உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Independence Day 2022:ملک تو1947میں آزاد ہوگیا لیکن بالی ووڈ اب بھی لڑ رہا ہے آزادی کی لڑائی!

    آزادی کی لڑائی کے ہیرو اور کہانیوں پر مبنی بالی ووڈ کی فلمیں۔

    آزادی کی لڑائی کے ہیرو اور کہانیوں پر مبنی بالی ووڈ کی فلمیں۔

    Independence Day 2022: فلموں کے ذریعے ہی ہمیں تحریک آزادی کے پرتشدد اور پرامن پہلوؤں کا علم ہوا ہے۔ 1947 میں ملک کو آزادی ملی، لیکن سینما نے یہ لڑائی آج تک جاری رکھی ہے اور یہ ہم تک پہنچتی رہتی ہے تاکہ ہم جدوجہد آزادی کے ہر پہلو کو جان سکیں۔

    • Share this:
      Independence Day 2022: ملک کی آزادی کے 75 سال 15 اگست کو مکمل ہو رہے ہیں۔ اس تاریخی موقع پر، ہندوستان کی سب سے بڑی ثقافتی شناخت والی فلموں کے بارے میں بات کرنا ضروری ہے، جو جدوجہد آزادی کو ہم تک لے گئیں۔ ان فلموں کے ذریعے ہم 75 سال سے آزادی پسندوں کی بہادری اور جرات کی داستانیں سن رہے ہیں۔ فلموں کے ذریعے ہی ہمیں تحریک آزادی کے پرتشدد اور پرامن پہلوؤں کا علم ہوا ہے۔ 1947 میں ملک کو آزادی ملی، لیکن سینما نے یہ لڑائی آج تک جاری رکھی ہے اور یہ ہم تک پہنچتی رہتی ہے تاکہ ہم جدوجہد آزادی کے ہر پہلو کو جان سکیں۔

      شہید
      1965 میں آئی 'شہید' بھگت سنگھ کی زندگی پر مبنی ہے۔ فلم کی کہانی خود 'بھگت سنگھ' کے ساتھی بٹوکیشور دت نے لکھی تھی۔ فلم میں امر شہید رام پرساد بسمل کے گانے تھے۔ منوج کمار نے اس فلم میں شہید بھگت سنگھ کی زندگی کا کردار ادا کیا تھا۔

      مدر انڈیا
      مدر انڈیا، جو 1957 میں آئی، ایک ہندوستانی خاتون کی جدوجہد کی شاندار کہانی ہے۔ یہ فلم آپ کی آنکھوں کو نم کر دے گی۔ فلم کی کہانی رادھا کی جدوجہد، قربانی اور عزت کے بارے میں ہے۔ اس کے ساتھ یہ فلم کہیں کہیں اس آزاد ہندوستان کی کہانی بھی ہے جو انگریزوں سے نجات حاصل کر کے اپنے پیروں پر کھڑا ہونے کی کوشش کر رہا تھا۔ فلم کے ایک منظر میں رادھا کو بھارت ماتا کے روپ میں دکھایا گیا ہے، جو کسانوں سے ملک کی تعمیر کی اپیل کرتی ہے۔ یہ پہلی ہندوستانی فلم تھی جسے آسکر کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔ نرگس دت نے فلم میں رادھا کا کردار ادا کیا تھا۔

      گاندھی
      1982 میں ریلیز ہونے والی اس فلم میں مہاتما گاندھی کا کردار غیر ملکی اداکار بین کنگسلے نے ادا کیا تھا۔ ان کے علاوہ مارٹن شان، جان ملز، ٹریور ہاورڈ بھی تھے۔ اداکارہ کا نام روہنی ہٹنگڈی ہے۔ ایلیک پدمسی اور ایڈورڈ فاکس نے فلم میں ولن کا کردار ادا کیا ہے۔

      بارڈر
      1997 میں ریلیز ہونے والی یہ فلم 1971 میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان لونگے والا کی جنگ پر مبنی ہے۔ 120 بھارتی فوجیوں نے پاکستانی فوج کو شکست دی تھی۔

      دی لیجنڈ آف بھگت سنگھ
      جب آزادی پر فلموں کی بات ہو اور بھگت سنگھ کو یاد نہ کیا جائے تو ایسا نہیں ہو سکتا۔ 2002 میں ریلیز ہونے والی اس فلم میں اجے دیوگن، سوشانت سنگھ اور ڈی سنتوش نے مرکزی کردار ادا کیے تھے۔ فلم کی اداکارہ امریتا راؤ تھیں۔ یہ فلم بھگت سنگھ کی زندگی پر مبنی تھی۔

      لگان
      مدر انڈیا کے بعد آسکر میں جانے والی ہندوستانی فلم 2001 میں آئی لگان تھی۔ فلم کی کہانی بھی انگریزوں کے خلاف ہندوستانیوں کی جدوجہد کی کہانی تھی۔ باکس آفس پر لگان کو زبردست کامیابی ملی۔

      منگل پانڈے 'دی رائزنگ'
      یہ فلم 1857 کی پہلی جدوجہد آزادی پر مبنی تھی۔ منگل پانڈے ایسٹ انڈیا کمپنی کے سپاہی تھے، جنہوں نے انگریزوں کے خلاف بغاوت کا بگل بجایا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Esha Guptaنے ورک آؤٹ ویڈیو میں لگایا بھگوان شیو کا گانا،مشتعل لوگوں نے کہا’شرم کرو ۔۔۔‘

      یہ بھی پڑھیں:
      Laal Singh Chaddha Boycott:’لال سنگھ چڈھا‘ کے بائیکاٹ پر کرینہ کپور نے کہی یہ بڑی بات

      رنگ دے بسنتی
      2006 میں آئی عامر خان کی فلم رنگ دے بسنتی نے زبردست کامیابی حاصل کی۔ اس فلم نے نوجوانوں میں حب الوطنی کا جذبہ بھر دیا تھا۔

      کیسری
      2019 میں ریلیز ہونے والی یہ فلم سارہ گڑھی کی لڑائی پر مبنی ہے۔ یہ جنگ برٹش انڈین آرمی کی 36 ویں سکھ رجمنٹ کے 21 سپاہیوں اور 6 ہزار سے زائد افغان اور پشتونی قبائل کے درمیان ہوئی تھی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: