ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

نصیرالدین شاہ اور رتنا پاٹھک کی لو اسٹوری، لمبے انتظار کے بعد بن پائے تھے لائف پارٹنر

بالی ووڈ اسٹار نصیر الدین شاہ (Naseeruddin Shah) آج اپنا یوم پیدائش منا رہے ہیں۔ ان کی اور رتنا پاٹھک (Ratna Pathak) کی لو اسٹوری سے لے کر ان کی شادی تک کے سفر میں کافی اتار چڑھاو آیا، لیکن ہر مشکل دونوں کو اور قریب لے آئی۔

  • Share this:
نصیرالدین شاہ اور رتنا پاٹھک کی لو اسٹوری، لمبے انتظار کے بعد بن پائے تھے لائف پارٹنر
نصیرالدین شاہ اور رتنا پاٹھک کی لو اسٹوری، لمبے انتظار کے بعد بن پائے تھے لائف پارٹنر

ممبئی: بالی ووڈ کی عظیم جوڑی میں سے ایک نصیر الدین شاہ (Naseeruddin Shah) اور رتنا پاٹھک (Ratna Pathak) کی ہے۔ صلاحیت اور اپنے کام کے تئیں حساس اور سنجیدہ اس جوڑے نے کئی شاندار فلمیں انڈسٹری کو دی ہیں۔ نصیر الدین شاہ اور رتنا پاٹھک کی لو اسٹوری میں بھی کافی اتار چڑھاو رہا۔ سال 1975 میں دونوں کی ملاقات ایک تھیئیٹر پلے کے دوران ہوئی تھی۔ اس پلے کا نام تھا ’سنبھوگ سے ریٹائرمنٹ تک‘ جس کی ممبئی تھیئیٹر کے ویٹرن ڈائریکٹر ستیہ دیو دوبے ہدایت کاری کر رہے تھے۔ اس پلے کے دوران ہی دونوں ایک دوسرے کو پسند کرنے لگے، چاہت پروان چڑھی اور ایک دوسرے سے ملنے جلنے لگے۔ تقریباً 7 سال کے ریلیشن شپ کے بعد دونوں نے 1982 میں شادی کرلی۔


زوم میڈیا رپورٹ کے مطابق، رتنا پاٹھک نے اپنے رومانس کے بارے میں ایک بار بتایا تھا کہ ’ایک دن ایسا تھا جب ہم دوست بھی نہیں تھے اور اگلے دن ہم ساتھ ساتھ گھوم رہے تھے‘ لیکن جیسا پڑھنے میں لگ رہا ہے، نصیرالدین اور رتنا پاٹھک کی زندگی میں سب کچھ اتنا آسان بھی نہیں رہا۔ نصیر الدین شاہ کی جب رتنا پاٹھک سے ملاقات ہوئی تھی تو وہ شادی شدہ تھے اور ان کی بیٹی بھی تھی اور عمر میں بھی بڑے تھے۔


نصیرالدین شاہ جب علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں پڑھ رہے تھے تبھی انہوں نے ایک پاکستانی خاتون سے شادی کرلی تھی۔ ہندوستان ٹائمس کی رپورٹ کے مطابق، نصیر الدین شاہ 19 سال کی عمر میں 34 سال کی پروین مراد کے عشق میں گرفتار ہوگئےتھے، جو آنجہانی اداکارہ سریکھا سیکری کی بہن لگتی تھیں۔ ان دونوں نے 1969 میں شادی کرلی۔ حالانکہ ان کی شادی چل نہیں پائی۔ نصیرالدین شاہ نے اپنی آٹو بایوگرافی ’اینڈ دین ون ڈے (And Then One Day)‘ میں اس کے بارے میں جانکاری دی ہے۔


(تصویر کریڈٹ: Instagram/naseeruddin49)
(تصویر کریڈٹ: Instagram/naseeruddin49)


نصیرالدین شاہ دہلی آگئے اور انہوں نے نیشنل اسکول آف ڈراما میں داخلہ لے لیا۔ پروین مراد نے بیٹی ہیبا کو جنم دیا پھر بھی دوریاں بڑھتی گئیں اور پروین ہیبا کو لے کر لندن چلی گئیں۔ نصیرالدین شاہ اپنی بیٹی ہیبا سے 12 سال بعد مل پائے۔

(تصویر کریڈٹ: :ratna_pathak_shah/Instagram)
(تصویر کریڈٹ: :ratna_pathak_shah/Instagram)


اب آتے ہیں رتنا پاٹھک اور نصیرالدین شاہ کی لو اسٹوری پر۔ نصیر الدین شاہ وار پروین مراد الگ ہوگئے تھے، لیکن دونوں نے ایک دوسرے سے طلاق نہیں لیا تھا۔ دھیرے دھیرے رتنا پاٹھک کا ساتھ انہیں اچھا لگنے لگا۔ ایک پاڈ کاسٹ میں رتنا پاٹھک نے اپنے کورٹ شپ پیریڈ کی ایک دلچسپ بات بتائی تھی۔ جب دونوں نے اپنا کیریئر شروع کیا تھا تو پیسوں/ اخراجات کو لے کر بے حد محتاط رہتے۔ اس وقت کے کچھ ریسٹورنٹ دو مینیو کارڈ رکھتے تھے۔ ایک آدمی کے لئے اور دوسرا خواتین کے لئے۔ خواتین والے میں پیسے نہیں لکھے ہوتے تھے، صرف مردوں والے میں لکھے ہوتے تھے۔ رتنا پاٹھک بتاتی ہیں کہ پہلی بار جب ہم ساتھ ڈنر کے لئے گئے تو ہمارے پاس 400 روپئے تھے۔ غلطی سے نصیر الدین کے پاس بغیر پیسوں والا مینیو کارڈ چلا گیا اور میرے پاس دوسرا والا۔ نصیرالدین نے خوب سارے آرڈر کرلئے۔ میں اشاروں سے بل کے بارے میں سمجھانے کی کوشش کر رہی تھی، لیکن سمجھے ہی نہیں۔ جب ویٹر چلا گیا تو میں نے انہیں بتایا اور ہم اپنے اپنے پیسے گننے لگے۔

(تصویر کریڈٹ: :ratna_pathak_shah/Instagram)
(تصویر کریڈٹ: :ratna_pathak_shah/Instagram)


نصیرالدین شاہ کا طلاق الیمنی کی وجہ سے کھنچتا چلا جا رہا تھا تو دونوں نے لیو ان ریلیشن شپ میں رہنے کا فیصلہ لیا اور آخر کار 1982 میں بے حد سادگی سے ان کی شادی ہوئی۔ ان دونوں کے دو بیٹے ویوان شاہ اور عماد شاہ ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 20, 2021 04:36 PM IST