உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Shehnaz Gill On Salman Khan:’میرے منہ سے سلمان خان کبھی نہیں نکلے گا‘-بگ باس فیم شہناز گل کا بڑا بیان

    سلمان خان کے بارے میں شہناز گل نے انٹرویو میں کیا کہا؟

    سلمان خان کے بارے میں شہناز گل نے انٹرویو میں کیا کہا؟

    Shehnaz Gill On Salman Khan: سلمان خان کے ساتھ پرائیوٹ وقت گزارنے کے سوال پر شہناز گل کا کہنا تھا کہ لوگوں نے سوچا ہوگا کہ میں نے کیا ہوگا، میں صرف شیلے میں ہی ملی ہوں، وہ بھی تھوڑی دیر کے لیے… میں زیادہ بات نہیں کرپائی۔

    • Share this:
      Shehnaz Gill On Salman Khan:ریئلٹی شو بگ باس فیم اور پنجابی گلوکارہ شہناز گل حال ہی میں تنمے بھٹ کے شو 'تنمے ری ایکشنز' میں نظر آئیں۔ اس انٹرویو میں شہناز گل نے کئی موضوعات پر کھل کر بات کی۔ اس دوران انہوں نے سلمان خان کے ساتھ اپنے تعلقات کے بارے میں بھی کئی باتیں بتائیں۔ شاہ رخ خان کے بارے میں بھی اپنی رائے کا اظہار کیا۔

      انٹرویو کے دوران انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وہ شاہ رخ کو نہیں بلکہ سلمان خان کو سر کیوں کہتی ہیں۔ شہناز گل کا کہنا تھا کہ ’جب کوئی آپ کی تعریف کرتا ہے تو وہ آپ کی پسندیدہ فہرست میں آتا ہے… سلمان سر جانتے ہیں کہ کس سے بات کریں گے تو آپ کو کیا ملے گا… وہ بہت اچھی طرح سے حالات کو سنبھالتے ہیں۔‘‘

      یہ بھی پڑھیں:
      کیا جلد ہوگا’Munjali‘کا قصہ ختم؟پرنس نرولا کی بات سن کر بھڑک گئے منور اورانجلی کے فینس

      سلمان خان کے ساتھ پرائیوٹ وقت گزارنے کے سوال پر شہناز گل کا کہنا تھا کہ لوگوں نے سوچا ہوگا کہ میں نے کیا ہوگا، میں صرف شیلے میں ہی ملی ہوں، وہ بھی تھوڑی دیر کے لیے… میں زیادہ بات نہیں کرپائی۔ شہناز گل کا کہنا تھا کہ وہ سلمان سے ملتے ہوئے شرما رہی تھیں۔ سلمان کے فون نمبر کے سوال پر انہوں نے کہا کہ ان کے پاس سلمان کا نمبر نہیں ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Video:ریسٹورنٹ میں کھارہی تھی حناخان،عالیہ بھٹ کاگانا سنتے ہی چاپ اسٹک کوبنالیاڈانڈیااسٹک

      شہناز گل نے کہا کہ میرے منہ سے کبھی سلمان خان نہیں نکلے گا، سلمان سر ہی نکلے گا کیونکہ وہ میرے لئے سر ہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ شاہ رخ خان کو شاہ رخ خان کہتے ہیں کیونکہ انہوں نے انہیں فلموں میں شاہ رخ کے روپ میں دیکھا ہے۔ شہناز نے کہا کہ میں سلمان سر کو ذاتی طور پر جانتی ہوں تو میرے منہ سے سر نکلتا ہے ان کے لیے عزت خود بخود نکل جاتی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: