ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سشانت سنگھ راجپوت معاملہ: ریا چکرورتی کے وکیل نے ہائی کورٹ سے کہا- ڈرگس معاملے کی جانچ سی بی آئی کرے، نہ کہ این سی بی

اداکارہ ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) اور اس کے بھائی شووک کے وکیل نے جمعرات کو بامبے ہائی کورٹ (Bombay High Court) سے کہا کہ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے ڈرگس معاملے میں این سی بی (NCB) کو جانچ شروع کرنے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔

  • Share this:
سشانت سنگھ راجپوت معاملہ: ریا چکرورتی کے وکیل نے ہائی کورٹ سے کہا- ڈرگس معاملے کی جانچ سی بی آئی کرے، نہ کہ این سی بی
ریا چکرورتی کے وکیل نے ہائی کورٹ سے کہا- ڈرگس معاملے کی جانچ سی بی آئی کرے، نہ کہ این سی بی

ممبئی: اداکارہ ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) اور اس کے بھائی شووک چکرورتی کے وکیل نے جمعرات کو بامبے ہائی کورٹ (Bombay High Court) سے کہا کہ اداکار سشانت سنگھ کی موت سے جڑے ڈرگس معاملے میں این سی بی (NCB) کو جانچ شروع کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ وکیل ستیش مانشندے نے ہائی کورٹ سے کہا کہ این سی بی کو متعلقہ ڈرگس معاملے کی جانچ سشانت سنگھ راجپوت کی موت کی جانچ کر رہے سی بی آئی (CBI) کو منتقل کرنی چاہئے تھی۔ متعلقہ ڈرگس معاملے میں ریا چکرورتی اور شووک ملزم ہیں اور اس وقت جیل میں ہیں۔


ہائی کورٹ نے ریا چکرورتی اور شووک کی ضمانت عرضی پر کوئی حکم نہیں دیا اور این سی بی سے پیر تک جواب داخل کرنے کو کہا۔ این سی بی نے ریا چکرورتی اور شووک کے خلاف این ڈی پی ایس کی مختلف دفعات کے تحت معاملہ درج کیا ہے۔ جیل میں بند بہن - بھائی نے اپنی ضمانت عرضی خارج کرنے کے خصوصی این ڈی پی ایس عدالت کے حکم کو اس ہفتے کے آغاز میں ہائی کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔


اداکارہ ریا چکرورتی اور اس کے بھائی شووک کے وکیل نے جمعرات کو بامبے ہائی کورٹ سے کہا کہ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے ڈرگس معاملے میں این سی بی کو جانچ شروع کرنے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔
اداکارہ ریا چکرورتی اور اس کے بھائی شووک کے وکیل نے جمعرات کو بامبے ہائی کورٹ سے کہا کہ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے جڑے ڈرگس معاملے میں این سی بی کو جانچ شروع کرنے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔


جسٹس سارنگ کوتوال کی سنگل بینچ سے مانشندے نے کہا کہ سپریم کورٹ نے سشانت سنگھ راجپوت کی مبینہ خود کشی کی جانچ عرضی پر سماعت کرتے ہوئے کہا تھا کہ موت سے متعلق سبھی معاملات کی جانچ سی بی آئی کرے گی۔ وکیل نے ترک دیا کہ ریا چکرورتی اور شووک چکرورتی کے خلاف این ڈی پی ایس ایکٹ کی دفعہ 27 اے نہیں لگای جانی چاہئے تھی۔ یہ دفعہ ڈرگس کے ناجائز کاروبار سے متعلق ہے، جس میں قصوروار پائے جانے پر 10 سال تک کی قید کا التزام ہے۔

جسٹس کوتوال نے مانشندے اور این سی بی کے وکیل ایڈیشنل سالسٹر جنرل انل سنگھ سے کہا کہ وہ معاملے میں دفعہ 27 اے لگانے اور ضمانت دینے یا نہ دینے سے متعلق شواہد پر سماعت کی آئندہ تاریخ پر تفصیل سے اپنی بات رکھیں۔ عدالت نے موجودہ معاملات کو سشانت سنگھ راجپوت کے معاونین دیپیش ساونت اور سیموئل مرانڈا اور مبینہ ڈرگس اسمگلر عبدالباسط پریہار کی ضمانت عرضی کے ساتھ فہرست میں شامل کردیا۔ عرضیوں پر 29 ستمبر کو سماعت ہوگی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 24, 2020 11:51 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading