اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سدھارتھ شکلا کو یاد کرکے شو ہی میں رو پڑی شہناز گل،کہا-’لوگ کہتے تھے ہمدردی لے رہی ہے‘

    سدھارتھ شکلا کو یاد کرکے شو ہی میں رو پڑی شہناز گل،کہا-’لوگ کہتے تھے ہمدردی لے رہی ہے‘

    سدھارتھ شکلا کو یاد کرکے شو ہی میں رو پڑی شہناز گل،کہا-’لوگ کہتے تھے ہمدردی لے رہی ہے‘

    آیوشمان کی ان باتوں کو سن کر شہناز نے بتایا کہ-’ مجھے لگتا ہے ہم سب۔۔۔ لوگوں کی ججمنٹ سے ڈرتے ہیں۔ پر ہم ایکٹر ہیں، ہمیں ان چیزوں سے ڈرنا نہیں چاہیے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai, India
    • Share this:
      شہناز گل کا چیٹ شو ان دنوں خوب چرچا میں چھایا ہوا ہے۔ دیسی وائبس ود شہناز گل کے دوسرے ایپی سوڈ میں آیوشمان کھرانہ ان کے گیسٹ بنے۔ آیوشمان کھرانہ سے اپنے دل کی بات جگ ظاہر کرتے ہوئے اس شو کے ایک سیگمنٹ میں شہناز گل کی آنکھوں سے آنسو بہتے نہیں رُکے رہے تھے۔ دراصل شہناز گل نے شو میں اس برے وقت کو یاد کیا جب لوگوں کے کڑوے بول انہیں چبھا کرتے تھے۔ اپنے برے وقت کو یاد کر کے شہناز نے بتایا کہ کیسے لوگوں نے ان پر الزام لگانے شروع کردئیے تھے کہ وہ جو کچھ بھی کررہی ہیے وہ لوگوں کی ہمدردی حاسل کرنے کے لیے کررہی ہے۔ اس دوران شہناز نے کوئی قصہ تو نہیں بتایا لیکن انہوں نے اس بات کے ذریعے آیوشمان کھرانہ کے سامنے اپنے جذبات ظاہر کیے۔۔۔

      دراصل ہوا یوں کہ جب آیوشمان کھرانہ نے شہناز سے کہا کہ-’آپ کو لوگوں کا بے شمار پیار ملتا ہے۔ آپ شائقین کے سامنے ہمیشہ بنا کسی نقاب کے نظر آتی رہی ہیں۔ اس پوزیشن پر پہنچ کر ایسا کرپانا بے حد مشکل ہوتا ہے لیکن آپ نے یہ کردکھایا ہے۔ آپ اس پوزیشن پر آکر ایسا محسوس کرنے لگ جاتے ہیں کہ لوگ آپ کو کہیں جج نہ کرلیں۔۔۔

      یہ بھی پڑھیں:

      ملائیکہ اروڑہ ایک آئٹم نمبر کے لیے لیتی ہیں اتنی بڑی رقم، ہر سال بڑھتی جارہی ہے نیٹ ورتھ




      یہ بھی پڑھیں:
      ’اوقات دکھا دی‘-پاکستانی گرل کی ایک تصویر پر ٹوٹ پڑے ٹرولرس،کر رہے ہیں نازیبا کمنٹس

      آیوشمان کی ان باتوں کو سن کر شہناز نے بتایا کہ-’ مجھے لگتا ہے ہم سب۔۔۔ لوگوں کی ججمنٹ سے ڈرتے ہیں۔ پر ہم ایکٹر ہیں، ہمیں ان چیزوں سے ڈرنا نہیں چاہیے۔ کیونکہ ہماری بھی ایک زندگی ہوتی ہے۔ اگر ہم خوش ہوتے ہیں تو ہماری لائف میں ایک ایسا وقت بھی آتا ہے جب ہم آپ کو برا بھی لگتا ہے ہم افسردہ محسوس کرتے ہیں تو وہ کیوں چھپانا چاہیے؟ ہم بے شک لوگوں کے سامنے ہنستے ہیں لیکن ہم چھپ کر کیوں روتے ہیں؟ مجھے لگتا ہے ہم سب کو اپنے جذبات سب کے سامنے جگ ظاہر کرنے چاہیے کیونکہ وہ بھی ایک زندگی کا حصہ ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: