உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Rashmika Mandanna:جرسی سے لے کر سنجے لیلا بھنسالی کی فلم تک، رشمیکا مندانا ٹھکراچکی ہیں یہ بڑی فلمیں!

    اداکارہ رشمیکا مندانا۔

    اداکارہ رشمیکا مندانا۔

    Rashmika Mandanna: رشمیکا مندانا کی آنے والی فلموں کی بات کریں تو اداکارہ سدھارتھ ملہوترا کے ساتھ فلم 'مشن مجنو' میں وہ نظر آئیں گی۔ اس کے ساتھ ہی اداکارہ کی دیگر فلموں میں امیتابھ بچن کے ساتھ فلم 'گڈبائے' بھی شامل ہے۔

    • Share this:
      Rashmika Mandanna: اداکارہ رشمیکا مندانا حال ہی میں فلم 'پشپا' میں نظر آئیں تھیں۔ فلم 'پشپا' ایک بلاک بسٹر فلم رہی اور اس میں رشمیکا کے کام کو بھی بہت سراہا گیا۔ فلم پشپا کی وجہ سے رشمیکا مندانا کا نام جنوبی سنیما کی سب سے زیادہ معاوضہ لینے والی اداکارہ کی فہرست میں شامل ہو گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق رشمیکا کو فلم پشپا کے لیے 3 کروڑ روپے بطور فیس ادا کیے گئے تھے۔ تاہم ایک بار پھر رشمیکا زیر بحث ہیں۔

      میڈیا رپورٹس کے مطابق رشمیکا مندانا نے حال ہی میں ریلیز ہونے والی شاہد کپور کی فلم 'جرسی' میں کام کرنے سے انکار کر دیاتھا۔ فلم 'جرسی' ساؤتھ کی فلم 'جرسی' کا ہندی ریمیک تھی۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب رشمیکا مندانا نے کسی فلم سے انکار کیا ہو، اس سے قبل بھی اداکارہ ہدایت کار شنکر کی فلم 'آر سی 15' کو ٹھکرا چکی ہیں۔ اداکارہ کیارا اڈوانی کو رشمیکا کی 'نا' کے بعد ہی اس فلم میں کاسٹ کیا گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Saif Ali Khan Commented On Kapoors:کپورخاندان پرسیف نے کہی یہ بات،آپ بھی ہوجائیں گے حیران

      اس کے ساتھ ہی اگر خبروں پر یقین کیا جائے تو رشمیکا مندانا نے بھی فلمساز سنجے لیلا بھنسالی کی بے نام فلم میں کام کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ بھنسالی کی اس آنے والی فلم میں رندیپ ہڈا مرکزی کردار میں نظر آئیں گے۔ آپ کو بتا دیں کہ رشمیکا منالی میں رنبیر کپور کے ساتھ فلم 'اینیمل' کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Soha Ali Khan Video:’بھور بھئے پن گھٹ‘ پر سوہا علی خان نے کیا شاندار کلاسیکل ڈانس

      اگر ہم رشمیکا مندانا کی آنے والی فلموں کی بات کریں تو اداکارہ سدھارتھ ملہوترا کے ساتھ فلم 'مشن مجنو' میں وہ نظر آئیں گی۔ اس کے ساتھ ہی اداکارہ کی دیگر فلموں میں امیتابھ بچن کے ساتھ فلم 'گڈبائے' بھی شامل ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: