உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سینے پر سر رکھنے والے سین کو کاٹو، کبھی ایسے بھی تھے سینسر بورڈ کے قانون

    • Share this:
      ہندستانی سنیما میں جہاں ایک طرف ڈائریکٹرس سینسر بورڈ کی قینچی سے بیحڈ پریشان رہتے ہیں۔ وہیں سینسر بورڈ نے حال ہی میں پرانے دور کی فلموں کے اس وقت کاٹے گئے سین کو پبلک کردیا ہے۔ خبروں کے مطابق نیشنل آرکئیو آف انڈٰا (این ایف اے آئی) نے اس دوران سینسر بورڈ کے ذڑیعے کاٹے گئے سینز کو ڈجیٹل فارمیٹ میں بلدکر این ایف آئی اے کی آفیشیل سائٹ پر شئیر کیا ہے۔

      سینسر بورڈ کے اس قدم سے اس دور کے سینسر قانون کا انکشاف ہوا ہے۔ جہاں سال1951 میں رلیز ہوئی راج کپور کی فلم 'آگ' کے ایک سین کو محض اس لئے قینچی چلادی تھہی کہ اس سین میں اداکارہ نے راج کپور کے سینے پر اپنا سر رکھا ہواتھا۔ ظاہر طور پر سینسر بورڈ کو ایسے سین سے بھی اعتراض رہا ہوگا اس لئے انہوں نے فلم کے اس سین کو کاٹ دیا۔

      جاری کئے  گئے سین کو دیکھیں تو راج کپور کی  فلم آگ میں ایسے کئی سین تھے جس کے چلتے فلم کو یو سرٹیفکٹ دے دیا گیا تھا۔ یہی نہیں ایسا صرف راج کپور کے ساتھ نہیں ہوا بلکہ ایسے تمام فلموں کے سین ہیں جو صارف کر رہے ہیں کہ اس دور میں سینسر بورڈ کتنا زیادہ سخت ہوا کرتا تھا۔
      First published: