ہوم » نیوز » انٹرٹینمنٹ

جونیئرخاتون کوریوگرافر کو جبراً پورن دکھانے کے الزام میں گنیش اچاریہ پر ایف آئی آر درج

مشہور کوریوگرافر گنیش اچاریہ (Ganesh Acharya) کے خلاف ممبئی کے امبولی پولیس اسٹیشن میں چھیڑچھاڑ کا معاملہ درج ہوا ہے۔ کچھ دن پہلے ایک خاتون کوریوگرافر نے پولیس کو تحریری شکایت دی تھی کہ گنیش اچاریہ نے اسے جبراً پورن دکھانے کی کوشش کی تھی۔

  • Share this:
جونیئرخاتون کوریوگرافر کو جبراً پورن دکھانے کے الزام میں گنیش اچاریہ پر ایف آئی آر درج
مشہور کوریوگرافر گنیش اچاریہ (Ganesh Acharya) کے خلاف ممبئی کے امبولی پولیس اسٹیشن میں چھیڑچھاڑ کا معاملہ درج ہوا ہے۔ کچھ دن پہلے ایک خاتون کوریوگرافر نے پولیس کو تحریری شکایت دی تھی کہ گنیش اچاریہ نے اسے جبراً پورن دکھانے کی کوشش کی تھی۔

ممبئی: مشہور کوریوگرافر گنیش اچاریہ (Ganesh Acharya) کے خلاف ممبئی کے امبولی پولیس اسٹیشن میں چھیڑچھاڑ کا معاملہ درج ہوا ہے۔ کچھ دن پہلے ایک خاتون کوریوگرافر نے پولیس کو تحریری شکایت دی تھی کہ گنیش اچاریہ نے اسے جبراً پورن دکھانے کی کوشش کی تھی۔ آئی پی سی کی دفعہ 354 کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے۔ خاتون پہلے گنیش اچاریہ کے ساتھ کام کرچکی ہیں۔

خاتون نے کوریوگرافر نے  الزام  لگاتے ہوئے کہاتھا کہ گنیش اچاریہ انہیں زبردستی دباؤ کے ساتھ ایڈلٹ ویڈیو دیکھنے کیلئے مجبور کرتے ہیں۔ قابل گور ہے کہ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق گزشتہ 28 جنوری کے ٹویٹ کے مطابق ممبئی میں 33 سالہ ایک خاتون کوریوگرافر نے انڈین فلم اینڈ ٹیلی ویزن کوریوگرافر ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری گنیش اچاریہ کے خلاف ریاستی خاتون کمیشن اور امبولی پولیس اسٹیشن مین شکایت کی تھی۔ خاتون کوریوگرافر کا الزام ہے کہ گنیش انہیں انڈسٹری میں کام میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں۔ وہ کام کے بدلے کمیشن مانگتے ہیں اور ساتھ ہی ایڈلٹ ویڈیو دیکھنے کو مجبور کرتے ہیں۔

ganesh acharya

انہوں ے بتایا کہ متاثرہ سال 2009-10 میں گنیش آچاریہ کے ساتھ ڈانسر کے طور پر کام کرتی تھی ۔ ایک دن جب وہ گنیش آچاریہ کے اوشی وارہ میں واقع دفتر پر پہنچی تو گنیش آچاریہ تیز آواز میں پورن دیکھ رہے تھے ۔ ایف آئی آر کے مطابق انہوں نے متاثرہ کو بھی پورن دیکھنے کیلئے مجبور کرتے ہوئے اس کے ساتھ زبردستی جسمانی تعلقات قائم کرنے کی کوشش کی ۔

ایف آئی آر میں لگائے گئے الزامات کے مطابق گنیش اچاریہ نے زبردستی پورن دکھانے کے ساتھ متاثرہ پر جنسی تعلقات قائم کرنے کیلئے دباو بنایا ۔ ایسا نہ کرنے پر وہ مسلسل اس کو دھمکی دینے لگے ۔ متاثرہ کسی طرح سے وہاں سے نکلنے میں کامیاب رہی ۔ لیکن معاملہ یہیں ختم نہیں ہوا ۔ متاثرہ کا الزام ہے کہ کچھ دنوں پہلے گنیش اچاریہ کے کہنے پر دو لوگوں نے متاثرہ کے ساتھ مار پیٹ بھی کی تھی ۔

ممبئی پولیس کی جانب سے اس سلسلہ میں کارروائی سے متعلق سوال پر انہوں نے بتایا کہ ہم نے پوچھ گچھ کیلئے بلایا ہے ۔ قانونی طریقہ سے جانچ ہوگی اور کارروائی کی جائے گی۔ خیال رہے کہ گنیش آچاریہ پر اس کے علاوہ بھی کئی دیگر طرح کے الزامات عائد ہوتے رہے ہیں ۔


کئی ابھرتے ہوئے ڈانسرس اور جونیئر ڈانسرس کے گروپ نے ان پر پروڈیوسر سے زیادہ پیسے لے کر انہیں کم پیسے دینے کا بھی الزام عائد کیا ہے ۔ ایک گروپ نے نیوز 18 سے براہ راست بات چیت میں کہا کہ گنیشاچاریہ  پروڈیوسرس سے جونیئر ڈانسروں کیلئے ایک دن کا 5000 ہزار لیتے ہیں ، لیکن جن سے کام کراتے ہیں ان کو 2500 ہزار روپے ہی دیتے ہیں ۔
ادھر اس سلسلہ میں گنیش آچاریہ نے بھی اپنا بیان جاری کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ سب میرے خلاف کی جارہی ایک بڑی سازش کا حصہ ہے ، میں پہلے اس معاملہ پر میڈیا کو پوری بات بتا چکا ہوں ، ان دنوں کئی لوگ میری شبیہ خراب کرنے میں لگے ہوئے ہیں اور اس طرح کے غلط الزامات لگا رہے ہیں ۔ یہ فلمی دنیا سے ہی وابستہ ایک معاملہ ہے ۔ میں نے ان لوگوں پر ڈانسرس کے مفادات کو نقصان پہنچانے کا الزام لگاتے ہوئے ان کے خلاف آواز اٹھائی تو انہوں نے اس طرح کی سازش شروع کردی ۔
First published: Feb 06, 2020 11:48 AM IST