ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

Fact Check: دہلی میں آدھی رات کو ہوئی اجے دیوگن کی پٹائی! جانئے کیا ہے وائرل ویڈیو کا سچ

Fact Check: دہلی کے ایروسٹی علاقہ میں ہوئی لڑائی کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر کافی تیزی سے وائرل ہورہا ہے ، جس کو لے کر دعوی کیا جارہا ہے کہ ویڈیو میں جس شخص کی پٹائی کی جارہی ہے وہ کوئی نہیں بلکہ بالی ووڈ سپر اسٹار اجے دیوگن ہیں ۔

  • Share this:
Fact Check: دہلی میں آدھی رات کو ہوئی اجے دیوگن کی پٹائی! جانئے کیا ہے وائرل ویڈیو کا سچ
Fact Check: دہلی میں آدھی رات کو ہوئی اجے دیوگن کی پٹائی! جانئے کیا ہے وائرل ویڈیو کا سچ ۔ (photo credit: twitter)

نئی دہلی : قومی راجدھانی دہلی میں آدھی رات کو دو گروپ میں ہوئی لڑائی کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر کافی تیزی سے وائرل ہورہا ہے ۔ اس کو لے کر دعوی کیا جارہا ہے کہ ویڈیو میں جس شخص کی پٹائی کی جارہی ہے وہ کوئی اور نہیں بلکہ بالی ووڈ کے سپر اسٹار اجے دیوگن ہیں ۔


سوشل میڈیا یوزرس کا کہنا ہے کہ جس وقت یہ واقعہ پیش آیا ، اجے دیوگن نشے کی حالت میں تھے ۔ ان کا کار کارکنگ کو لے کر جھگڑا ہوگیا ، جس کے بعد لوگوں نے مل کر ان کے ساتھ مارپیٹ شروع کردی ۔ حالانکہ ویڈیو میں اتنا صاف نہیں ہے اور اس میں کسی کا چہرہ صاف نظر نہیں آرہا ہے ، لیکن ملتی جلتی پرسنالیٹی کی وجہ سے سوشل میڈیا یوزرس ویڈیو میں اداکار کی پٹائی کی دعوی کررہے ہیں ۔




ایک یوزر نے اس پورے واقعہ کا ویڈیو شیئر کیا ہے ، جس میں سفید شرٹ پہنے ایک شخص کی پٹائی ہورہی ہے ۔ ویڈیو پوسٹ کرتے ہوئے اس شخص نے لکھا : مجھے نہیں پتہ کہ یہ اجے دیوگن ہیں یا نہیں ، لیکن لوگوں میں کسان آندولن کو لے کر غصہ پھیلتا نظر آرہا ہے ۔ سوشل میڈیا پر یہ ویڈیو پھیل رہا ہے ، جس کو لے کر دعوی کیا جارہا ہے کہ یہ اجے دیوگن ہیں ۔



حالانکہ اس ویڈیو کی جانچ پر پتہ چلتا ہے کہ یہ ویڈیو راجدھانی دہلی میں واقع اندراگاندھی ایئرپورٹ کے پاس بنے ایروسٹی کا ہے ، جہاں گزشتہ رات پارکنگ کو لے کر دو گروپ کے درمیان لڑائی شروع ہوگئی اور دیکھتے ہی دیکھتے یہ لڑائی اتنی بڑھ گئی کہ کئی لوگ اس میں شامل ہوگئے اور ایک شخص کو پکڑ کر پٹائی شروع کردی ۔ اس لڑائی کے ویڈیو میں نظر آنے والا شخص نشے کی حالت میں نظر آرہا ہے ۔ اس کا چہرہ صاف طور پر نظر نہیں آرہا ہے ، لیکن ہماری جانچ میں پتہ چلا ہے کہ اس واقعہ کا اجے دیوگن سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔ واقعہ کے بعد پولیس نے اہم ملزم کو گرفتار کرلیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 29, 2021 11:27 AM IST