உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فیس بک اب Reelsبنانے والے کرئیٹرس کو دے گا کمائی کا ایک حصہ، جانیے تفصیل

    فیس بک اب کمائی کا ایک حصہ ریلز بنانے والے تخلیق کاروں کو دے گا۔

    فیس بک اب کمائی کا ایک حصہ ریلز بنانے والے تخلیق کاروں کو دے گا۔

    فیس بک نے کہا کہ وہ سب سے پہلے امریکہ، کینیڈا اور میکسیکو میں ریلز پر انکم شیئرنگ کی شروعات کرے گا۔ کمپنی نے کہا کہ اسے اگلے چند ہفتوں میں مزید ممالک میں لانچ کیا جائے گا۔ فیس بک نے کہا کہ وہ اسے جلد ہی ہندوستان میں لانچ کرنے کی کوشش کر رہا ہے، جو اس کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے۔

    • Share this:
      فیس بک پر ریلیز (Facebook Reels)یعنی شارٹ ویڈیوز شیئر کرنے والوں کے لیے خوشخبری ہے۔ درحقیقت، فیس بک اب شارٹ ویڈیوز سے ہونے والی کمائی کا ایک حصہ ریلیز بنانے والوں کے ساتھ شیئر کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ فیس بک اگلے چند ہفتوں میں اس اقدام کو پائلٹ بنیادوں پر شروع کرنے جا رہا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہوگا کہ مواد تخلیق کرنے والے اب فیس بک پر ریل بنا کر کما سکیں گے۔

      فیس بک نے یہ فیصلہ دنیا کے کئی ممالک میں ٹک ٹاک کو اپنے پلیٹ فارم کی طرف زیادہ سے زیادہ کنٹینٹ کرئیٹرس کو راغب کرنے کے لیے درپیش چیلنج کے پیش نظر کیا ہے۔ فیس بک کی پیرنٹ کمپنی میٹا نے کہا کہ وہ ایسے کرئیٹرس کے ساتھ اشتہارات کی آمدنی کا اشتراک کرنے جا رہی ہے جو پائلٹ بنیادوں پر ریلز بناتے ہیں۔

      سب سے پہلے ان ملکوں میں ہوگی شروعات
      فیس بک نے کہا کہ وہ سب سے پہلے امریکہ، کینیڈا اور میکسیکو میں ریلز پر انکم شیئرنگ کی شروعات کرے گا۔ کمپنی نے کہا کہ اسے اگلے چند ہفتوں میں مزید ممالک میں لانچ کیا جائے گا۔ فیس بک نے کہا کہ وہ اسے جلد ہی ہندوستان میں لانچ کرنے کی کوشش کر رہا ہے، جو اس کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے۔

      ریلز پر کیسے آئیں گے اشتہارات؟
      بہت سے لوگوں کے ذہن میں یہ سوال آ سکتا ہے کہ کمپنی ریلز پر اشتہارات کیسے دکھائے گی۔ موجودہ نظام کے تحت صارفین بغیر کسی پابندی کے یکے بعد دیگرے ریلز دیکھتے رہتے ہیں اور ان کے درمیان کوئی اشتہار نہیں آتا۔ فیس بک نے اب اس میں ایک نیا تجربہ کیا ہے۔

      مواد کے تخلیق کار جو پائلٹ بنیادوں پر حصہ لیں گے انہیں دو اشتہار فارمیٹس میں سے ایک کا انتخاب کرنا ہوگا۔ اس میں پہلا فارمیٹ بینرز کا ہے اور دوسرا فارمیٹ اسٹیکرز کا ہے۔ بینر فارمیٹ میں، اشتہار شفاف طریقے سے فیس بک ریلز کے نیچے ظاہر ہوگا۔ جبکہ اسٹیکرز موڈ میں اشتہار اسٹیکر کی طرح ریلز پر ظاہر ہوگا۔ مواد کے کرئیٹر کو ریلیز کے کسی بھی حصے پر اسٹیکرز لگانے کی اجازت ہوگی۔

      آپ ان دو تصویروں سے اسے بہتر طور پر سمجھ سکتے ہیں۔ دائیں تصویر میں، اشتہار اوپر کے اسٹیکر کی طرح فیس بک ریلوں میں نظر آرہا ہے۔ اسی وقت، بائیں تصویر میں، وہ نیچے نظر آرہا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: