உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Rajesh Khanna کے ساتھ ڈیبیو کے باوجود نہیں چل پایا ڈمپل کی بہن سمپل کا کرئیر، ایکٹنگ چھوڑ کر کررہی تھی یہ کام

    ڈمپل کپاڈیہ کی بہن سمپل کپاڈیہ کو فلموں میں نہیں ملی زیادہ کامیابی۔

    ڈمپل کپاڈیہ کی بہن سمپل کپاڈیہ کو فلموں میں نہیں ملی زیادہ کامیابی۔

    Simple Kapadia Life Facts: کہا جا سکتا ہے کہ جو کامیابی سمپل کو فلموں میں نہیں ملی، وہ کاسٹیوم ڈیزائن کر کے انہوں نے حاصل کی تھی۔ بتا دیں کہ سمپل کو فلم 'رودالی' کے لیے نیشنل ایوارڈ بھی ملا تھا۔

    • Share this:
      Simple Kapadia Life Facts:آج ہم اداکارہ ڈمپل کپاڈیہ کی بہن سمپل کپاڈیہ کے بارے میں بات کرتے ہیں، جنہیں آج بہت کم لوگ جانتے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ سمپل اپنی بہن ڈمپل کی طرح فلموں میں وہ مقام حاصل نہیں کر سکیں جس کی وہ حقدار تھیں۔ ایک طرف ڈمپل نے رشی کپور کے ساتھ فلم 'بوبی' سے ڈیبیو کرتے ہی فلم انڈسٹری میں تہلکہ مچادیا تھا، تو وہیں سمپل کی فلمیں ان کی بہن ڈمپل کی طرح کام نہ کر سکیں۔ آج ہم سمپل کی ہی بات کریں گے اور ان سے متعلق کچھ ایسے حقائق جانیں گے جو بہت کم لوگ جانتے ہیں۔

      بتادیں کہ سمپل نے انڈسٹری کے پہلے سوپر اسٹار راجیش کھنہ کے ساتھ فلموں میں ڈیبیو کیا۔ اس فلم کا نام تھا 'انورودھ' جو سال 1977 میں ریلیز ہوئی تھی۔ اس فلم کے بعد، سمپل نے کئی اور فلموں میں معاون کرداروں میں بھی کام کیا جن میں 'زمانے کو دکھانا ہے'، 'لوٹ مار'، 'دولہا بکتا ہے' اور 'جیون دھارا' وغیرہ شامل ہیں۔

      حالانکہ، اس سے سمپل کے کیریئر کو کسی بھی طرح سے فائدہ نہیں ہوا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اس کے بعد سمپل نے فلمیں چھوڑ دیں اور کاسٹیوم ڈیزائننگ میں قسمت آزمائی کی۔ فلم 'رودالی' کے لیے ملبوسات ڈیزائن کرنے کا سہرا سمپل کو ہی جاتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Lal Singh Chaddha:عامر کی گزشتہ5فلموں کا باکس آفس پر پہلے دن کیسا رہا تھا حال؟جانیے

      یہ بھی پڑھیں:

      Holy Cow Trailer:سنجے مشرا اور نوازالدین صدیقی کی ہولی کاؤ کا ٹریلر ریلیز

      یہ کہا جا سکتا ہے کہ جو کامیابی سمپل کو فلموں میں نہیں ملی، وہ کاسٹیوم ڈیزائن کر کے انہوں نے حاصل کی تھی۔ بتا دیں کہ سمپل کو فلم 'رودالی' کے لیے نیشنل ایوارڈ بھی ملا تھا۔ تاہم، سمپل کا انتقال 2009 میں صرف 51 سال کی عمر میں کینسر سے لڑتے ہوئے ہوا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: