ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

سشانت سنگھ راجپوت سے 13 جون کو ریا چکرورتی نے آدھی رات میں کی تھی ملاقات، اس شخص نے کیا دعویٰ

کرنی سینا کے لیڈر سرجیت سنگھ راٹھور (Surjeet Singh Rathore) نے نیا دعویٰ کیا ہے کہ 13 جون کی رات کو ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty)، سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کے گھر پر گئی تھیں اوردونوں کی ملاقات بھی ہوئی تھی۔

  • Share this:
سشانت سنگھ راجپوت سے 13 جون کو ریا چکرورتی نے آدھی رات میں کی تھی ملاقات، اس شخص نے کیا دعویٰ
سشانت سنگھ راجپوت سے 13 جون کو ریا چکرورتی نے آدھی رات میں کی تھی ملاقات

ممبئی: سشانت سنگھ راجپوت کیس (Sushant Singh Rajput Case) کی جانچ چل رہی ہے۔ ملک کی بڑی جانچ ایجنسیاں اس معاملے کو حل کرنے میں لگی ہیں، لیکن حال ہی میں کرنی سینا کے اس لیڈر نے ایک حیران کرنے والا دعویٰ کیا، جس کے سامنے ریا چکرورتی (Rhea Chakraborty) نے سشانت سنگھ کی لاش دیکھنے کے بعد ساری بابو (معاف کرنا بابو) کہا تھا۔ کرنی سینا کے لیڈر سرجیت سنگھ راٹھور (Surjeet Singh Rathore)  نے نیا دعویٰ کیا ہے کہ 13 جون کی رات کو ریا چکرورتی، سشانت سنگھ کے گھر پر گئی تھیں اور دونوں کی ملاقات بھی ہوئی تھی۔ سرجیت کے ان دعووں نے پھر سے کئی سارے کھڑے کر دیئے ہیں۔


کرنی سینا کے لیڈر سرجیت سنگھ راٹھور (Surjeet Singh Rathore) نے حال ہی میں ایک پرائیویٹ ٹی وی سے بات چیت میں دعویٰکیا ہے۔ سرجیت سنگھ راٹھور سے جب یہ سوال کیا گیا کہ سشانت سنگھ راجپوت (Sushant Singh Rajput) کی موت کے 3.5 ماہ کے بعد وہ یہ انکشاف کیوں کر رہے ہیں؟ انہوں نے اس بات کو اب تک جانچ افسران کو کیوں نہیں بتایا؟ اس پر انہوں نے جواب دیا کہ سی بی آئی نے ان سے رابطہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس بات کو انہوں نے پہلے بھی کہا تھا، لیکن میڈیا نے ان کے اس بیان پر دھیان ہی نہیں دیا۔


سرجیت سنگھ راٹھور وہی شخص ہیں، جنہوں نے ریا چکرورتی کو کپور اسپتال کی مارچوری وزٹ کرانے میں مدد کی تھی۔ انہوں نے بتایا تھا کہ سشانت سنگھ راجپوت کا چہرہ دیکھنے کے بعد ریا چکرورتی نے ان کے سینے پر ہاتھ رکھا اور کہا تھا- ’ساری بابو’۔ سرجیت سنگھ راٹھور سے پہلے بی جے پی لیڈر اور ایڈوکیٹ وویکا نند گپتا نے ایک چشم دیدکے حوالے سے دعویٰ کیا تھا کہ سشانت سنگھ راجپوت کی موت سے ٹھیک ایک دن پہلے یعنی 13 جون کو ریا چکرورتی ان سے (سشانت سنگھ راجپوت) سے ملی تھیں۔ ریا چکرورتی اس رات 2 سے تین بجے کے آس پاس سشانت سنگھ راجپوت سے ملی تھیں۔


 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 02, 2020 03:40 PM IST