اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ’فیک MMS لیک ہونے سے جھیلنے پڑے رشتہ داروں کے طعنے‘۔’کریمنل جسٹس‘ اداکارہ نے کیا انکشاف

    ’فیک MMS لیک ہونے سے جھیلنے پڑے رشتہ داروں کے طعنے‘۔’کریمنل جسٹس‘ اداکارہ نے کیا انکشاف

    ’فیک MMS لیک ہونے سے جھیلنے پڑے رشتہ داروں کے طعنے‘۔’کریمنل جسٹس‘ اداکارہ نے کیا انکشاف

    فلم کی شوٹنگ سے کچھ بیڈروم سین لیک ہوگئے اور بعد میں وہ میرے نام سے ایم ایم ایس اسکینڈل بن گئے تھے۔ اس کے بعد مجھے کام نہیں ملا، اس کلپ کی وجہ سے کرئیر ڈاون ہوگیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai, India
    • Share this:
      سوپر ہٹ ویب سیریز کریمنل جسٹس میں نظر آئی اداکارہ سواستیکا مکھرجی ان دنوں اپنی آنے والی فلم ’کلا‘ کے پروموشن میں لگی ہوئی ہیں۔ اس درمیان اداکارہ نے اپنے کرئیر کے شروعاتی دور کو یاد کرتے ہوئے کئی حیرت انگیز انکشاف کیے ہیں۔ اداکارہ کے مطابق ایک فیک ایم ایم ایس لیک ہونے سے ان کے کرئیر کو بہت نقصان پہنچا تھا۔

      MMS اسکینڈل سے میرا کرئیر ہوا خراب
      سواستیکا مکھرجی نے بتایا کہ، ایک فلم میں شرابی مدر کا رول نبھانے کی وجہ سے ان کے کلپ ایم ایم ایس بتاکر وائرل کیے گئے تھے جس سے ان کے کرئیر کو جھٹکا لگا تھا۔ یہاں تک کہ رشتہ داروں نے اسے سچ مان لیا تھا اور والدین کے پاس شکایتیں اور طعنوں بھرے فون آتے تھے۔

      فلموں کے رومانٹک سین ایم ایم ایس بتاکر کیے گئے وائرل
      ایک انٹرویو میں سواستیکا نے بتایا کہ، اس دور میں سوشل میڈیا اتنا جارحانہ نہیں تھا، پھر بھی خاندان کے لوگ اور پڑوسی انہیں لگاتار جج کرتے تھے۔ ’مجھے یاد ہے کہ میں نے ’ٹیک ون‘ نام کی ایک فلم کی تھی جو ایک ایسی عورت کے بارے میں تھی جو سنگل مدر ہے، اس میں کچھ رومانٹک سین بھی تھے۔ اس فلم کی شوٹنگ سے کچھ بیڈروم سین لیک ہوگئے اور بعد میں وہ میرے نام سے ایم ایم ایس اسکینڈل بن گئے تھے۔ اس کے بعد مجھے کام نہیں ملا، اس کلپ کی وجہ سے کرئیر ڈاون ہوگیا تھا۔ لوگوں نے میرے رول کو ہی میری زندگی بناکر وائرل کردیا تھا۔‘

      یہ بھی پڑھیں:
      رشمیکا مندانا کی بڑھی مصیبتیں، کرناٹک میں ان کی فلموں پر لگ سکتی ہے پابندی!

      یہ بھی پڑھیں:
      کمل ہاسن کی اچانک خراب ہوئی طبیعت، چیک اپ کے بعد ملی اسپتال سے چھٹی!

      ماں نے دی تھی یہ دھمکی!
      سواستیکا نے بتایا کہ اس ویڈیو کو دیکھ کر رشتہ داروں کے طعنوں نے میری ماں کو غصے سے پاگل کردیا تھا، انہوں نے کہا، تم ایسی فلمیں کیوں نہیں کرسکتی جو یو سرٹیفکیٹ کے ساتھ آتی ہیں؟ بس بچوں کے لیے کام کیجیے، بچوں کی فلمیں کرو، تمہیں شرابیوں کے رول کیوں کرنے ہیں؟‘
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: