ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

بڑی خبر! مہیش بھٹ پر رشتہ دار خاتون نے لگائے یہ سنسنی خیز الزامات ، فلم میکر نے جاری کیا بیان

لوینا لودھ نام کی ایک خاتون نے خود کو مہیش بھٹ کے بھانجے کی بیوی بتایا ہے ۔ لوینا نے مہیش بھٹ پر کئی چونکانے والے الزامات لگائے ہیں ۔ وہیں اب خاتون کے الزامات پر فلم میکر نے بیان جان کردیا ہے ۔

  • Share this:
بڑی خبر! مہیش بھٹ پر رشتہ دار خاتون نے لگائے یہ سنسنی خیز الزامات ، فلم میکر نے جاری کیا بیان
بڑی خبر! مہیش بھٹ پر رشتہ دار خاتون نے لگائے سنسنی خیز الزامات ، فلم میکر نے جاری کیا بیان ۔ (Photo Credit- @maheshfilm/@luvienalodh/Instagram)

بالی ووڈ انڈسٹری میں ان دنوں کئی بڑے تنازعات کھڑے ہوتے دکھائی دے رہے ہیں ۔ گزشتہ دنوں ڈرگس کے استعمال کو لے کر سوالات کھڑے ہوئے تھے ۔ وہیں اب مشہور فلم میکر مہیش بھٹ پر چونکانے والے الزامات لگ رہے ہیں ۔ حال ہی میں لوینا لودھ نام کی ایک خاتون کا ویڈیو کافی زیادہ وائرل ہورہا ہے ، جو خود کو مہیش بھٹ کے بھانجے کی بیوی بتا رہی ہے ۔ اس خاتون نے اپنے شوہر کے ساتھ مہیش بھٹ اور مکیش بھٹ پر بھی کئی بڑے الزامات عائد کئے ہیں ۔ اس خاتون نے مہیش بھٹ کا نام لیتے ہوئے ایک ویڈیو بھی شیئر کیا تھا ۔ وہیں اب مہیش بھٹ نے اس خاتون کے خلاف قانونی ایکشن لیا ہے ۔


بتادیں کہ لوینا لودھ نے جمعہ کو انسٹاگرام اکاونٹ پر ویڈیو شیئر کرکے کہا تھا : میں نے مہیش بھٹ کے بھانجے اسمرتی سبھروال سے شادی کی تھی ۔ میں نے ان کے خلاف طلاق کا معاملہ درج کیا ہے ، کیونکہ مجھے پتہ چل گیا تھا کہ وہ سپنا بپی اور امائرہ دستور جیسی اداکاراوں کو ڈرگس سپلائی کرتے ہیں ۔ ان سبھی باتوں کی جانکاری مہیش بھٹ کو بھی ہے ۔


لوینا لودھی کے مطابق انڈسٹری میں سب سے بڑے ڈان مہیش بھٹ ہیں اور وہ پورا سسٹم آپریٹ کرتے ہیں ۔ اگر آپ ان کے مطابق نہیں چلتے ہیں توہ وہ آپ کا جینا حرام کردیتے ہیں ۔ مہیش بھٹ نے کتنے ایکٹرس اور ڈائریکٹرس کی زندگی برباد کردی ہے ۔ وہ ایک فون کرتے ہیں اور کسی کو پتہ بھی نہیں چلتا ہے اور وہ نوکری سے نکال دئے جاتے ہیں ۔


وہیں اب ٹائمس آف انڈیا کی ایک رپورٹ کی مانیں تو لوینا لودھ کے الزامات پر مہیش بھٹ کی جانب سے ان کے وکیل نے بیان جاری کیا ہے ۔ اس بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم سبھی الزامات کی تردید کرتے ہیں ۔ اس طرح کے الزامات نہ صرف جھوٹے اور قابل اعتراض ہیں بلکہ اس کے سنگین قانونی نتائج ہوسکتے ہیں ۔ اس بیان میں اس معاملہ میں قانونی کارروائی کی بھی بات کہی گئی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 23, 2020 11:59 PM IST