உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اداکارہ فرخ جعفر کو لکھنؤ کے عیش باغ قبرستان میں کیا گیا سپرد خاک، فن و تہذیب کی روشن شمع ہمیشہ کیلئے دفن

    Youtube Video

    فرخ جعفر صرف ایک اچھی اداکارہ ہی نہیں بلکہ نہایت روشن خیال خاتون تھیں ان کی شخصیت مختلف اوصاف کا ایسا مجموعہ تھی جس کے سحر سے بچنا ممکن نہیں تھا۔

    • Share this:
    لکھنؤ: معروف فلم اداکارہ، ریڈیو پریزینٹر اور سماجی کارکن فرخ جعفر نے اپنی 88 سالہ زندگی میں مختلف شعبوں اور جہتوں میں ناقابل فراموش خدمات انجام دے کر دنیا کو الوداع کہہ دیا۔ آج بعد نماز ظہر لکھنئو کے عیش باغ واقع قبرستان میں معروف اداکارہ کے جسدِ خاکی کو سپرد خاک کردیا گیا۔ فرخ جعفر کے انتقال کے ساتھ ہی لکھنئو کی تہذیب و ثقافت اور فنونِ لطافت کا ایک روشن اور تابناک باب ہمیشہ کے لئے بند ہوگیا ۔فرخ جعفر کی پیدائش 1933 میں ضلع جون پور تحصیل شاہ گنج کے چکیسر گاوں میں ہوئی تھی۔جہاں سے انہوں نے ہجرت کا سفر شروع کیا اور لکھنئو منتقل ہوگئیں۔

    لکھنئو کے کرامت کالج سے تعلیم حاصل کرنے والی اس غیر معمولی صلاحیت کی متحمل خاتون نے ٹی وی اور سنیما کے چھوٹے ، بڑے پردوں پر اپنی اداکاری کے جوہر دکھانے سے قبل ریڈیو پر بھی ایک پریزینٹر اور رائٹر کی شکل میں طویل عرصے تک قابل قدر خدمات انجام دیں ۔۔امراؤ جان سے لیکر گلابو ستابو تک کئی اہم ہِٹ فلموں میں اپنے عہد کے ممتاز اور بڑے اداکاروں کے ساتھ نہ صرف کام کیا بلکہ ان کو اپنی اداکاری اور اخلاق سےگرویدہ بھی بنالیا ۔ بڑے پردے کے ساتھ ساتھ چھوٹے پردے پر بھی ہمیشہ یاد رکھے جانے والے غیر معمولی کردار ادا کیے۔

    بیگم فرخ جعفر کی وفات کی خبر ان کے پوتے شج احمد نے دی

    نوّے ۹۰ کی دہائی میں دور درشن، نیشنل چینل پر معروف ادیب و شاعر اور صحافی تحسین منور کے تحریر کردہ اودھی تہذیب کے نمائندہ سیریل یادوں کا سفر میں بھی فرخ جعفر نے دادی کا مثالی اور ناقابل فراموش کردار نہایت کامیابی کے ساتھ ادا کیا تھا، صغرا مہدی کے ناول پُروائی پر مشتمل اس اہم سیریل کی ہدایت کاری کے فرائض معروف کشمیری ہدایات کار رابعہ ناز کی نے انجام دیے تھے ۔



    فرخ جعفر کو ان کی بہترین خدمات کے لیے مختلف اعزازا انعام سے بھی سرفراز کیا گیا۔گزشتہ دنوں بہترین سپورٹنگ رول کے لئے بھی فلم فئر ایوارڈ کے لیے بھی ان کو نامزد کیا گیا تھا فرخ جعفر کے انتقال سے لکھنئو کی فضا مغموم و سوگوار ہو گئی ہے ۔علم سے فلم تک ان کے کارنامے قابل ستائش اور یادگاری نقوش کی طرح ہمیشہ روشن رہیں گے۔

    فلم گلابو ستابو میں ان کے ساتھ کام کر چکے نواب جعفر میر عبد اللہ کہتے ہیں کہ فرخ جعفر صرف ایک اچھی اداکارہ ہی نہیں تھیں بلکہ ان کی شخصیت مختلف اوصاف کا مجموعہ تھی تہذیب اور فن سے جڑے لوگ انہیں کبھی نہیں بھلا پائیں گے۔ لکھنئو کے ہی نواب مسعود اعتراف کرتے ہیں کہ بیگم صاحبہ کے ساتھ کام کرنے کے دوران بہت کچھ سیکھنے کو ملا ، ان کی شخصیت میں عظمت و انکساری کا خوبصورت امتزاج تھا۔ پرنسز فرحانہ مالکی کے مطابق آج دنیا بڑی اداکارہ سے محروم ہوگئی ہم نے اپنی شفیق استاد ، حقیقی ہمدرد اور عظیم اداکارہ کو کھو دیا۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: