نے کروز شپ پر ’نشے‘ کا پردہ فاش کرنے کا دعویٰ کیا گیا تھا اور اس کے بعد معاملے میں تین اکتوبر کو آرین خان کو گرفتار کیا تھا۔ اس وقت آرین خان ممبئی کے آرتھر روڈ جیل میں قید ہیں۔ حال میں پنے پولیس نے کروز شپ نشیلی اشیا معاملے میں این سی بی کے ایک اور گواہ کے پی گوساوی کے خلاف لُک آوٹ نوٹس جاری کیا تھا، جو سال 2018 کے دھوکہ دہی معاملے میں مبینہ طور پر لوگوں کو بیرون ملک میں نوکری کرنے کی پیشکش کرتا تھا۔

      کیا ہیں پربھاکر سیل کے الزامات

      پربھاکر سیل نے اتوار کو الزام لگایا کہ این سی بی کے افسر، گوساوی اور سیم ڈسوزا نام کے ایک دیگر شخص نے شاہ رخ خان سے ان کے بیٹے کو چھوڑنے کے عوض میں 25 کروڑ روپئے کا مطالبہ کیا تھا۔ پربھاکر، گوساوی کے ذاتی محافظ کے طور پر کام کرتا تھا اور چھاپہ ماری کی رات اس کے ساتھ تھا۔ اس نے دعویٰ کیا کہ آرین خان کو این سی بی کے دفتر لائے جانے کے بعد گوساوی نے ڈسوزا سے ملاقات کی۔ پربھاکر نے دعویٰ کیا کہ اس نے گوساوی کو فون پر ڈسوزا کو 25 کروڑ روپئے کا مطالبہ کے بارے میں بات کرتے ہوئے سنا تھا اور معاملہ 18 کروڑ پر طے ہوا تھا، کیونکہ انہیں ’8 کروڑ روپئے سمیر وانکھیڑے کو دینے تھے‘۔ اس درمیان، این سی بی نے کہا تھا کہ سمیر وانکھیڑے کو ازسر نو مسترد کیا ہے۔ ایجنسی نے کہا کہ معاملہ عدالت میں زیر غور ہے اور پربھاکر کو اگر کچھ کہنا ہے تو عدالت میں عرضی دینی چاہئے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: