உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وکیل کی ڈریس میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ پہنچی جیکلین فرنانڈیز، 50 ہزار روپے کے مچلکے پر ملی عبوری ضمانت

    Youtube Video

    200 کروڑ روپے کے منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کی اگلی تاریخ 22 اکتوبر مقرر کی گئی ہے۔ آج اداکارہ جیکلین فرنانڈیز اپنی ضمانت کی درخواست کی سماعت کے لیے وکیل کی ڈریس میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ پہنچیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai
    • Share this:
      پٹیالہ ہاؤس کورٹ نے آج اداکارہ جیکلین فرنانڈیزکو 200 کروڑ روپے کے منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت دے دی۔ جیکلین فرنانڈیز کو 200 کروڑ روپے کے منی لانڈرنگ کیس میں عدالت نے طلب کیا تھا۔ اس کے بعد اداکارہ جیکلین فرنانڈیز پٹیالہ ہاؤس کورٹ پہنچ گئیں۔ ایڈیشنل سیشن جج شیلیندر ملک نے اداکارہ جیکلین فرنانڈیز کی درخواست ضمانت پر ای ڈی سے جواب طلب کیا ہے۔ تب تک ان کی باقاعدہ ضمانت عدالت میں زیر التوا ہے۔ اداکارہ جیکلین فرنانڈیز کے وکیل کی درخواست پر عدالت نے جیکلین کی 50 ہزار روپے کے مچلکوں پر عبوری ضمانت منظور کرلی۔

      200 کروڑ روپے کے منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کی اگلی تاریخ 22 اکتوبر مقرر کی گئی ہے۔ آج اداکارہ جیکلین فرنانڈیز اپنی ضمانت کی درخواست کی سماعت کے لیے وکیل کی ڈریس میں پٹیالہ ہاؤس کورٹ پہنچیں۔ اس معاملے میں ملزم پنکی ایرانی بھی پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں موجود تھیں۔ پنکی ایرانی کو پہلے ہی ضمانت مل چکی ہے۔ آج جیکلین کو چارج شیٹ کی کاپی دی گئی۔ پٹیالہ ہاؤس کورٹ 22 اکتوبر کو دوپہر 2 بجے جیکولین فرنینڈس کے معاملے کی سماعت کرے گی۔




      انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے دعویٰ کیا تھا کہ دھوکہ دہی اور منی لانڈرنگ ریکیٹ کے ماسٹر مائنڈ سکیش چندر شیکھر کے بالی ووڈ کی کئی مشہور شخصیات سے رابطے تھے۔ جس میں اداکارہ جیکلین کے ساتھ نورا فتیحی بھی شامل ہیں۔ دہلی پولیس نے اس پورے معاملے میں نورا فتحی سے بھی پوچھ گچھ کی ہے۔ سکیش چندر شیکھر کے ہاتھوں دھوکہ دہی کے شکار لوگوں کا کہنا ہے کہ سکیش چندر شیکھر حکمران پارٹی کے کسی بڑے لیڈر، جج یا بڑے افسر کا رشتہ دار ہونے کا بہانہ کرکے امیر لوگوں کو ٹھگتا تھا۔ ذرائع کے مطابق اداکارہ جیکلین نے دوران تفتیش اعتراف کیا تھا کہ وہ اپنی دوست لینا پال کے ذریعے ٹھگ سکیش چندر شیکھر کے رابطے میں آئی تھیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: